07:58 am
دوپہر کے وقت آسمان خون کی طرح لال سرخ ہو گیا

دوپہر کے وقت آسمان خون کی طرح لال سرخ ہو گیا

07:58 am


لاہور (ویب ڈیسک)دوپہر کے وقت آسمان خون کی طرح لال سرخ ہو گیا ،،، گزشتے ہفتے انڈونیشیا کے جنگلات میں وسیع پر پیمانے پر لگنے والی آگ کی وجہ سے ایک صوبے کا آسمان ’کہرے‘ کے باعث خون کی طرح لال رنگ کا ہو گیا۔ برطانوی خبر رساں ادارے کے مطابق ایک شہری کا کہنا تھا کہ کہرے کے باعث میری آنکھیں اور حلق کو تکلیف کا سامنا کرنا پڑا۔ جس شہر میں آسمان لال رنگ کا ہوا، یہ سماٹرا کے قریبی شہر ہے، اس کا نام نام جامبی ہے۔
یاد رہے کہ انڈونیشیا میں ہر سال آگ سے پیدا ہونے والی دھند جنوب مشرقی ایشیا کو اپنی لپیٹ میں لے لیتی ہے۔ اُدھر ایک ماہر موسمیات نے برطانوی خبر رساں ادارے سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ اس عمل کو ’ریلیھ کا پھیلاؤ‘ کہتے ہیں۔ انڈونیشیا کے صوبے جامبی کے شہری جس کا تعلق جامبی کے میکار ساری گاؤں سے ہے کا نام ایکا وولانداری ہے، انہوں نے ہفتے کی دوپہر سرخ آسمان کی متعدد تصویریں اُتاریں اور ان کو شیئر بھی کیا اور کہا کہ اس روز دھند بہت ہی زیادہ تھی۔ ایکا کی عمر اکیس برس ہے، یہ تصاویر انہوں نے سوشل میڈیا کی مشہور ویب سائٹ فیس بک پر پوسٹ کی ہیں جو 34 ہزار سے زائد مرتبہ شیئر کی جا چکی ہیں۔ برطانوی خبر رساں ادارے سے بات چیت کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ بہت سے لوگوں نے میری ان تصاویر کو جعلی قرار دیا تاہم حقیقی تصویریں ہیں۔ یہ تصاویر اور ویڈیو اصلی ہیں اور آج بروز پیر کو تو دھند اور بڑھ گئی ہے۔میکار ساری کا گاؤں سرخ رنگ میں نہا گیا۔