06:11 pm
آزادی مارچ،نواز شریف ماسٹرمائنڈ

آزادی مارچ،نواز شریف ماسٹرمائنڈ

06:11 pm

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک )سینئرصحافی وتجزیہ کارارشادبھٹی نے مولانافضل الرحمٰن کے آزادی مارچ کے حوالے سے کہاکہ اب جوچیزیں آہستہ آہستہ سامنے آرہی ہیںجبکہ مولانافضل الرحمٰن اورحافظ حسین احمدصاحب خودچیزوںکوظاہر کرچکے ہیں۔لگتایہ ہے کہ فضل الرحمٰن صاحب ایک فرنٹ مین کارول اداکررہے ہیںاورجوماسٹرمائنڈ ہیں وہ نواز شریف صاحب ہیں۔مولانافضل الرحمٰن نے خودکہابالکل اسی طریقے سے جس طرح حاصل بزنجونےکہاتھا
کہ رہبرکمیٹی کااجلاس چل رہاتھاہم سب ا نتظارکررہے تھےاورآپس میں بحث کررہے تھے کہ چیئرمین سینٹ کاامیدوارکون ہوناچاہیےتواتنے میں شاہدخاقان عباسی آئے اورکہاکہ ٹھہریں ،ٹھہریں ،ٹھہریں جیل سے پیغام آگیاہے۔جیل سے نواز شریف کاپیغام آیاکہ حاصل بزنجوامیدوارہوں گے۔دودن پہلے مولانافضل الرحمٰن نے بالکل اسی طرح بات کی انہوں نےکہاکہ اجلاس جاری تھابحث ہورہی تھی کہ دھرنےمیں مسلم لیگ نوا زنے شریک ہوناہے یانہیںہوناتواچانک کیپٹن صفدرصاحب کافون آگیااورکہاگیاکہ جیل سے نواز شریف کاپیغام آگیااورکہاگیاکہ ہم نے شرکت کرنی ہے۔حافظ حسین احمدنے ایک اورانکشاف کیاکہ نواز شریف جب ضمانت پررہاہوکرجاتی عمرہ میں تھے اورنواز شریف اورفضل الرحمٰن کی ملاقات ہوئی تھی تواس وقت دھرنے کی بات طے ہوگئی تھی ،ارشادبھٹی نے کہاکہ یہ ساری باتیں ریکارڈ پرہیں۔یہی وجہ ہے کہ پیپلزپارٹی اب پیچھے ہٹ گئی ہےکہ یہ توساراپراجیکٹ ہی نوازشریف صاحب کااورمریم بی بی کاہےاوراس کاجتنابھی فائدہ ہوگااس کاساراکریڈٹ مولانافضل الرحمٰن اورنواز شریف لیں گے ان کامقصدحکومت گرانانہیں ہےان کامقصدیہ ہے کہ حالات کواس نہج پرپہنچادیاجائے کہ فوج کومداخلت کرنی پڑےاورمارشل لاء لگ جائے۔

تازہ ترین خبریں