08:26 am
جنرل راحیل کو پنشن مل رہی ہے، رولز میں تو جنرل کی پنشن کا ذکر ہی نہیں، چیف جسٹس

جنرل راحیل کو پنشن مل رہی ہے، رولز میں تو جنرل کی پنشن کا ذکر ہی نہیں، چیف جسٹس

08:26 am

اسلام آباد(نیوز ڈیسک ) چیف جسٹس پاکستان جسٹس آصف سعید کھوسہ نے جنرل کیانی اور جنرل راحیل شریف کی ریٹائرمنٹ کے دستاویزات پیش کرنے کا حکم دیتے ہوئے کہا سوال یہ ہےکہ آپ نے کہا تھا جنرل کبھی ریٹائرنہیں ہوتے۔ سوال یہ بھی ہے اگر ریٹائر نہیں ہوتے تو پنشن بھی نہیں ہوتی؟عدالت نے حکم جاری کیا کہ 15 منٹ میں جنرل کیانی کی توسیع کے دستاویزات پیش کریں۔ دستاویزات لےآئیں پھرآپ کوتسلی سےسن لیں گے۔ جائزہ لیں گے، جنرل کیانی کی توسیع کن بنیادوں پرہوئی۔
اٹارنی جنرل نے کہا اس معاملے پرعدالت کی معاونت کرنا چاہتا ہوں، دستاویزات کچھ دیرمیں پہنچ جائیں گے۔ آرٹیکل243کےتحت آرمی چیف کی دوبارہ تعیناتی کردی گئی۔چیف جسٹس نے ریمارکس دئیے کہ کہیں نہیں لکھا جنرل کیانی کوتوسیع کس نے دی تھی، جس قانون کےتحت توسیع دی گئی اس کابھی حوالہ دیں، اتنےاہم عہدے کیلئے توابہام ہونا ہی نہیں چاہیے۔چیف جسٹس نے کہا کہ جنرل راحیل کو پنشن مل رہی ہے، رولز میں تو جنرل کی پنشن کا ذکر ہی نہیں ہے۔