08:35 am
اب پاکستان کی رٹ ہمارے ہاتھ میں ہے اب حکومت ہم کریں گے

اب پاکستان کی رٹ ہمارے ہاتھ میں ہے اب حکومت ہم کریں گے

08:35 am


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) امیرِ جمعیت علمائے اسلام ف مولانا فضل الرحمٰن نے کہا ہے کہ انتظامیہ نے معاہدہ توڑ دیا ہے اب حکومت ہم کرینگے۔ انہوں نے کہا کہ تم اب پاکستان کے حکمران نہیں، اب تمہاری حکومت نہیں ہے، مودی خوش ہےعمرا ن جیسا شخص پاکستان کا وزیراعظم ہے، مودی عمران کی وجہ سے کشمیریوں پر ظلم کر رہا ہے۔ مولانا نے کہا کہ آپ نے سفارتی پروٹوکول سے طالبان کا استقبال کیا، حالات کو بگاڑنا نہیں چاہتے،

ڈی چوک تک جانا بھی تجاویز کا حصہ ہے، فیصلہ کرینگے اس میدان سے اگلے میدان میں منتقل ہوں، حکومت غیر آئینی، جعلی اور خلائی ہے، حکومت کی خارجہ پالیسی ناکام ہوچکی، ناجائز حکومت کا تختہ الٹ دیں گے۔مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ کرسی پر ٹانگ پہ ٹانگ رکھنے سے کوئی حکمران نہیں بن جاتا، اب پاکستان پر تمہاری رٹ اور حکمرانی ختم ہوچکی ، اب پاکستان کی رٹ ہمارے ہاتھ میں ہے،خواتین کی بات کرتے ہو؟ تم نے قائداعظم کی بہن کو ایک فوجی مرد ایوب خان کے مقابلے میں شکست دلوائی،وہ ایک جمہوری خاتون تھی، ہم آگے بڑھتے جائیں گے، یہاں تک ناجائز حکومت کا تختہ پلٹ دیں۔ انہوں نے حکومت کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ تم کس منہ سے کشمیر کی بات کرتے ہو؟ کس منہ سے کشمیریوں کی نمائندگی کی بات کرتے ہو؟کشمیر کے نمائندے ہم ہیں، آپ کہتے ہو،میں وزیراعظم ہوں ،اگر وزیراعظم تو پھر زبان بھی وزیراعظم کی ہونی چاہیے، دعویٰ وزیراعظم کا اور زبان گالی ہے۔ گالم گلوچ بریگیڈ ہے، ان کو گالیوں ، جھوٹ ،الزام تراشیوں کے علاوہ کچھ نہیں آتا۔مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ ہمیں کہتے آپ کے جلسے میں طالبان کا جھنڈا لہرایاتو تصویر لے کرکہتے ہیں یہاں طالبان ہے۔بھئی موجودہ حکومت میں طالبان کا صدارتی پروٹوکول کے ساتھ استقبال کیا گیا۔ہمیں کہتے ہیں آپ کے جلسے میں بچہ کیوں آیا؟ جس نے جھنڈا لہرایا گیا؟ یہ شرارت ان کی اپنی پیدا کی ہوئی ہے، تاکہ کچھ تو مل جائے۔

 

تازہ ترین خبریں