04:23 pm
گلالئی اسماعیل کا نام ای سی ایل لسٹ سے کیسے نکلا اور کس ملک نے اس کو بیرون ملک فرار ہونے میں مدد دی

گلالئی اسماعیل کا نام ای سی ایل لسٹ سے کیسے نکلا اور کس ملک نے اس کو بیرون ملک فرار ہونے میں مدد دی

04:23 pm

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) متنازعہ تنظیم پی ٹی ایم سے وابستہ خاتون رہنما گلالئی اسماعیل بیرون ملک فرار ہو گئی تھیں۔اسی متعلق گفتگو کرتے ہوئے پاکستان تحریک انصاف کے رہنما ڈاکٹر عامر لیاقت کا کہنا ہے کہ پی ٹی ایم خاتون رہنما گلا لئی اسماعیل پاکستان سے کیسے فرار ہوئی یہ ایک بہت بڑا سوال ہے۔عامر لیاقت نے کہا کہ یہ سوال میں ان لوگوں سے پوچھ رہا ہوں جو کرتا دھرتا ہیں،جو ایگزیٹ کنڑول لسٹ تیار کرتے ہیں اور اس بات کی نگرانی کرتے ہیں کہ ای سی ایل میں شامل افراد ملک سے فرار نہ ہو سکے،
عامر لیاقت نے کہا کہ گلالئی اسماعیل نے امریکا میں سیاسی پناہ لے لی ہے۔امریکا میں پناہ لینے کے بعد انہوں نے یویارک ٹائمز کو انٹرویو بھی دیا ہے۔جس میں وہ کہتی ہیں کہ میں بہت مشکلوں سے یہاں تک پہنچی ہوں لیکن میں سہولت کاروں کے نام نہیں بتا سکتی جنہوں نے پاکستان سے نکلنے میں میری مدد کی۔عامر لیاقت نے مزید کہا کہ ایک سینئیر صحافی نے بتایا ہے کہ گلالئی کو پاکستان سے نکالنے میں افغانستان نے مدد کی اور ان کے سہولت کار افغانستان میں موجود تھے جنہوں نے گلالئی اسماعیل کو بھرپور مدد فراہم کی۔یہاں پر اداروں کو جواب دینا ہو گا کہ آخر گلالئی کیسے پاکستان سے فرار ہوئی۔عامر لیاقت نے کہا کہ اس معماملے پر میں بہت دل گرفتہ ہوں۔خیال رہے کہ گلالئی اسماعیل کو ریاست اور پاک فوج کیخلاف زہر اگلنے اور نفرت انگیز تقاریر کرنے کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا، تاہم بعد ازاں رواں برس کے آغاز میں انہیں رہا بھی کر دیا گیا تھا۔ گلالئی اسماعیل کا نام ای سی ایل میں شامل تھا اور وہ کسی صورت پاکستان سے باہر نہیں جا سکتی تھیں۔تاہم اب وہ پراسرار انداز میں بیرون ملک فرار ہو گئیں۔ ملک کے کسی بھی ائیرپورٹ پر گلالئی اسماعیل کی بیرون ملک روانگی کا کوئی ریکارڈ موجود نہیں ہے۔ جس سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ وہ زمینی راستے کے ذریعے بیرون ملک فرار ہوئی ہیں۔ ذرائع دعویٰ کرتے ہیں کہ گلالئی اسماعیل ممکنہ طور پر افغانستان کے راستے بیرون ملک فرار ہوئی ہیں۔ بتایا جا رہا ہے کہ گلالئی اسماعیل کو ایک منظم انداز میں بیرون ملک فرار کروایا گیا۔ وہ پاکستان میں مسلسل برقعہ زیب تن کیے ہوئے تھیں اور انہیں آہستہ آہستہ کئی روز کی کوششوں کے بعد بیرون ملک فرار کروایا گیا۔ بتایا گیا کہ گلالئی اسماعیل امریکی میں مقیم اپنی بہن کے پاس پہنچ چکی ہیں۔