10:01 am
فردوس عاشق اعوان نے معافی مانگ لی عدالت نے نیا شوکاز نوٹس جاری کر دیا

فردوس عاشق اعوان نے معافی مانگ لی عدالت نے نیا شوکاز نوٹس جاری کر دیا

10:01 am

اسلام آباد (این این آئی)اسلام آباد ہائیکورٹ نے توہین عدالت کے شوکاز نوٹس میں فردوس عاشق اعوان کی غیر مشروط معافی قبول کرلی تاہم زیرسماعت مقدمے پر اثرانداز ہونے کی کوشش پر وزیراعظم کی معاون خصوصی کو نیا شوکاز نوٹس جاری کردیا گیا۔ جمعہ کو توہین عدالت کیس کی سماعت چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے کی ۔ دور ان سماعت معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان ہائی کورٹ میں پیش ہوئیں اور غیرمشروط معافی مانگ لی۔ چیف جسٹس نے کہاکہ عدالت کو مطمئن کریں جان بوجھ کر عدلیہ کی تضحیک نہیں کی، نئے توہین عدالت نوٹس پر پیر تک جواب
 
دیں۔چیف جسٹس اطہر من اللہ نے فردوس عاشق اعوان کو مخاطب کرتے ہوئے ریمارکس دیئے کہ آپ سے ہرگز یہ امید نہیں تھی، ہائیکورٹ کے رولز پڑھ کرسنائیں جس پر وزیراعظم کی معاون نے اونچی آواز میں ہائیکورٹ کے رولز پڑھ کر سنائے کہ چھٹی کے روز بھی کیس سنا جا سکتا ہے۔چیف جسٹس اطہر من اللہ نے کہا کہ میری ذات کے بارے میں جو کہیں مجھے کوئی پرواہ نہیں لیکن آپ نے ایک زیر التوا معاملے پر بات کی، اس لئے نوٹس جاری کیا۔ آپ ایک ایسے وزیراعظم کی مشیر ہیں جو قانون کی بالادستی کے علمبردار تھے۔ انہوںنے کہاکہ کیا آپ کبھی ضلعی عدالتوں میں گئی ہیں؟اس سماعت کے بعد وہاں جا کر دیکھیں دکانوں میں عدالتیں لگی ہوئی ہیں۔ اس کچہری میں عام لوگوں کے مسائل سنے جاتے ہیں۔عدالت عالیہ نے توہین عدالت کے شوکاز نوٹس میں فردوس عاشق اعوان کی غیر مشروط معافی قبول کرلی تاہم زیرسماعت مقدمے پر اثرانداز ہونے کی کوشش پر وزیراعظم کی معاون خصوصی کو نیا شوکاز نوٹس جاری کردیا گیا،سماعت پانچ نومبر کو ہوگی ۔

تازہ ترین خبریں