11:26 am
آرمی چیف کو کٹہرے میں کھڑا کرنے سے متعلق اہم خبر سامنے آگئی

آرمی چیف کو کٹہرے میں کھڑا کرنے سے متعلق اہم خبر سامنے آگئی

11:26 am

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں بات کرتے ہوئے سینئرصحافی نذیر لغاری نے انکشاف کیا کہ یہ جو کچھ بھی ہوا ہے اس کے بارے میں میں کئی روز سے کہہ رہا ہوں ، یہ غیر ارادی طور پر نہیں ہوا ، یہ سب کچھ نالائقی کی وجہ سے نہیں ہوا۔ یہ ایک سوچا سمجھا منصوبہ تھا جس کے تحت یہ سب کچھ کیا گیا ہے ۔ تاکہ ایک ایسے آرمی چیف کو کٹہرے میں لا کھڑا کیا جائے
جس نے پاکستان میں دہشتگردی کے خلاف آخری بڑی ضرب رد الفساد آپریشن کر کے دہشتگردی کو تہس نہس کیا۔اُن کو ڈی کریڈٹ کرنے کے لیے ان لوگوں نے جس طریقے سے اس معاملے کو ہینڈل کیا، انہوں نے کہا کہ کورٹ کا آرڈر کافی واضح ہے ۔ مختصر فیصلے میں کوئی ابہام نہیں ہے۔ عدالت ابہام کو دور کرنا چاہ رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ حکومتی نمائندوں نے کہا کہ ہماری سمریاں تو مسترد نہیں ہوئیں، بندہ ان سے پوچھے کہ آپ کی اتنی سمریاں بنی ہی کیوں تھیں؟ پھر نوٹی فکیشن بھی جاری کیے گئے۔جب عدالت کے سامنے دستاویزات لے کر جائے جاتے تھے تو پھر عدالت کیوں واپس کر دیتی تھی ۔ نذیر لغاری نے مزید کہا کہ انہوں نے صرف یہ تاثر دیا ہے کہ ہمیں کچھ سمجھ نہیں آ رہی جبکہ اصل میں انہوں نے یہ سب کچھ سوچی سمجھی منصوبہ بندی کے تحت کیا ہے۔ خیال رہے کہ سپریم کورٹ آف پاکستان نے گذشتہ روز آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی مدت ملازمت میں چھ ماہ کی مشروط توسیع کر دی تھی اور معاملہ پارلیمنٹ پر چھوڑ دیا تھا۔ اس معاملے پر گذشتہ روز سے ہی سیاسی مبصرین اور سیاسی تجزیہ کاروں کے تبصرے اور مباحثے جاری ہیں۔

تازہ ترین خبریں