03:24 pm
معاملات بند گلی میں پہنچ گئے ،فضل الرحمٰن ،عمران خان میں سے کسی ایک کی سیاست ختم یاپورانظام لپیٹ دیاجائیگا

معاملات بند گلی میں پہنچ گئے ،فضل الرحمٰن ،عمران خان میں سے کسی ایک کی سیاست ختم یاپورانظام لپیٹ دیاجائیگا

03:24 pm

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)مولانافضل الرحمٰن گزشتہ 9دن سے اسلام آبادمیں دھرنادیئے بیٹھے ہیں اوراپنے روئیے میں لچک نہیں دکھارہے ایسے میں خدشہ ظاہرکیاجارہاہےکہ مولانافضل الرحمٰن کی سیاست ختم ہوگی یاپھرعمران خان کی ایسی صورت میں یہ بھی ممکن ہے کہ ملک کے طاقتورحلقوں (اسٹبلشمنٹ )کی جانب سے جمہوریت کے نظام کولپیٹ دیاجائے
جس کے چانسز اس صورتحال میں بہت زیادہ ہوچکے ہیں۔فضل الرحمٰن نے کہہ دیاہے کہ تصادم ہو،لاشیں بچھیں ،ہم تمام معاملات کے لیے تیارہیںجوکچھ بھی ہوگاہم تیارہیں تصادم ہوتاہے توہوتارہے ہمیں پرواہ نہیں۔مہربخاری نے انٹرویوکے دوران جب پوچھاکہ اگرحکومت نے آپ کی بات نہ مانی توکیاہوگاجس کے جواب میں مولانافضل الرحمٰن نے کہاکہ پھرملک میں افراتفری ہوگی ۔مہربخاری نے اس کے جواب میں کہاکہ حکومت نے کہاہے کہ اگرافراتفری ہوئی توہم تن کے رکھ دیں گے جس کے جواب میں مولانافضل الرحمٰن نے کہاکہ اف خدایاکہ اگرہم اس بات سے ڈرتے تویہاں آتے۔اللہ خیرکرے کیاملک اس بات کامتحمل ہے۔یہ وہ ہمارے بارے میں کہہ رہے ہیںہم ان کے بارے میںکہہ رہے ہیں۔آپ قانون نافذ کرنیوالے اداروں پرحملہ کریں گے جس کے جواب میں مولانانے کہاکہ ہم حملہ نہیں کریں گے ہم گولیاں کھائیں گے شہادتیں ہوں گی اورہم لاشیں اٹھائیں گے۔

تازہ ترین خبریں