05:49 pm
بھارتی وزیراعظم کی اقوام متحدہ میں غیرمتوقع تقریر،مودی نے دنیا بھر لے لیڈرز کے سامنے کیا کہا؟

بھارتی وزیراعظم کی اقوام متحدہ میں غیرمتوقع تقریر،مودی نے دنیا بھر لے لیڈرز کے سامنے کیا کہا؟

05:49 pm

نیویارک (ویب ڈیسک )بھارتی وزیراعظم نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلا س سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ دہشتگردی کسی ایک ملک کانہیں بلکہ پوری دنیا کامسئلہ ہے۔اوراس کے خلاف پوری دنیاکومل کرلڑناہوگا،اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے 74ویں اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے بھارتی وزیراعظم کی گفتگوکاتمام ترمحوربھارت میں ان کی حکومت کی جانب سے کیے گئے اقدامات تھے۔انہوں نے کہاکہ ہم بھارت کوپلاسٹک سے پاک کرنے کی مہم چلارہے ہیں
اورآئندہ پانچ سال کے دورا ن 15کروڑ لوگوں کوپانی سپلائی سے جوڑنے جارہے ہیں جبکہ اسی عرصہ میں دودردراز گائوں اوردیہاتوں میں سوالاکھ کلومیٹرسے زائدسڑکیں بنائیں گے۔انہوں نے کہا کہ 2022 تک غریبوں کے لیے مزید 2 کروڑ گھر بنائیں گے جبکہ 2025 تک بھارت کو ٹی بی سے پاک کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔حیران کن طور پر بھارتی وزیر اعظم کی تقریر میں خطے میں سیکیورٹی صورتحال اور مقبوضہ کشمیر کا کوئی ذکر نہیں کیا گیا اور انہوں نے اپنی روایات کے برعکس اس خطاب میں پاکستان کو بھی تنقید کا نشانہ نہیں بنایا۔انہوں نے کہا کہ دہشت گردی صرف ایک ملک کا مسئلہ نہیں بلکہ پوری دنیا کے لیے سب سے بڑا خطرہ اور چیلنج ہے، اس کے خلاف پوری دنیا کا ایک ہونا بہت ضروری ہے۔بھارتی وزیر اعظم نے کہا کہ اگر دہشت گردی سے دنیا تقسیم ہوتی ہے تو اس سے اقوام متحدہ کے قیام کی بنیاد پر فرق پڑے گا لہٰذا ہمیں انسانیت کی خاطر دہشت گردی کے خلاف متحد ہونے کی ضرورت ہے۔ادھر نیویارک میں اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے بھارتی وزیر اعظم کے خطاب کے موقع پر اقوام متحدہ کی عمارت کے باہر امریکا میں مقیم پاکستانی، سکھ اور کشمیری کمیونٹی نے احتجاج کیا اور بھارت مخالف نعرے لگائے۔مظاہرین نے مقبوضہ کشمیر میں جاری بھارتی مظالم کے خلاف آواز بلند کرتے ہوئے عالمی برادری سے اس مسئلے کے حل کا مطالبہ کیا۔

تازہ ترین خبریں