01:34 pm
کیا آپ کو معلوم ہے کہ عمران خان کی رہائش گاہ پر کتنے سیکیورٹی اہلکار حفاظت کیلئے تعینات ہیں

کیا آپ کو معلوم ہے کہ عمران خان کی رہائش گاہ پر کتنے سیکیورٹی اہلکار حفاظت کیلئے تعینات ہیں

01:34 pm

اسلام آبد (مانیٹرنگ ڈیسک) وزیراعظم عمران خان کی رہائش گاہ پر سینکڑوں سکیورٹی اہلکار تعینات ہیں۔ اس حوالے سے مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹویٹر پر ایک صحافی نے وزارت داخلہ کے ذرائع کے حوالے سے بتایا کہ وزیر اعظم کی بنی گالہ میں رہائش گاہ پر تعینات سیکورٹی اہلکاروں کی تفصیلات سامنے آئی ہیں۔ وزیر اعظم عمران خان کی بنی گالہ رہائش پر 215 ایف سی ، پولیس اور سپیشل برانچ کے اہلکار تعینات ہیں
، 129 سکیورٹی ڈویژن کے اہلکار تعینات ہیں، رہائش گاہ کے بیرونی حصار پر 70 پولیس اہلکار تعینات ہیں۔ صحافی کے اس ٹویٹ کے بعد وزیراعظم عمران خان کو اس حوالے سے کافی تنقید کا نشانہ بنایا گیا۔ سوشل میڈیا صارفین کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان نے سینکڑوں کی تعداد میں سکیورٹی اہلکار تعینات کر کے اپنی ہی کفایت شعاری مہم کی خلاف ورزی کی ، اگر وزیراعظم عمران خان اپنی سکیورٹی پر اتنی بڑی تعداد میں سکیورٹی اہلکاروں کو تعینات کریں گے تو اس کے بعد ان کی کابینہ کے اراکین اور دیگر رہنماؤں پر اس کا کیا اثر پڑے گا۔ جبکہ سوشل میڈیا پر کچھ صحافیوں نے ان کے حق میں بھی بیانات دئے اور کہا کہ اگر آپ سب وزیراعظم پاکستان کی سکیورٹی کا ذرا جاتی امراء سے بھی موازنہ کردیتے تو اچھا ہوجاتا۔ عمران خان تو پھر ملک کے وزیراعظم ہیں لیکن ماڈل ٹاؤن اور جاتی امراء پر کس کھاتےمیں سکیورٹی اہلکاروں کو مامور کیا جاتا ہے۔ کچھ صارفین نے تو صحافی کو ہی تنقید کا نشانہ بنا ڈالا اور کہا کہ کاش ایسی تفصیلات آپ نواز شریف اور زرداری کے بارے میں بتائیں یہ بھی بتائیں کے راؤنڈ میں کتنی سکیورٹی تھی اور اس روڈ کا بھی جو اس محل کو جاتی تھی۔ صارفین کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان اس ملک کی اہم شخصیت ہیں اور ان کی سکیورٹی اہم ہے لہٰذا ان پر اس طرح کی تنقید کرنا جائز نہیں ہے۔