10:41 am
ہیلتھ کارڈ کا آزاد کشمیر میں اجراءعمران خان کا تحفہ ہے،بشارت بادشاہ

ہیلتھ کارڈ کا آزاد کشمیر میں اجراءعمران خان کا تحفہ ہے،بشارت بادشاہ

10:41 am

ہیلتھ کارڈ کا آزاد کشمیر میں اجراءعمران خان کا تحفہ ہے،بشارت بادشاہ آزاد کشمیر میں بہت جلد دوسرا سروے شروع ہو گا اور غریب کو کارڈ ملے گا باغ، ریڑہ (نمائندگان اوصاف )پاکستان تحریک انصاف آزاد کشمیر کے رہنماسردار بشارت بادشاہ ایڈووکیٹ نے کہا ہے کہ ہیلتھ کارڈ کا آزاد کشمیر میں اجراءعمران خان کا تحفہ ہے ۔ آزاد کشمیر میں بہت جلد دوسرا سروے شروع ہو گا ۔ میرا آزاد کشمیر کی عوام سے وعدہ ہے کہ ہر نادار اور غریب کو ہیلتھ کارڈ کا اجراء ہو گا اور حکومت پاکستان نے جو تحفہ آزاد کشمیر کے عوام کو دیا ہے اسے کسی صورت ضائع نہیں ہونے دینگے ۔ ہم حکومت پاکستان کے شکر گزار ہیں جنہوں نے ہماری اور بالخصوص بیرسٹر سلطان محمود چوہدری کی درخواست پر آزاد کشمیر میں بھی ہیلتھ کارڈ کا اجرا کیا۔ ہیلتھ کارڈ کے حوالے سے آزاد کشمیر کے عوام میں کافی تحفظات پائے جاتے ہیں ۔ میں ذاتی حیثیت میں ان تحفظات کو درست تسلیم کرتا ہوں کیونکہ ان ہیلتھ کارڈ کا اجراء 2010کے بینظیر انکم سپورٹ پروگرام کے تحت کیا جا رہا ہے جو درست نہ ہے اور غیر منصفانہ ہے ۔ بینظیر انکم سپورٹ پروگرام کا سروے ذاتی پسند وناپسند اور سیاسی ہمدردی کے طور پر مخصوص لوگوں کو نوازنے کے لیے کیا گیا تھا اور اس وہ آج بھی وہی لوگ مستفید ہو رہے ہیں ۔ غریب اور ناداروں کو بینظیر انکم سپورٹس پروگرام سے کوئی فائدہ نہیں پہنچ رہا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت پاکستان نے ایک این جی او عورت فائونڈیشن کے ذریعے آزاد کشمیر میں سروے کروانا تھا مگر یہاں چونکہ ن لیگ کی حکومت ہے ۔ عورت فائونڈیشن نے حکومت آزاد کشمیر سے این او سی مانگی تو لیگی حکومت نے مختلف حیلے بہانوں سے انہیں این او سی جاری نہیں کیا اور نیشنل ایکشن پلان کی آڑ میں انہیں سروے نہیں کرنے دیا گیا جس کی وجہ سے بینظیر انکم سپورٹس پروگرام کے تحت کارڈ تقسیم کیے گئے جس کی وجہ سے کئی کارڈ ضائع ہوئے کیونکہ 2010کے سرورے کے بعد آج 10سال کے قریب عرصہ گزر چکا ہے ۔ بہت سے لوگ اس دنیا سے رخصت ہو گئے ہیں جس کی وجہ سے بہت سے کارڈ ضائع ہو رہے ہیں ۔ بشارت بادشاہ

تازہ ترین خبریں