05:59 am
فارن فنڈنگ کی چال الٹی پڑ گئی ، مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی کی برطانیہ اور امریکہ میں پارٹیوں کے نام پر لمیٹڈ کمپنیاں قائم،

فارن فنڈنگ کی چال الٹی پڑ گئی ، مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی کی برطانیہ اور امریکہ میں پارٹیوں کے نام پر لمیٹڈ کمپنیاں قائم،

05:59 am

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک ) وفاقی پارلیمانی سیکرٹری ریلوے فرخ حبیب نے کہا ہے کہ پاکستان مسلم لیگ (ن) اور پیپلز پارٹی کی برطانیہ ار امریکا میں پارٹی کے نام پر لمیٹڈ کمپنیاں قائم ہیں جہاں سے فارن فنڈنگ اور منی لانڈرنگ کے واضح ثبوت ہیں، پی ٹی آئی کا مطالبہ ہے کہ ان جماعتوں سمیت تمام سیاسی جماعتوں کے اکائونٹس کی جانچ پڑتال کی جائے، پی ٹی آئی کا اکائونٹ غیر ظاہر شدہ نہیں۔
وہ پیر کو یہاں پی آئی ڈی میں میڈیا کو بریفنگ دے رہے تھے۔ فرخ حبیب نے کہاکہ الیکشن کمیشن کی سکروٹنی کمیٹی سیاسی جماعتوں کی فنڈنگ کے حوالے سے سماعت کر رہی ہے۔ تاثر یہ ہے کہ صرف پی ٹی آئی کی فارن فنڈنگ کا کیس زیر سماعت ہے لیکن در حقیقت ایسا نہیں ہے۔ الیکشن کمشین گذشتہ 5 سال میں جمع کرائے گئے گوشواروں کی جانچ پڑتال اور تحقیقات شفاف طریقے سے کر سکتا ہے۔ 2017ء میں میں نے الیکشن کمیشن میں پٹیشن دائر کی تھی کہ مسلم لیگ (ن) اور پیپلز پارٹی کے اکائونٹس کی جانچ پڑتال کی جائے کہ ان کو پیسے بھجوانے والے کون ہیں اور کیا یہ ممنوعہ فنڈنگ کے زمرے میں آتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ پی ایم ایل این کے اکائونٹس میںبھی غیر ملکی آن لائن ٹرانزیکشن ہوئی ہے ۔ الیکشن کمیشن کی سکروٹنی کمیٹی کے 23 اجلاس ہوئے لیکن ابھی تک دونوں جماعتوں کی طرف سے جواب جمع نہیں کرایاگیا۔ خدشہ ہے کہ ان جماعتوں کے یہ کائونٹس منی لانڈرنگ کے لئے استعمال کئے گئے ہیں۔ فرخ حبیب نے کہا کہ نواز شریف نے اپنی پارٹی کو 10 کروڑروپے عطیہ کئے اور اگلے روز 44 کروڑ اپنے ذاتی اکائونٹس میں منتقل کر لئے اور اپنی پارٹی کے اکائونٹس کو منی لانڈرنگ کے لئے استعمال کیا اور جو آڈٹ ہوا وہ کیو سی آر کے مطابق نہیں تھا۔ انہوں نے کہا کہ پی ایم ایل این یو کے لمیٹڈ کمپنی کے طورپر رجسٹرڈ ہے جو کہ غیرملکی حکومت کے ساتھ معاہدہ، تجارت اور کاروبار کر سکتی ہے اور اس کے سربراہ زیبر گل ہیں۔ اس کا جواب بھی آج تک نہیں آیا۔ انہوں نے کہا کہ پاناما کیس میں بھی مسلم لیگ (ن) کے پاس کوئی منی ٹریل نہیں تھی۔ قطری خط جعلی تھا جو ردی کی ٹوکری میں ڈال دیا گیا ۔ فرخ حبیب نے کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی یو ایس اے لمیٹد کے طور پر رجسٹرڈ ہے اس کے سربراہ مارگ سیگل ہیں۔ آصف علی زرداری اس کمپنی کے پرنسپل ہیڈ ہیں۔ یہ معاملہ 3 دہائیوں سے چل رہا ہے۔ 2008ء تا 2012ء میں پیپلز پارٹی نے اس پلیٹ فارم کو ذاتی لابنگ کے لئے استعمال کیا۔ زرداری اور بے نظیر بھٹو کا این آر او بھی اس لابنگ کے ذریعے حاصل کیا گیاہے، پارٹی کو ان سوالات کا جواب دیناہو گا۔ جو گڑھا پی ٹی آئی کے لئے کھودنا چاہتے ہیں اس میں خود گر جائیں گے۔ پی ٹی آئی نے عطیات دینے والی40 ہزار افراد کا ڈیٹا الیکشن کمیشن کے پاس جمع کرایا ہے۔ انہوں نے کہاکہ احسن اقبال وزیر منصوبہ بندی تو پاکستان کے تھے اور سعودی عرب کا اقامہ لے کرکام کر رہے تھے۔ الیکشن سکروٹنی کمیٹی پر بہت بڑی ذمہ داری ہے، تمام سیاسی جماعتوں کے اکائونٹس کی روزانہ کی بنیاد پر سماعت ہونی چاہیے۔ جن ٹی او آر پر پی ٹی آیء کے اکائونٹس کی جانچ پڑتال ہو رہی ہے اس طرح باقی جماعتوں کے اکائونٹس کی بھی جانچ پڑتال کی جائے۔ انہوں نے کہا کہ آج فارن فنڈنگ کا الزام لگانے والوں نے اپنی حکومت کے دوران یہ کیس دائر کیوں نہیں کیا۔ انہوں نے کہاکہ حنیف عباسی کیس میں عمران خان نے 60 اہم دستاویزات عدالت کے سامنے پیش کیں اور اثاثہ جات ظاہر کئے ۔ پی ٹی آئی شفافیت پر یقین رکھتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) اور پیپلزپارٹی کے اکائونٹس میں فارن فنڈنگ، منی لانڈرنگ کے واضح ثبوت موجود ہیں۔ اگر بیرون ملک لمیٹڈ کمپنیوں پر جواب نہ دیا گیا تو وفاقی حکومت خود تحقیقات کا اختیار رکھتی ہے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کا کوئی اکائونٹ غیر ظاہر شدہ نہیں۔ تمام ٹرانزیکشن بینکنگ چینلز کے مطابق ہیں ۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ سکروٹنی کمیٹی کی فائنڈنگز مکمل ہونے تک اس کے میڈیا کی زینت نہ بننے کی بات کی ہے کیونکہ غلط چیزیں منسوب کرکے میڈیا پر پیش کی جاتی ہیں۔ اس حوالے سے کیس عدالت میں زیر سماعت ہے۔ انہوں نے کہا کہ استعمال نہ ہونے والے بند اکائونٹس اور آپریشنل اکائونٹس کی تفصیلات پیش کیں ہیں۔ ٹاپ 10 کمپنیوں میں سے سب سے اچھی فرم سے آڈٹ کرایا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ راہزن کمیٹی کا وفد روز الیکشن کمیشن جا کر دبائو ڈال رہا ہے لیکن یہ بھی ہمیشہ کی طرح ناکام ہو گی۔