04:37 pm
لبرل ازم کی آڑ میں فحاشی کا طوفان ‘‘ لاہور کی ایک لڑکی نے اپنی برہنہ تصاویر ٹویٹر پہ اپلوڈ کر کے رابی پیر زادہ کی حمایت میں نیا ٹرینڈ شروع کر

لبرل ازم کی آڑ میں فحاشی کا طوفان ‘‘ لاہور کی ایک لڑکی نے اپنی برہنہ تصاویر ٹویٹر پہ اپلوڈ کر کے رابی پیر زادہ کی حمایت میں نیا ٹرینڈ شروع کر

04:37 pm

اسلام آباد( احمد ارسلان) پاکستانی گلوکارہ رابی پیرزادہ کی نجی نوعیت کی بعض تصاویر اور ویڈیوز سوشل میڈیا پر لیک ہوئیں تو بہت سے پاکستانی ان کی حمایت میں سامنے آگئے۔ اس بات پر کوئی دو رائے نہیں کہ رابی کیساتھ برا ہوا ہماری تمام تر ہمدردیاں ان کے ساتھ تاہم پاکستان میں لبرل ازم کی آڑ میں فحاشی کا جو طوفان مچانے کی سازش کی جارہی ہے وہ کسی بھی طرح قابل قبول نہیں ۔ یہ وہ ملک ہے جس کی بنیاد کلمہ طیبہ ہے ۔ گو کہ ہم سے کوئی بھی کامل نہیں
، کوئی بھی دودھ کا دھلا نہیں مگر اس کا یہ مطلب بھی ہر گز نہیں ہے کہ پاکستان میں ایک مادر پدر آزاد معاشرے کی بنیاد رکھنے کی سازشیں شروع کر دی جائیں اور غیر محسوس طریقے سے وطن عزیز میں فحاشی ، میرا جسم میری مرضی کو فروغ دیا جائے ۔ تمہید کا مقصد یہ ہے کہ رابی پیر زادہ کی نجی تصاویر اور ویڈیوز لیک ہونے کے بعد جہاں ان پر تنقید کی گئی وہیں انہیں تسلی بھی دی گئی کہ انسان خطا کا پتلا ہے اور غلطی کسی سے بھی ہو سکتی ہے تاہم ایک لاہور کی ایک خاتون فوزیہ الیاس جو خود کو ببانگ دہل ملحد (لادین) کہتی ہیں اور ان کے شوہر سید احسن گیلانی جو خود بھی ملحد ہیں انہوںنے رابی پیر زادہ کی حمایت میں اور رابی سے اظہار یکجہتی کیلئے اپنی برہنہ تصاویر سوشل میڈیا پر شیئر کرنا شروع کر دی ہیں۔ یوں تو سوشل میڈیا کےتمام پلیٹ فارمز پر ان دونوں نے حتی المقدور بے حیاپوسٹس کا سلسلہ جاری کر رکھا ہے تاہم ٹوئٹر پر چلائے گئے اس ٹرینڈ کا نام IAmRabiPirzadaہے ۔ اس ٹرینڈ کے تحت سب سے پہلے فوزیہ الیاس نے اپنی برہنہ تصاویر ٹوئٹر پر شیئر کیں، انہوں نے اپنے مخصوص اعضا کے کو چھپانے کیلئے ایک کاغذ پر #IAmRabiPirzada لکھا اور اسے اپنے اعضا چھپانے کیلئے استعمال کیا۔فوزیہ الیاس کا کہنا ہے کہ اپنے جسم پر شرمندہ ہونے کی کوئی ضرورت نہیں ہے، مجھے یہ سمجھ نہیں آتی کہ خواتین کو ہی اپنی جسمانی ساخت کی وجہ سے کیوں تنقید کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ رابی پیرزادہ نے کچھ بھی غلط نہیں کیا، یہ اس کی اپنی زندگی اور اس کی اپنی پسند، ان لوگوں کو شرم آنی چاہیے جو رابی کو تنقید کا نشانہ بنا رہے ہیں۔اس مہم میں فوزیہ الیاس کے شوہر سید احسن گیلانی بھی شامل ہیں جو اپنی فیس بک وال پر مختلف تصاویر رابی پیرزادہ کی حمایت میں پوسٹ کر رہے ہیں۔ اسی طرح ٹوئٹر اور فیس بک پر دیگر لوگ بھی رابی پیرزادہ کی حمایت میں اپنی نیم برہنہ تصاویر شیئر کر رہے ہیں۔ اس حوالے سے پاکستانیوں میں شدید غم و غصے کی لہر دوڑ گئی ہے اور ان کی جانب سے ایسی بیہودہ پوسٹس کیخلاف کارروائی کا مطالبہ کیا جا رہا ہے ۔