07:28 am
سارک وزرائے خارجہ کانفرنس بھارتی ہم منصب شنکر کی تقریر سے قبل شاہ محمود قریشی نے ایسا کام کر دیا کہ بھارت بھی دنگ رہ گیا

سارک وزرائے خارجہ کانفرنس بھارتی ہم منصب شنکر کی تقریر سے قبل شاہ محمود قریشی نے ایسا کام کر دیا کہ بھارت بھی دنگ رہ گیا

07:28 am

نیو یارک( آن لائن )وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے سارک وزرائے خارجہ کانفرنس میں بھارتی ہم منصب شنکر کی تقریر کا بائیکاٹ کردیا۔بھارت کے ہاتھ کشمیریوں کے خون سے رنگے ہیں اس لئے ساتھ نہیں بیٹھ سکتے۔ بھارت پہلے مقبوضہ کشمیر میں مظالم بند اور کرفیو ختم کرے ۔ میڈیا رپورٹس کیمطابق سارک ممالک کے وزرائے خارجہ کی کانفرنس کے موقع پر وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے بھارتی ہم منصب جے شنکر کی تقریر کا بائیکاٹ کیا ہے۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھاکہ کشمیر کے قصاب سے بات کرناتو دور اس کے ساتھ بیٹھنا بھی گوارہ نہیں
 
کرتا۔ بھارت کے ہاتھ معصوم کشمیوں کے خون سے رنگے ہیں بھارت پہلے مقبوضہ کشمیر میں مظالم بند کروائے اور کشمیریوں کے بنیادی انسانی حقوق کا تحفظ یقینی بنائے ۔ انہوںنے کہا کہ بھارت کو کشمیریوں کے انسانی حقوق کا تحفظ فراہم کرنا ہوگا۔ دوسری جانب وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ آئندہ سارک سربراہ اجلاس اسلام آباد میں ہونا طے پایا ہے ۔ بھارت نے گزشتہ برس کی طرح اس بار اجلاس پر اعتراض نہیں کیا۔ نیو یارک میں سارک ممالک کے وزرائے خارجہ کے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ تمام سارک ممالک کو اجلاس کی دعوت دی اور آئندہ سارک ممالک کے سربراہ اجلاس پاکستان میںہونا طے پایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ برس بھارت نے اعتراض کیا تھا تاہم اس بار خاموشی اختیار کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارت مسئلہ کشمیر کو خود اقوام متحدہ میں لے کر گیا تھا۔ بھارت نے غیر آئینی طریقے سے بزور طاقت متازع علاقے کو شامل کرنے کی کوشش کی ۔ انہوں نے کہا کہ نریندر مودی کے 5اگست کے اقدام کے خلاف بھارت میں بھی تنقید ہورہی ہے اور بھارتی سپریم کورٹ میں 14درخواستیں دائر ہوچکی ہیں جبکہ کشمیر کا ہر طبقہ بھارتی اقدام کو مسترد کرچکا ہے۔