12:52 pm
 مظفرآباد،ٹریفک پولیس کی جانب سےجعلی چالان  ،خزانے کو ہزاروں کی پھکی

مظفرآباد،ٹریفک پولیس کی جانب سےجعلی چالان ،خزانے کو ہزاروں کی پھکی

12:52 pm

ٹریفک پولیس 1200تک جرمانہ وصول کرکے دوسری بک پر 200روپے کا چالان کاٹ کر خزانے میں جمع کرواتی ہے چالان کیے گئے پیسے موقع پر وصول کر لیتے ہیں،عوام سمجھتی ہےجرمانہ سرکاری خزانے میں جمع ہو تا ہے،اوصاف رپورٹ مظفرآباد(سٹاف رپورٹر) ٹریفک پولیس کے جعلی اور بوگس چالان کے انکشافات ،ٹریفک پولیس جگہ جگہ ناکے لگا کر چالان کرتی ہے اور موقع پر ہی ایک ہزار سے 1200تک جرمانہ وصول کر لیتی ہے جو بعدازاں آفس میں موجود دوسری چالان بک پر 200روپے کے حساب سے چالان کاٹ کر سرکاری خزانے میں جمع کروا دیئے جاتے ہیں۔اوصاف رپورٹ کے مطابق دارالحکومت مظفرآباد میں گوجرہ بائی پاس روڈ، بیلہ نورشاہ چوک نزد گرڈ اسٹیشن ، نیلم پل چوک، شوائی نالہ ،چھتر چوک ، کھڑی پن چوک،گیلانی چوک اوردیگر مقامات پر ٹریفک وارڈن گاڑیوں کے چالان کرتے نظر آتے ہیں ۔ٹریفک وارڈن موقع پر چالان کاٹ کر پیسے وصول کر لیتے ہیں۔کم سے کم چالان بھی 800کا کاٹتے ہیں۔ہزار ،بارہ سو کی پرچی بھی کاٹ کر تھما دی جاتی ہے ۔چالان کیے گئے پیسے موقع پر ہی وصول کر لیے جاتے ہیں ۔عام عوام یہ سمجھتی ہے کہ یہ جرمانہ سرکاری خزانے میں جمع ہو تا ہے اور سرکار اس سے رفاعہ عامہ کے کاموں میں استعمال کرتی ہے مگر ایسا نہیں ہوتا ۔یہ چالان بک میں لکھے پیسے قومی خزانے میں نہیں جاتے بلکہ اس کا 20%حصہ سرکاری خزانے میں جمع ہوتا ہے اور باقی 80فیصد ٹریفک پولیس اہلکاروں میں یوں تقسیم ہو جاتا ہے کہ کسی کو کانوں کان خبر نہیں ہوتی ۔ ہوتا کچھ یوں ہے کہ آفس میں چالان بک میں یہی ہزار بارہ سو صرف 200روپے میں منتقل کر دیا جاتا ہے ۔ ٹریفک پولیس