05:53 pm
عمران خان نے جنرل اسمبلی میں اسکرپٹڈ تقریر کی، اداکار کو اسکرپٹ ملتا ہے

عمران خان نے جنرل اسمبلی میں اسکرپٹڈ تقریر کی، اداکار کو اسکرپٹ ملتا ہے

05:53 pm

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)سینئرتجزیہ کار حسن نثار نے کہا ہے کہ عمران خان نے جنرل اسمبلی میں اسکرپٹڈ تقریر کی، اداکار کو اسکرپٹ ملتا ہے، وہ پرچیاں نہیں پڑھتے،وہ رٹہ لگاتے ہیں،عمران خان نے بھی بڑی محنت کی،تقریرکے معاملے میں زبردست ٹیم ورک ، ہوم ورک اور تیاری دکھائی دیا،اللہ کرے یہ گورننس میں بھی نظر آئے۔انہوں نے نجی ٹی وی کے پروگرام میں تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ اداکار کو اسکرپٹ ملتا ہے،
وہ پرچیاں نہیں پڑھتے، اسکرپٹ کا رٹہ لگاتے ہیں اس پر محنت کرتے ہیں،اسکرپٹ کا مطلب جو طے ہوگیا اس کے باہر نہیں جانا،پوری دنیا میں تھیٹر میں لمبے لمبے مکالمے ہوتے ہیں لیکن وہ رٹہ لگاتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ میں عمران خان کو تقریر کی تیار کرواتا رہا ہوں۔اس نے بڑی محنت کی ہوگی۔اسکرپٹ کا مطلب یہ نہیں ہوتا،تقریرکے معاملے میں زبردست تیاری اور ٹیم ورک دکھائی دیا۔اللہ کرے یہ ٹیم ورک ، ہوم ورک اور تیاری گورننس میں بھی نظر آئے ۔انہوں نے کہا کہ عمران خان نے تقریر میں کشمیر کی پینٹنگ ٹانگنی تھی، چوتھے نکتے پر کشمیر کی تصویر کشی کردی۔مخالفین کو چھوڑویہ دیکھو، بھارت کیا کہہ رہا ہے؟ بھارت کے آر پار چلے گئی۔ واضح رہے وزیراعظم عمران خان دورہ امریکا کے بعد وطن واپس پہنچ گئے ہیں۔وزیراعظم عمران خان کا آج اسلام آباد ایئرپورٹ کارکنان نے زبردست استقبال کیا۔ اس دوران ائرپورٹ کی فضائیں ’’کون بچائے گا پاکستان، عمران خان عمران خان‘‘، ’’کشمیر بنے گا پاکستان‘‘ کے نعروں سے گونجتی رہیں۔خیبرپختونخوا کے گورنر شاہ فرمان، سندھ کے گورنر عمران اسماعیل، وفاقی و صوبائی وزراء، اراکین پارلیمنٹ و صوبائی اسمبلیوں کی بڑی تعداد بھی ان کے استقبال کے لئے موجود تھی۔ وزیراعظم عمران خان نے استقبال کے لئے آنے والے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وہ اپنی قوم کے شکرگزار ہیں کہ جنہوں نے اقوام متحدہ میں کشمیریوں جو کہ اس وقت مشکل وقت میں ہیں، ان کا کیس بھرپور انداز میں پیش کرنے کے لئے کامیابی کی دعائیں کیں۔انہوں نے کہا کہ وہ خاص طور پر اپنی اہلیہ بشریٰ بیگم کا شکریہ ادا کرتے ہیں جنہوں نے ان کے لئے خصوصی دعائیں کیں۔ وزیراعظم نے کہا کہ ہم کشمیریوں کے ساتھ کھڑے ہیں، دنیا ان کے ساتھ کھڑی ہو نہ ہو پاکستان ان کے ساتھ کھڑا ہے۔ ان کے اوپر جو ظلم ہو رہا ہے، ہم ان کے ساتھ اللہ کی خوشنودی اور رضا کے لئے کھڑے ہیں۔ وزیراعظم نے کہا کہ 80لاکھ کشمیریوں کو ہندوستان کی فوجوں نے کرفیوں میں بند کر کے رکھا ہے۔انہوں نے کہا کہ وہ قوم کو ایک چیز سمجھنا چاہتے ہیں کہ جوجدوجہد ہوتی ہے اس میں نشیب و فراز آتے رہتے ہیں، اچھا اور برا وقت آتا جاتا ہے، تاہم برے وقت میں آپ نے مایوس نہیں ہونا، کشمیر کے لوگ پاکستان کی طرف دیکھ رہے ہیں جبکہ آپ ان کے ساتھ کھڑے ہیں وہ اس جدوجہد سے پیچھے نہیں ہٹیں گے۔ وہ انشاء اللہ کامیاب ہونگے اور انہیں آزادی ملے گی۔

تازہ ترین خبریں