06:34 pm
کرپشن کے خلاف جہاد میں قوم کو بھی حصہ لینا ہوگا، وزیراعظم

کرپشن کے خلاف جہاد میں قوم کو بھی حصہ لینا ہوگا، وزیراعظم

06:34 pm

اسلام آباد(آن لائن)وزیراعظم عمران خان نے پنجاب میں کرپشن کے خلاف کارکردگی کو متاثر کن قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ عثمان بزدار ان اقدامات کی تشہیر کریں ،کرپٹ آدمی ملک اور عوام کا دشمن ہے، نوجوان جب کرپٹ لوگوں کا پیچھا کریں گے تو نیا پاکستان بنے گا، بڑے بڑے منصوبے کک بیکس کیلئے بنائے جاتے ہیں،کہتے ہیں اگر کھاتا ہے تو لگاتا بھی ہے، ایسی باتیں بیوقوف ہی کر سکتے ہیں۔وزیر اعظم عمران خان نے اسلام آباد میں اینٹی کرپشن ڈے کے موقع پر تقریب سے خطاب کرتے ہوئے
کہا کہ پنجاب میں اینٹی کرپشن کی کارکردگی بہت زیادہ اچھی رہی ہے۔ 132 ارب روپے کی زمینوں کی واہگزاری بہت بڑی کامیابی ہے، وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدار کی کارکردگی متاثر کن ہے۔انہوں نے کہا کہ دنیا میں سب سے تیز بڑھتی ہوئی معیشت چین کی ہے جنہوں نے کرپشن میں ملوث وزیر سطح کے 400 سے زائد افراد کو جیل میں ڈالا۔ دنیا بھر میں لوگ کرپشن کے خلاف سڑکوں پر نکل آئے ہیں ۔ پہلے کرپشن چھپ جاتی تھی لیکن اب کرپشن چھپانا مشکل ہے۔وزیرا عظم نے کہا کہ عوام کو اب اس بات کا اندازہ ہو گیا ہے کہ جس ملک میں کرپشن ہوتی ہے وہ ترقی نہیں کرسکتا۔ جن ممالک میں وسائل کے باوجود کرپشن ہے وہ زوال کا شکار ہیں۔ منی لانڈرنگ کی وجہ سے روپے پر فرق پڑتا ہے۔انہوں نے کہا کہ کرپٹ معاشروں میں سرمایہ کاری نہیں آتی۔ اوورسیز پاکستانیوں کی بڑی تعداد موجود ہے جن کی پاکستان میں سرمایہ کاری سے بہت فرق پڑ سکتا ہے لیکن وہ کرپشن کی وجہ سے اپنی رقم پاکستان میں انویسٹ نہیں کرتے۔وزیر اعظم نے کہا کہ ملتان کی عوام کہہ رہی ہے ہمیں میٹرو نہیں چاہیے، وہاں میٹرو خالی چل رہی ہے جس کی وجہ سے حکومت کو اربوں روپے کا نقصان ہو رہا ہے۔ وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ بڑے بڑے منصوبے کک بیکس کیلئے بنائے جاتے ہیں۔ کہتے ہیں اگر کھاتا ہے تو لگاتا بھی ہے، ایسی باتیں بیوقوف ہی کر سکتے ہیں۔ ملک میں کرپٹ لوگوں پر پھول پھینکے جاتے ہیں۔ لوگوں کو سمجھ ہی نہیں کہ پیسہ چوری کرنے سے ملک کا کتنا نقصان ہوتا ہے۔عمران خان نے اس موقع پر اینٹی کرپشن ایپ کا بھی افتتاح کیا اور کہا کہ یہ سوشل میڈیا کا دور ہے اب کرپشن چھپ نہیں سکتی۔ ایپ کی لانچنگ پاکستان کو ماڈرن سوسائٹی بنانے میں مددگار ہوگی۔ان کا کہنا تھا کہ کرپٹ معاشروں میں انویسٹمنٹ نہیں آتی۔ اوورسیز پاکستانی کہتے ہیں کرپشن کی وجہ سے انویسٹمنٹ نہیں کر سکتے۔ اگر ہم نے کرپشن پر قابو پا لیا تو اوورسیز پاکستانی ملک میں انویسٹمنٹ شروع کر دیں گے۔انہوں نے کہا کہ کرپٹ لوگ حکومت میں آ کر پیسہ بناتے ہیں۔ کرپٹ لوگ پیسہ بینکوں میں نہیں ٹی ٹیز کے ذریعے باہر بھجوا دیتے ہیں۔ کرپٹ لوگ پیسہ باہر بھجوا کر ملک کا دگنا نقصان کرتے ہیں۔وزیراعظم نے کہا کہ دنیا میں کرپٹ قومیں سب سے زیادہ غریب ہیں۔ جن ملکوں میں کرپشن نہیں وہ سب سے زیادہ امیر ہیں۔ کانگو ہیرے اور جواہرات حامل ملک ہونے کے باجود رپشن کی وجہ سے غریب ہے۔وزیراعلیٰ پنجاب نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کرپشن کے خلاف ایپ کی لانچنگ ہماری بہت بڑی کامیابی ہے ، تحریک انصاف احتساب اور انصاف کا ایجنڈا لے کر حکومت میں آئی ہے اور یہ ہمارے ایمان کا حصہ ہے کیونکہ کوئی بھی معاشرہ بدعنوانی کا خاتمہ کیے بغیر ترقی نہیں کرسکتا اور ہم اس ایجنڈے کومکمل کرکے دم لیں گے ۔انہوں نے کہاکہ پنجاب اینٹی کرپشن محکمے نے ایک قلیل عرصے میں 130ارب روپے کی ریکوری کی ہے اور پونے پانچ ارب روپے سرکاری خزانے میں جمع کرائے ہیں ، دو ہزار افراد کو مختلف کیسز میں گرفتار کیا گیا اور 32ہزار شکایات کا ازالہ کیا گیا ، دس ہزار انکوائریاں مکمل کی گئیں ، یہ قلیل عرصے میں ادارے کی شاندار کارکردگی ہے ۔وزیراعلیٰ پنجاب نے کہا کہ کرپشن کے خاتمے میں عوام کو بھی اپنا کردار ادا کرنا ہو گا اور جہاں کہیں بھی انہیں کرپشن نظر آئے اپنی شکایات محکمہ اینٹی کرپشن کو درج کرائیں ہم بھرپور طریقے سے کرپشن کیخلاف جہاد کرینگے کیونکہ کرپشن کے خاتمے کے بغیر کوئی معاشرہ ترقی نہیں کرسکتا۔