08:10 am
بیرون ممالک پاکستانی سفارتخانوں کے ذریعے سپر سٹورز پر پاکستانی مصنوعات ڈسپلے کرائی جائیں ، کارپٹ ایسوسی ایشن

بیرون ممالک پاکستانی سفارتخانوں کے ذریعے سپر سٹورز پر پاکستانی مصنوعات ڈسپلے کرائی جائیں ، کارپٹ ایسوسی ایشن

08:10 am

لاہور(این این آئی)روز گارکی فراہمی اور معیشت کی ترقی کیلئے چھوٹی انڈسٹری کی ترقی پر توجہ مرکوز کی جائے ،مقامی سطح پر روزگار کے مواقع میسر نہ آنے کی وجہ سے دیہاتوں سے شہروں کی جانب نقل مکانی کی شرح میں اضافہ ہو اہے ،حکومت قالین سازی کی صنعت کی سرپرستی کر کے دیہی علاقوں میں روزگار کی فراہمی کے ساتھ ساتھ نقل مکانی کو بھی روک سکتی ہے ،پاکستانی مصنوعات کی موثرمارکیٹنگ کیلئے بیرون ممالک نمائشوںمیں زیادہ سے زیادہ شرکت کو یقینی بنایا جائے ۔ ان خیالات کا اظہار پاکستان کارپٹ مینو فیکچررز اینڈ ایکسپورٹرز ایسوسی ایشن کے چیئرمین محمد
 
اسلم طاہر نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اس موقع پر کارپٹ ٹریننگ انسٹی ٹیوٹ کے چیئر پرسن پرویز حنیف ، ایسوسی ایشن کے وائس چیئرمین شیخ عامر خالد، سینئر مرکزی رہنما عبداللطیف ملک،سینئر ممبرریاض احمداور سعید خان سمیت دیگر بھی موجود تھے۔ اجلاس میںکارپٹ انڈسٹری کو درپیش مشکلات اور ان کے حل کیلئے مختلف تجاویز پر غور کیا گیا ۔ اسلم طاہر نے کہا کہ قالین سازی ایسی صنعت ہے جس کا توانائی کے حصول کیلئے حکومت پر کوئی بوجھ نہیں بلکہ اس کا روزگار کی فراہمی کے ساتھ برآمدات میں بھی حصہ ہے ۔ انہوںنے کہا کہ برآمدات کے فروغ کیلئے حکومت تعاون فراہم کرے اور مختلف ممالک کے ساتھ نجی سطح پر وفود کے تبادلوں کویقینی بنایا جائے۔ انہوں نے کہا کہ بیرون ممالک پاکستان کے سفارتخا نے مقامی درآمدکنندگان سے ملاقاتیں کریں اوروہاں کے سپر سٹورز پر پاکستانی مصنوعات ڈسپلے کرائی جائیں ۔