09:28 am
پاکستان کی جانب سے کشمیریوں کی عسکری مدد نہیں کرنی چاہئے

پاکستان کی جانب سے کشمیریوں کی عسکری مدد نہیں کرنی چاہئے

09:28 am

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)پاکستان کی جانب سے کشمیریوں کی عسکری مدد نہیں کرنی چاہئے بلکہ پاکستان کو چاہئے کہ ۔۔۔!! پاکستان کو بڑا مشورہ دیدیا گیا ۔۔۔۔۔ دفاعی تجزیہ کا ر شاہد لطیف نے کہا ہےکہ پاکستان کی جانب سے کشمیریوں کی عسکری مدد نہیں کی جانی چاہئے۔ انہوں نے کہا ہے کہ بھارت نے مشرق پاکستان میں مکتی باہنی کا استعمال کرتے ہوئے پاکستان کوتوڑ دیا لیکن کھلم کھلا بات نہیں کی تھی
، ہمیں بھی یہی کرنا چاہیے۔ شاہد لطیف نے کہا ہے کہ وہ کشمیریوں کی عسکری مدد کے حق میں نہیں ہیں جس طرح بھارت کی جانب سے کہہ دیا گیا کہ یہ غیر ریاستی عناصر تھے ہمیں بھی ایسا ہی کرنا چاہیے۔ بھارت نے مشرق پاکستان میں مکتی باہنی کا استعمال کرتے ہوئے پاکستان کوتوڑ دیا لیکن کھلم کھلا بات نہیں کی۔ شاہد لطیف کا مزید کہنا تھا کہ کلھبوشن ادھر آیا اور پکڑا گیا تو پھر ہم کو پتہ چلا لیکن بھارت نے کھلم کھلا یہ بات نہیں کی اور ہمیں یہ بات کرنی بھی نہیں چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم معاملہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں لے کر گئے ہیں، اس معاملے کوعالمی سطح پر اجاگر کرناچاہئے۔ دوسری جانب مقبوضہ کشمیر کے علاقے شوپیاں میں سکت ترین کرفیو کے باوجود بھارتی فوج پر بڑا حملہ ہوا ہے۔ حملے میں بھارتی فوج کے قافلے کو نشانہ بنایا گیا۔ دعویٰ کیا جا رہا ہے کہ حملے میں بھارتی فوجی جہنم واصل ہوئے ہیں۔ جبکہ کئی زخمی بھی ہوئے ہیں۔ تاہم اس حوالے سے بھارتی سرکار نے تاحال تصدیق یا تردید نہیں کی۔ دوسری جانب موجودہ صورتحال میں اپنی ہٹ دھرمیوں اور مقبوضہ کشمیر سے توجہ ہٹانے کے لیے بھارت ایک مرتبہ پھر جارحیت پر اُتر آیا ہے۔ اس حوالے سے پاک فوج کے ترجمان میجر جنرل آصف غفور نے مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے پیغام میں بتایا کہ موجودہ صورتحال سے توجہ ہٹانے کے لیے بھارت نے لائن آف کنٹرول پرفائرنگ میں غیر معمولی اضافہ کر دیا ہے۔