03:14 pm
وزیرخارجہ ٹی وی پروگرام میں جاوید چودھری کے سوال پر بھڑک اٹھے

وزیرخارجہ ٹی وی پروگرام میں جاوید چودھری کے سوال پر بھڑک اٹھے

03:14 pm

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) سینئر ملکی صحافی جاوید چودھری کے پروگرام کل تک میں شریک وفاقی وزیرخارجہ کچھ تلخ سوالات پر برہم ہو گئے ۔ نجی ٹی وی چینل کے پروگرام کے دوران جاوید چودھری نے سوال کیا کہ ہم نے اقوام متحدہ نے کوئی قرار داد پیش نہیںکی۔ اس پرشاہ محمود قریشی نے جواب دیا کہ بالکل بھی نہیں کی۔زمینی حقائق اور موقع کو دیکھ کر ہمیں ایسا نہیں لگاکہ ہم قرار دار پیش کرتے ۔اس پر جاویدچودھری نے کہا کہ کیوں نہیں کی ۔ موقع تو اب تھا ۔ہندوستان نے کشمیر کے حوالے سے بڑا قدم تو اب اٹھایاتھا۔اس پر شاہ محمود قریشی نے کہا کہ آپ ٹی ٹوئنٹی کھیلنا چاہ رہے ہو، یہ ٹیسٹ میچ ہے، سنبھل کر کھیلنا ہوگا۔ جو 72سالوں میں نہیں ہوا
وہ آپ چاہتے ہو کہ ہم چھ ماہ میں کر دیں ۔ ایسا نہیں ہوگا۔ ہم نے اپنی حکمت عملی دیکھنی ہے۔ میں ۓآپ کی طرح ٹوئٹرپر فیصلے نہیں کرتا۔ اس پر جاوید چودھری نے کہا کہ ٹوئٹ تو آپ نے کی تھی ۔ اس پر شاہ محمود قریشی بھڑک اٹھے اور کہا کہ کیا ٹویٹ کی تھی۔ کہاں ہے وہ ٹویٹ ۔ابھی لے کر آئو۔میں نے کون سی ٹوئٹ کی تھی۔ مجھے میری ٹویٹ ابھی لا کر دکھادو ، میں نے کب ٹویٹ کی تھی کہ ہم قرار داد پیش کرنے والے ہیں۔ جاوید چودھری نے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کی اس ٹویٹ کا پرنٹ نکلوا لیا جس میں انھوںنے کہا تھاکہ انسانی حقوق کمیشن کے 50سے زائد ملکوں نے کشمیر پر پاکستان کے موقف کے حق میں بیان دیا ہے۔اس پر وزیرخارجہ تلملا اٹھے اور دوبارہ کہا ۔ ہاں میں نے یہ کہاتھا اور میں اب بھی کہتا ہوں،میں اس پر قائم ہوں ۔ ایسا ہوا ہے۔جاوید چودھری کس کے ایجنڈے پر بیٹھے ہو۔مجھے بتائو کس کے ایجنڈے پر کام کر رہے ہو۔