04:02 pm
اپوزیشن آزادی مارچ ختم کرنےپرآمادہ ،حکومت کوسرپرائز دیدیا

اپوزیشن آزادی مارچ ختم کرنےپرآمادہ ،حکومت کوسرپرائز دیدیا

04:02 pm

اسلام آباد(ویب ڈیسک)اپوزیشن جماعتوں نے وزیراعظم کے استعفے نئے انتخابات پراتفاق کرلیا،اپوزیشن جماعتوں کی رہبرکمیٹی کے کنوینراکرم خان درانی نےکہاہےکہ حکومت سے مذاکرات کیلئے ہماری شرط استعفیٰ ہے ہم رابطہ رکھنے سے خائف نہیں ،سب سے پہلے حکومت کواپنالب ولہجہ درست کرناہوگا،آئندہ کے آپشنز میں اسمبلیوں سے استعفے ،لاک ڈائون ،ہائی ویز بلاک کرنے کی تجویز زیرغورہے ،اپوزیشن جماعتوں کی رہبرکمیٹی کے کنوینراکرم درانی کی زیرصدارت اپوزیشن جماعتوں کااجلاس ہواجس میں اپوزیشن کی نوسیاسی جماعتوں کے نمائندوں نے شرکت کی ۔
رہبرکمیٹی کے اجلاس کے بعداکرم درانی نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ آج رہبرکمیٹی میں مستقبل کے فیصلے کیے گئے، تمام جماعتوں کا اتفاق ہے کہ آزادی مارچ کے مقاصدجس میں وزیراعظم کا استعفیٰ ، فوج کے بغیرنئے انتخابات کروائے جائیں۔اس مقصد کو آگے بڑھانے کیلئے مختلف تجاویز زیرغور ہیں۔رہبرکمیٹی برقراررہے گی۔انہوں نے کہا کہ حکومت نے رابطے کرنے کی تجویز دی ہے۔ہم رابطہ رکھنے سے خائف نہیں ہیں، لیکن ہمارے وزیراعظم کی گلگت کی تقریر سامنے ہے، پرویز خٹک کی بات جو کہتا استعفے پر کوئی بات نہ کرے۔ یہ سب جمہوری جماعتیں ہیں، ہماری پہلی شرط استعفیٰ ہے، ہم رابطے سے انکاری نہیں ہے، سب سے پہلے حکومت کو اپنا لب ولہجہ درست کرنا ہوگا۔انہوں نے کہا کہ آج کی میٹنگ میں تمام غیرجمہوری قوتوں کو خبردار کیا گیا ہے۔میں جو بھی بات کرتا ہوں وہ ساری جماعتوں کا متفقہ فیصلہ اور زبان ہے۔ انہوں نے کہا کہ آئندہ کے لائحہ عمل کیلئے تجاویز پیش کی گئی ہیں۔یہ ساری تجاویز ساری جماعتوں میں جائے گی،اسمبلیوں سے استعفے، لاک ڈاؤن، ہائی ویز کو بلاک کرنے کے آپشن موجود ہیں۔ ہم فیصلے کریں گے کہ کس نے ڈی چوک جانا ہے، کیسے جانا ہے، ڈی سی اسلام آباد کے درمیان معاہدہ ہوا