01:19 pm
اسمارٹ فون خاتمے کا منصوبہ ،فیس بک اب کس چیز پر کام کررہی ہے؟شہریوں کیلئے شاندار سہولت ،اہم فیصلہ کرلیاگیا

اسمارٹ فون خاتمے کا منصوبہ ،فیس بک اب کس چیز پر کام کررہی ہے؟شہریوں کیلئے شاندار سہولت ،اہم فیصلہ کرلیاگیا

01:19 pm

اسلام آباد(نیوز ڈیسک)فیس بک کی جانب سے اب تک متعدد ہارڈویئر ڈیوائسز متعارف کرائی جاچکی ہیں۔جیسے اوکیولس ورچوئل رئیلٹی ہیڈ سیٹس یا فیس بک پورٹل وغیرہ، مگر اب وہ ایک اسمارٹ واچ متعارف کرانے پر غور کررہی ہے۔دی انفارمیشن کی ایک رپورٹ میں ذرائع کے حوالے سے بتایا کہ کمپنی کی جانب سے ایک اسمارٹ واچ کی تیاری پر کام کیا جارہا ہے جس میں بلٹ ان سیلولر کنکشن موجود ہوگا۔رپورٹ کے مطابق اس اسمارٹ واچ کے ابتدائی ورژن 2022 میں متعارف کرایا جاسکتا ہے
جس میں اوپن سورس اینڈرائیڈ آپریٹنگ سسٹم موجود ہوگا۔اسی طرح 2023 میں اس پلیٹ فارم کو توسیع دی جائے گی اور اس ڈیوائس کو اسمارٹ فونز کے مقابلے پر لانے کی کوشش کی جائے گی۔رپورٹ کے مطابق فیس بک کی جانب سے ہارڈویئر ڈیوائسز کے لیے اپنے آپریٹنگ سسٹم کی تیاری پر بھی کام کررہی ہے اور مستقبل میں ویئرایبل ڈیوائسز اینڈرائیڈ کی جگہ اسے استعمال کیا جائے گا۔فیس بک کی جانب سے بھی رے بین برانڈڈ اسمارٹ گلاسز کی تیاری پر بھی کام کیا جارہا ہے جو رواں سال کے آخر میں کسی وقت متعارف کرائے جاسکتے ہیں۔فیس بک کی جانب سے اسمارٹ واچ کی تیاری کی رپورٹ پر بات کرنے سے انکار کیا گیا۔یہ نئی اسمارٹ واچ فیس بک کی جانب سے سوشل نیٹ ورکنگ سے باہر نکل کر ہارڈویئر کے شعبے میں اپنے قدم مزید مضبوط کرنے کی کوششوں کا نتیجہ ہیں۔فیس بک کی جانب سے کافی عرصے سے اگیومینٹڈ ریئلٹی گلاسز کی تیاری پر کام ہورہا ہے مگر اب بھی ان کی تیاری میں کئی سال لگ سکتے ہیں۔اس حوالے سے گزشتہ سال سی این بی سی کی ایک رپورٹ میں بتایا گیا تھا کہ فیس بک کی جانب سے ایسے اسمارٹ گلاسز پر کام کیا جارہا ہے جو بتدریج اسمارٹ فونز کی جگہ لیں گے۔اس مقصد کے لیے فیس بک نے رے بین کی پیرنٹ کمپنی Luxottica سے اشتراک کیا ہے تاکہ ایسے اچھے فریم تیار کیے جاسکیں جن کو لوگ پہننا پسند کریں۔مائیکل ابریش کے مطابق 2022 تک اسمارٹ فونز کے متبادل کے طور پر یہ گلاسز سامنے آئیں گے اور آج سے بیس سے تیس سال کے اندر ہماری پیشگوئی ہے کہ سب لوگ فونز کی جگہ یہ اسٹائلش چشمے پہننا پسند کریں گے۔ان کا کہنا تھا کہ پانچ سال کے اندر ہی یہ گلاسز ہر جگہ استعمال ہونے لگیں گے اور اسمارٹ فونز کا استعمال کم سے کم ہونا شروع ہوجائے گا۔اگر آپ کی آنکھوں پر ایک کمپیوٹر ہوگا تو یہ صرف ٹی وی نہیں بلکہ اسمارٹ فونز، اسمارٹ واچز، ٹیبلیٹس، فٹنس ٹریکرز یا ایسی ہی دیگر ڈیوائسز کی ضرورت بھی ختم کردے گا۔انہوں نے مزید کہا کہ میسنجر کے ذریعے ہم لوگوں کو ٹیکسٹ کی سہولت تو دے ہی رہے ہیں مگر اس کے ساتھ ساتھ تصاویر، ویڈیوز، وائس کلپس، جی آئی ایف، آپ کی لوکیشن، اسٹیکرز وغیرہ کی پیشکش بھی کررہے ہیں اور لوگ اس سے رقوم بھی بھیج سکتے ہیں۔ یہاں تک کہ ویڈیو اور وائس کالز کرنا بھی ممکن ہے اور اس کے لیے فون نمبر کی ضرورت نہیں۔

تازہ ترین خبریں