06:38 am
مجھے لگتا ہے آپ کو ”برنال“ کی ضرورت ہے، اگرنہیں ہے تو میں بھجوا دیتا ہوں

مجھے لگتا ہے آپ کو ”برنال“ کی ضرورت ہے، اگرنہیں ہے تو میں بھجوا دیتا ہوں

06:38 am

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) ’حق ادا کردیا‘اپنے تو کیا غیر بھی وزیراعظم عمران خان کے جنرل اسمبلی کے خطاب پر داد دینے پر مجبور ہو گئے ہیں۔وزیراعظم عمران خان نے پچاس منٹ تک چار میجر ایشوز پر بات کی۔جن میں کشمیراور اسلام سرفہرست تھے۔عرصے بعد کوئی ایسا غیور اور نڈر لیڈر مسلم دنیا کو نصیب ہوا ہے جس نے مغربی دنیا کو ان کی اوقات یاددلاتے ہوئے اسلامو فوبیا کی خود ساختہ ٹرم ان کے منہ پر دے ماری۔عمران خان نے یہ بھی واضح کیا کہ اسلام محبت اور امن کا دین ہے۔ دنیا کا کوئی بھی مذہب خود کش حملوں سمیت دہشت گردی اور انتہا پسندی کی تلقین نہیں کرتا۔کشمیر میں مودی کے ظلم اوربھارتی فورسز کی بربریت کا ذکر کرتے ہوئے
عمران خان نے کہا کہ اگر یہودیوں کے 9لاکھ جانوروں کو قید کر دیا جائے تو اس ظلم کے خلاف آپ لوگ ابل پڑیں گے اور ہمارے کشمیر میں 9لاکھ جیتے جاگتے انسانوں کو قید کر دیا گیا ہے تو ہم کیسے خاموش رہیں۔لہٰذا یواین او بھی اپنی مجرمانہ خاموشی کو توڑے ا ور کشمیر کی آزادی میں اپنا کردار ادا کرے۔عمران خان کی اس تقریر کو دنیا بھر میں سراہا جا رہا ہے اور یہ ٹویٹر پر نمبر 1ٹرینڈ بن گیا ہے،جہاں ہر کوئی عمران خان کی تقریر سے متاثر ہوا ہے وہاں کچھ لوگوں نے منافقت کا مظاہرہ بھی کیااور عمران خان کی مخالفت میں پوسٹس کیں ایسے لوگوں کو جواب دیتے ہوئے ڈی جی آئی ایس پی آرنے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ میرے خیال میں آپ کو برنال کی ضرورت ہے اور امید ہے آپ کے پاس ہو گی اور اگر نہیں ہے تو میں بھجوا دیتا ہوں۔ اس پر ٹویٹر پر خوب لے دے ہو رہی ہے۔ڈی جی آئی ایس پی آر کی ٹویٹ ٹویٹر کے ٹاپ ٹرینڈ میں آ گئی اور لوگ ڈی جی آئی ایس پی آر کے حق میں بولتے ہوئے دشمنوں کو برنال لگانے کا مشورہ دینے لگ گئے۔