07:34 am
زندگی میں ایک ہی آرمی چیف دیکھا ہے اور وہ ہیں’’ قمر جاوید باجوہ ا

زندگی میں ایک ہی آرمی چیف دیکھا ہے اور وہ ہیں’’ قمر جاوید باجوہ ا

07:34 am

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) زندگی میں ایک ہی آرمی چیف دیکھا ہے اور وہ ہیں’’ قمر جاوید باجوہ ‘‘ چین کے صدر نے پاک فوج کے سربراہ کے بارے میں کیا بیان دیا ۔۔۔ وفاقی وزیر شیخ رشید کا کہنا ہے جنرل باجوہ تین سال کے لیے پکے ہیں۔تفصیلات کے مطابق وزیر ریلوے شیخ رشید نے دعویٰ کیا ہے کہ جنرل باجوہ تین سال کے لیے پکے ہیں۔وہ پاک فوج کے عظیم جرنیل ہیں جس کی تعریف چین کے
صدر نے بھی کی۔انہوں نے کہا کہ قانون سازی کے معاملے پر اپوزیشن کے ساتھ جس نے بات کرنی ہے وہ کر لیں اور حزب اختلاف خوشی خوشی ووٹ دے گی۔ کیا اپوزیشن آسانی سے مان جائے گی؟ اس سوال کے جواب میں شیخ رشید نے کہا بیوروکرریسی کے چھوٹے اسٹاف سے غلطیاں ہوئی ہیں اگر ہم اس کو مانتے ہیں لیکن جہاں تک حزب اختلاف کے تعاون کی بات ہے وہ خود ووٹ دیں گے۔چھ ماہ میں قانون سازی بھی ہو گی اور باجوہ تین سال کے لیے اس عہدے پر بھی رہیں گے۔ وفاقی وزیرِ ریلوے شیخ رشید احمد نے مطالبہ کیا ہے کہ ججوں کی مدت ملازمت میں بھی 3سال کی توسیع کی جائے۔ انہوں نے کہا ہے کہ اس وقت قابل لوگوں کا ملک میں بڑا بحران ہے اور اچھے لوگ پاکستان میں مل ہی نہیں رہے اس لیے ججوں کی مدت ملازمت میں بھی 3سال کی توسیع ہونی چاہیے۔ وزیرِ ریلوے نے کہا ہے کہ اللہ تعالیٰ کے بعد حکومت کو فوج کا بڑا سہاراہے ، اگر کوئی ایسا ویسا فیصلہ آتا تو اس کا متبادل بندوبست بھی موجود تھا لیکن چیف جسٹس کھوسہ صاحب بڑے نظریاتی جج ہیں جنہوں نے موقع دیاہے کہ ہم اپنے آپ کو درست کرلیں اور ہماری کلاس بھی لی۔ انہوں نے کہا کہ جنرل قمر جاوید باجوہ 3سال کیلئے ڈن ہیں، جنرل باجوہ پاک فوج کا عظیم جرنیل ہے جس نے کرتارپور رہداری کو کھولا، ایران، چین، سعودی عرب اور متحدہ عرب امرات کے ساتھ تعلقات کو مضبوط کیا۔وفاقی وزیر ریلوے نے مزید کہا کہ چین کے صدر نے انکی موجودگی میں 2بار کہا تھا کہ انہوں نے زندگی میں ایک ہی آرمی چیف دیکھا ہے اور وہ ہے جنرل قمر جاوید باجوہ۔ شیخ رشید نے دعویٰ کیا کہ چھ ماہ میں آرمی ایکٹ بھی تھیک ہوجائے گا اور اسمبلی سے پاس بھی ہوجائے گا۔انہوں نے مزید کہا کہ نے کہا کہ فوج کو کسی سطح پربھی کوئی انکار نہیں ہے ، آرمی چیف نے فاٹا کی شمولیت اور کرتار پور رہداری کے معاملات میں اہم کردار ادا کیاہے ۔انہوں نے کہا کہ اپوزیشن سے بات ہو گی اور بات کرنیوالوں کو بات کرنے کا طریقہ آتاہے ۔

تازہ ترین خبریں