03:20 pm
معاشی بحران ٹل گیا

معاشی بحران ٹل گیا

03:20 pm

اسلام آباد(ویب ڈیسک )مشیرخزانہ عبدالحفیظ شیخ نے نیوز کانفرنس کرتے ہوئے کہاکہ بڑے خساروں پرقابو پا لیا گیا ہے، حکومت کے اخراجات کا خسارہ 36 فیصدکم ہوا،8 لاکھ اضافی افراد ٹیکس نیٹ میں آئے،تجارتی خسارے میں 35فیصد کمی آئی،وزیر اعظم آفس کا بجٹ کم کیا گیا،پہلی سہ ماہی میں سٹیٹ بینک سے کوئی قرض نہیں لیاگیا،تین ماہ سے ایکسچینج ریٹ مستحکم ہوا ہے،ماضی میں روپیہ مستحکم رکھنے کے لیے کئی لاکھ ڈالرز ضائع کیے گئے۔عبدالحفیظ شیخ کا کہناتھا کہ گزشتہ 3 ماہ میں کوئی ضمنی گرانٹ جاری نہیں کی گئی،
بیرونی سرمایہ کاروں کا پاکستان پر اعتماد بڑھا ہے،سٹاک مارکیٹ میں سرمایہ کاروں کا اعتماد بحال ہوا ہے اورریونیو میں16 فیصد اضافہ ہواہے،کوشش ہے 5 بڑے سیکٹرز کی مدد کی جائے،نان ٹیکس آمدنی میں 406ارب روپے حاصل کیے،سویلین اخراجات میں 40 ارب کمی کی،سٹیٹ بینک سے قرض لینے سے قیمتیں بڑھتی ہیں۔ایف بی آر چیئرمین کا کہناتھا کہ اقامہ ہولڈرز کی معلومات عوام سے شئیر کی جائیں گی،یواے ای کے حکام اگلے ماہ پاکستان آرہے ہیں۔ مشیرخزانہ عبدالحفیظ شیخ نے اسلام آباد میں نیوز کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ بڑے خساروں پرقابو پا لیا گیا ہے، حکومت کے اخراجات کا خسارہ 36 فیصدکم ہوا،8 لاکھ اضافی افراد ٹیکس نیٹ میں آئے،تجارتی خسارے میں 35فیصد کمی آئی،وزیر اعظم آفس کا بجٹ کم کیا گیا،پہلی سہ ماہی میں سٹیٹ بینک سے کوئی قرض نہیں لیاگیا،تین ماہ سے ایکسچینج ریٹ مستحکم ہوا ہے،ماضی میں روپیہ مستحکم رکھنے کے لیے کئی لاکھ ڈالرز ضائع کیے گئے۔عبدالحفیظ شیخ کا کہناتھا کہ گزشتہ 3 ماہ میں کوئی ضمنی گرانٹ جاری نہیں کی گئی،بیرونی سرمایہ کاروں کا پاکستان پر اعتماد بڑھا ہے،سٹاک مارکیٹ میں سرمایہ کاروں کا اعتماد بحال ہوا ہے اورریونیو میں16 فیصد اضافہ ہواہے،کوشش ہے 5 بڑے سیکٹرز کی مدد کی جائے،نان ٹیکس آمدنی میں 406ارب روپے حاصل کیے۔