11:29 am
مسلم لیگ (ن) کے سب سے بڑے رہنما احسن اقبال عمران خان کے حمائتی بن گئے

مسلم لیگ (ن) کے سب سے بڑے رہنما احسن اقبال عمران خان کے حمائتی بن گئے

11:29 am

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) وزیراعظم اسلامی جمہوریہ پاکستان عمران خان کی اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں کی گئی تقریر کو مسلم لیگ ن کے رہنما احسن اقبال نے خوش آئند قرار دیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ ن کے رہنما احسن اقبال نے کہا کہ کشمیر کا مقدمہ اقوام متحدہ میں اُجاگر کرنا خوش آئند ہے۔ مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے سخت سفارتکاری کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے عمران خان نے ابھی تک ایک ملک کا دورہ بھی نہیں کیا۔
دیکھنا ہو گا کہ جتنے زور سے تقریر کی گئی اس کا نتیجہ کیا نکلتا ہے۔ اگر حکومت کوئی ٹھوس اقدامات اُٹھائے گی تو ساتھ دیں گے۔ مسئلہ کشمیر پر عوام کو یوٹرن نہیں لینے دیں گے۔ خیال رہے کہ وزیراعظم اسلامی جمہوریہ پاکستان عمران خان نے گذشتہ روز اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے 74 ویں اجلاس سے خطاب کیا اور کشمیریوں کے حق میں آواز اُٹھائی۔ وزیراعظم عمران خان نے اپنے خطاب میں مودی حکومت کے کشمیر میں ڈھائے جانے والے مظالم پر بات کی۔ وزیراعظم نے جنرل اسمبلی میں بھارت سے مطالبہ کیا کہ بھارت مقبوضہ کشمیر سے 50 روز سے زائد جاری کرفیو اٹھائے، کیا اقوام متحدہ ایک ارب 20 کروڑ لوگوں کو خوش کرے گا یا عالمی انصاف کو مقدم رکھے گا؟ عمران خان نے اپنے خطاب میں کہا کہ فرض کریں کہ ایک ملک اپنے پڑوسی سے سات گنا چھوٹا ہے، اسے دو آپشنز دیے جاتے ہیں، یا تو وہ سرنڈر کردے یا پھر اپنی آزادی کیلئے آخری سانس تک لڑے، ایسے میں ہم کیا کریں گے؟ میں خود سے یہ سوال پوچھتا ہوں، اور میرا یقین ہے کہ لا اله الا الله ہم لڑیں گے۔ وزیراعظم نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں 80 لاکھ افرادکو جانوروں کی طرح بند کیا ہوا ہے، یہ نہیں سوچا گیا کہ مقبوضہ کشمیر سے کرفیو اٹھے گا تو کیا ہوگا۔ دنیا نے حالات جان کر بھی کچھ نہیں کیا کیونکہ بھارت ایک ارب سے زیادہ کی منڈی ہے۔ وزیراعظم نے خبردار کیا کہ مقبوضہ کشمیر سے کرفیو اٹھنے پر خونریزی ہوگی۔