04:58 pm
ترجمان بلوچستان حکومت نے رکن قومی اسمبلی محمد اسلم بھوتانی کی جانب سے مناظرے کا چیلنج قبول کرلیا

ترجمان بلوچستان حکومت نے رکن قومی اسمبلی محمد اسلم بھوتانی کی جانب سے مناظرے کا چیلنج قبول کرلیا

04:58 pm

کوئٹہ(آن لائن )ترجمان بلوچستان صوبائی حکومت لیاقت شاہوانی نے رکن قومی اسمبلی محمد اسلم بھوتانی کی جانب سے مناظرے کا چیلنج قبول کرتے ہوئے کہا ہے کہ وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال خان ایک اعلی مہذب وضع دار شخصیت کے حامل فرد ہیں جو دکھاوے پر نہیں عمل پر یقین رکھتے ہیں کسی بھی حاسد اور فاتر العقل فرد کی ذاتی خواہش پر مناظرہ جام کمال خان کی شخصیت کے شایان شان نہیں بھوتانی صاحب سے مناظرے کے لیے میں تو کیا بلوچستان کا ہر وہ عام شخص تیار ہے جو عقل و شعور کا بہتر ادراک رکھتا ہے اور جام کمال خان کے ویژن اور فیصلہ سازی کی قوت عمل سے واقف ہے ، بہتر طرز حکمرانی ،
خود احتسابی ، شفافیت، اور جوابدہی کے اسٹینڈرڈ پیرا میٹرز کے مطابق موجودہ صوبائی حکومت کی کارکردگی کا موازنہ ان سابق حکومتوں سے کرنے کے لیے تیار ہیں جن میں معزز رکن قومی اسمبلی اسلم بھوتانی کلیدی زمہ داریوں پر فائز رہے موجودہ صوبائی حکومت کے دور میں احساس ذمہ داری کے ساتھ ترقیاتی فنڈز کے لیے وسائل کا اجرا جس تیز رفتاری سے ہوا اس کی مثال نہیں ملتی وزیر اعلی صوبے کے سربراہ ہونے کی حیثیت سے عوامی وسائل کے امین ہیں ملکی اور بین الاقوامی فورمز کے غیر جانبدارانہ سروئے اور حالیہ رپورٹس ریکارڈ پر موجود ہیں جن کے اعداد و شمار سے ثابت ہوتا ہے کہ بلوچستان حکومت کی کارکردگی دیگر صوبوں سے کہیں نمایاں رہی تنقید برائے تنقید کے قائل نہیں تاہم حقائق پر مبنی معلومات سے عوام کو آگاہی دینا ضروری سمجھتے ہیں یہ بات ترجمان صوبائی حکومت لیاقت شاہوانی نے رکن قومی اسمبلی محمد اسلم بھوتانی کے تنقیدی بیان کے ردعمل میں کہی انہوں نے مذکورہ بیان پر حیرت کا اظہار کرتے ہوئے ہے کہ موجودہ صوبائی حکومت ماضی کی ان مخلوط حکومتوں کے مقابلے میں نمایاں کارکردگی کی حامل ہیں جو اتحادیوں کے ہر جائز ناجائز مطالبات پر سر تسلیم خم کرکے احتسابی اداروں کی زد میں آتی رہی ہیں الحمداللہ موجودہ صوبائی حکومت کا نظام خود احتسابی اسقدر مستحکم ہے کہ اب تک حکومتی دامن پر مالی کرپشن کا کوئی داغ نہیں لگا سی ایم آئی ٹی انٹی کرپشن ڈویژن ماضی کے مقابلے میں غیر معمولی کردار ادا کرتے ہوئے موثر احتسابی کردار ادا کررہے ہیں قانون ساز اسمبلی نے برٹش دور کے قوانین میں ترامیم کرکے دور حاضر کی ضروریات کے مطابق ڈھالا کابینہ نے اتفاق رائے سے عوامی بہبود کے لیے جو تاریخ ساز فیصلے کئے اس پر کسی بھی موازنے یا مناظرے کی ضرورت نہیں بلکہ تمام تر تعصبات سے بالا تر ہوکر حقیقت کی عینک سے دیکھنے کی ضرورت ہے ترجمان صوبائی حکومت لیاقت شاہوانی نے کہا کہ وزیر اعلی بلوچستان جام کمال خان کی قیادت میں صوبائی حکومت بہترین انداز میں چل رہی ہے اور صوبے میں جامعہ منصوبہ بندی کے تحت ترقیاتی عمل جاری ہے صوبے کی پی ایس ڈی پی کو انتہائی صاف شفاف طریقے سے یکساں بنیادوں پر تیار کیا گیا ہے جس کے ثمرات عوام کے سامنے آنا شروع ہوگئے ہیں بلا شبہ جام کمال خان کی ذہانت،فراست اور بحیثیت چیف ایگزیکٹو کے گڈ گورننس سے صوبے میں نہ صرف انتظامی امور بہتر ہوئے ہیں بلکہ کرپشن کی شرح میں بھی نمایاں کمی آئی ہے عوام بہترین اور مثالی کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے سر براہ حکومت جام کمال خان پر تنقید کرنے والے لوگوں سے ان کی اپنی کارکردگی کا پوچھنے کا حق بھی محفوظ رکھتے ہیں جنہوں نے خود ماضی میں صوبے کے لیے کچھ نہیں کیا نتیجتا اب ان کی سیاست اپنے ہی حلقے انتخاب میں دم توڑ رہی ہے ان کے پاس اب تنقید کے لیے کچھ نہیں رہا انہوں نے کہا کہ جام کمال خان ایک ویژنری شخصیت انتہائی مہذب اور صوبے کی روایات کے پاسدار ہیں جو ہروقت صوبے کے عوام کے ساتھ رابطے میں رہتے ہیں اور ان کے مسائل کے حل کے لیے کوشاں رہتے ہیں وزیراعلی پر بے جا تنقید محدود سوچ کی عکاس ہے انہوں نے کہا کہ سیاسی معاملات میں اختلاف رائے رکھنا کوئی بری بات نہیں لیکن ذاتی طور پر تعصب کی عینک لگا کر کسی کی ذات پر کیچڑ اچھالنا کسی بھی طور پر درست نہیں اس کی نہ تو مذہب اجازت دیتا ہے اور نہ ہی اخلاقیات اور ہماری روایات، ترجمان نے اس امر کی بھی وضاحت کی کہ موجودہ حکومت نے کرپشن کی روک تھام کے لیے ایسے اقدامات کیے ہیں جس سے کرپشن کے دروازے بند ہوگئے ہیں ترقیاتی منصوبوں کے ٹھیکے انتہائی صاف و شفاف اور میرٹ پر دیتے جارہے ہیں پی ایس ڈی پی کو کرپشن سے پاک کرکے BPPRA رول کے تحت ٹھیکداروں کو الاٹ کیے جارہے ہیں وزیراعلی پر تنقید صرف اس وجہ سے کی جا رہی ہے کہ انہوں نے کرپشن مافیاکے راستے بند کر دیئے ہیں اب شفافیت کے اس عمل سے کس کو تکلیف اور کس کو خوشی ہورہی ہے یہ بھی روز روشن کی طرح عیاں ہورہا ہے انہوں نے کہا کہ وزیراعلی بلوچستان کی کارکردگی کے نہ صرف بلوچستان کے عوام بلکہ پورے پاکستان کے عوام متعرف ہیں پاکستان کے سب سے خودمختیار اور معیاری اداریپلڈاٹ کے مطابق ملک کے چاروں صوبوں میں بلوچستان کے وزیراعلی جام کمال خان کی کارکردگی سب سے بہتر رہی ہے اور وہ دوسرے صوبوں کے وزیراعلی کی نسبت بہترین ذہانت،فراست کے مالک ہیں۔وزیراعلی بلوچستان جام کمال خان کی کاوشوں سے صوبے بھر میں 20 ہزار سے زائد ملازمتوں کے مواقع فراہم کرنے کا عمل بتدریج جاری ہے جس سے بیروزگاری میں خاطر خواہ کمی آئی ہے انہوں نے کہا کہ وزیر اعلی بلوچستان کی قیادت میں صوبے میں گڈ گورننس قائم ہے میرٹ اور سینیارٹی کو اولیت حاصل ہے صوبے میں بلاتفریق میگا پروجیکٹس پر کام ہورہاہے جبکہ چھوٹے ترقیاتی منصوبے پر تیزی سے کام تکمیل پا رہے ہیں انہوں نے کہا کہ لسبیلہ کو ماڈل سٹی بنایا جارہا ہے جبکہ پانچ پانچ ہزار ایکڑ پر مشتمل دو اسپیشل اکنامک زون بھی قائم کیے گئے ہیں جبکہ اس کے علاوہ لسبیلہ سمیت صوبے کے پسماندہ علاقوں میں سڑکوں کا جال بچھایا گیا ہے بجلی صحت عامہ تعلیم اور آبپاشی کی سہولت فراہم کی جارہی ہیں۔ تاہم یہ تمام منصوبے تعصب کی دھندلی عینک سے نہیں نیک نیتی اور غیر جانبداری کے خلوص سے نظر آئیں گے ۔

تازہ ترین خبریں