08:12 am
سپریم کورٹ نے فیصلہ سنا دیا،نواز شریف بارے بڑی خبر آگئی

سپریم کورٹ نے فیصلہ سنا دیا،نواز شریف بارے بڑی خبر آگئی

08:12 am

اسلام آباد (نیو زڈیسک) سپریم کورٹ نے سابق وزیراعظم نواز شریف کی ضمانت کی درخواست پر نیب کو نوٹس جاری کر دیا۔ چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں 3 رکنی بینچ نے کیس کی سماعت کی۔ نواز شریف کے وکیل خواجہ حارث نے درخواست ضمانت پر دلائل دیتے ہوئے کہا میڈیکل بورڈز نے نواز شریف کی صحت کی خرابی سے متعلق رپورٹ دی، 16 جنوری کو علامہ اقبال میڈیکل کالج کے ڈاکٹرز اور 17 جنوری 2019 کو پی آئی سی کے 3 پروفیسرز نے رپورٹ دی تھی۔ 5 فروری کو سروسز ہسپتال کے 6 ڈاکٹرز نے بھی طبی معائنہ کیا۔
نواز شریف کی طبی بنیادوں پر سزا معطلی کی استدعا ہائیکورٹ نے مسترد کی۔ چیف جسٹس نے وکیل سے استفسار کیا 15 جنوری 2019 کو نواز شریف کی طبیعت خراب ہوئی، کیا اس سے پہلے کی میڈیکل رپورٹ دکھا سکتے ہیں ؟ نوازشریف کی نئی اور پرانی میڈیکل رپورٹس کا جائزہ لیں گے، ہم پمز کی پہلی رپورٹس دیکھنا چاہیں گے، کیا نواز شریف کو اس سے قبل یہ مسئلہ تھا ؟ اگر ان کی حالت اس سے قبل بھی بگڑی تھی تو صورتحال مختلف ہوگی۔وکیل خواجہ حارث نے کہا 29 جولائی 2019 کو اڈیالہ جیل قید کے دوران پمز ڈاکٹرز نے رپورٹ دی، بیرون ملک ڈیوڈ آر لارنس نواز شریف کا علاج کرتے رہے۔ جس پر چیف جسٹس نے کہا ہم جانتے ہیں کہ نواز شریف کا لندن میں علاج ہوتا رہا، لندن کی رپورٹس یہاں کے ڈاکٹرز کو نہیں دی گئیں۔