05:29 pm
اغواء کار میرے لباس اور انداز سے دھوکا کھا گئے دعامنگی کےانکشافات

اغواء کار میرے لباس اور انداز سے دھوکا کھا گئے دعامنگی کےانکشافات

05:29 pm

کراچی(آن لائن) کراچی کے علاقے ڈیفنس سے اغوا ء ہونے والی دعامنگی نے انکشافات کیے ہیں کہ اغواء کار میرے لباس اور انداز سے دھوکا کھا گئے سمجھے ہم کروڑ پتی ہیں،2کروڑ تاوان طلب کیا گیا ،واٹس اپ پرگھر اورعلاقہ دیکھنے کے بعد تاوان 20لاکھ روپے کردیا گیا۔دعا منگی نے اپنے اغوا ء ہونے
کی تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ میرے لباس اور انداز سے اغوا ء کاروں کو غلط فہمی ہوئی کہ میرا تعلق امیر خاندان سے ہے،7دن تک ہاتھ پاؤں باندھ کر رکھا،آنکھوں پر پٹی باندھیں تاہم کوئی تشدد نہیں کیا۔ دعا منگی نے بتایاکہ ملزمان آپس میں اردو میں بات کررہے تھے جو پروفیشنل کرمنلز دکھائی دے رہے تھے۔اغوا کاروں نے دعا منگی کے خاندان سے واٹس ایپ پر رابطہ کیا اور بھاری تاوان طلب کیا، دعا کی بہن نے بتایا کہ ان کا تعلق متوسط طبقے سے ہے،واٹس اپ پر ملزمان کو اپنا گھر اورعلاقہ دکھایابتایا کہ وہ مڈل کلاس خاندان سے تعلق رکھتے ہیں جس کے بعد دو کروڑ کا تاوان 20لاکھ روپے کردیا گیا۔اغواء کاروں نے صفوراچورنگی اور حسن اسکوائرکے درمیان کسی جگہ رکھا،دعامنگی کے گھرپہنچنے کے بعد سے پولیس یا کسی ادارے کی جانب سے کوئی بڑی پیش رفت سامنے نہیں آئی۔دعا کے والد نثار منگی ڈاکٹر ہیں اور حال ہی میں جناح اسپتال سے ریٹائر ہوئے ہیں، ان کی 5 بیٹیاں ہیں جن میں سے 2ڈاکٹر ہیں۔دعا ان میں چھوٹی ہے وہ 2سال امریکا میں زیر تعلیم رہیں واپس کراچی آکر نجی یونیورسٹی میں قانون کے شعبے میں داخلہ لیا جہاں وہ دوسرے سال کی طالبہ ہیں