11:16 am
پاکستان کیوں جا رہے ہو؟کرتار پور راہداری بننے کے غصے میں انتہاپسند بھارتیوں نے کیا کام کر ڈالا ، جانیں 

پاکستان کیوں جا رہے ہو؟کرتار پور راہداری بننے کے غصے میں انتہاپسند بھارتیوں نے کیا کام کر ڈالا ، جانیں 

11:16 am


نارووال(مانیٹرنگ ڈیسک ) آج سِکھ قوم کے لیے ایک بہت بڑی خوشی کا دن ہے۔ کیونکہ سِکھ مذہب کے بانی بابا گرو نانک کی آخری آرام گاہ گُردوارہ دربار صاحب کرتار پور میں ماتھا ٹیکنے کے لیے راہداری کا آج افتتاح ہونے جا رہا ہے۔ یہ راہداری سِکھ قوم کا پُرانا مطالبہ اور خواب تھا جس کی راہ میں بھارتی حکام کی جانب سے ہمیشہ روڑے اٹکائے گئے

جبکہ پاکستانی حکومتوں نے ہمیشہ سے اس حوالے سے مثبت جواب دیا تھا۔ تاہم پچھلے کچھ عرصہ سے سِکھ قوم کی جانب سے یہ مطالبہ زور پکڑے جانے کے بعد بھارتی حکومت کو نہ چاہتے ہوئے بھی اس راہداری کی تعمیر کے لیے پاکستان سے سمجھوتہ کرتے ہوئے گھُٹنے ٹیکنے پڑ گئے۔ مگر پاکستان اور سِکھ قوم میں قربتیں بڑھانے والی یہ راہداری پاکستان سے نفرت کرنے والے مودی اور دوسرے انتہا پسندوں کے سینے میں کانٹے کی طرح چُبھ رہی ہیں۔ اس راہداری کا غصہ متعصب بھارتی حکام کی جانب سے افتتاحی تقریب میں جانے والے یاتریوں پر نکالا جا رہا ہے۔ پاکستان آئے سِکھ یاتریوں نے بتایا ہے کہ بارڈر پر تعینات بھارتی اہلکاروں کی جانب سے اُن سے بہت بدتمیزی سے پیش آیا جا رہا ہے۔ اکثر اہلکار اُن سے یہ تلخ اور غیر ضروری سوالات کرتے رہے کہ پاکستان کیوں جا رہے ہو، اور کیا کرنے جا رہے ہو؟ حالانکہ پُوری دُنیا کو پتا ہے کہ کرتار پور کی سرحد کے ذریعے آج جو بھی جا رہا ہے وہ گُردوارے کے درشن دیدار کرنے اور افتتاحی تقریب میں شرکت کے لیے جا رہا ہے، پھر ایسے بے ہودہ سوالات پُوچھنے کا کوئی مقصد نہیں بنتا۔ سِکھ یاتریوں کا کہنا تھا کہ اس غلط رویئے کے باعث اُنہیں بھارتی ایگزٹ پوائنٹ پر مشکلات کا سامنا کرنا پڑا، جبکہ پاکستان میں داخلے کے وقت حکام کا رویہ بہت مہمان نوازی والا اور خوشگوار تھا۔ اس لیے انٹری کے وقت کوئی پریشانی کا سامنا نہیں کرنا پڑا۔

تازہ ترین خبریں