01:23 pm
پولیس کا 24 گھنٹوں میں حسان نیازی کے گھر پر دوسری بار چھاپہ

پولیس کا 24 گھنٹوں میں حسان نیازی کے گھر پر دوسری بار چھاپہ

01:23 pm

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) گذشتہ روز پنجاب انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی میں ہنگامہ آرائی کرنے والے وکلاء میں شامل وزیراعظم عمران خان کے بھانجے حسان نیازی پولیس چھاپے سے قبل گھر سے فرار ہو گئے تھے۔تاہم آج پولیس نے وزیراعظم عمران خان کے بھانجے بیرسٹر حسان نیازی کے گھر پر دوسری بار چھاپہ مارا ہے۔پولیس دوسرے چھاپے میں بھی حسان نیازی کو گرفتار نہ کر سکی۔پولیس نے حسان نیازی کی گرفتاری کے لیے
چھاپہ رائیونڈ کی نجی سوسائٹی پر مارا۔انوسٹی گیشن پولیس کا حسان نیازی کے گھر پر 24 گھنٹوں میں یہ دوسرا چھاپہ ہے۔چھاپے کے دوران خواتین پولیس اہلکار بھی موجود تھیں۔گذشتہ روز بھی پولیس نے حسان نیازی کی گرفتاری کے لیے ان کے گھر چھاپہ مارا۔تاہم حسان نیازی گھر پر چھاپہ پڑنے سے قبل ہی فرار ہو گئے تھے۔یہ بھی بتایا گیا ہے کہ لاہور پولیس نے وزیراعظم کے بھانجے حسان نیازی کی گرفتاری کیلئے جدید ٹیکنالوجی کی مدد سے کارروائی شروع کردی ہے۔حسان نیازی مقدموں میں نامزد ملزم نہیں ہیں۔پولیس نے پی آئی سی میں توڑ پھوڑ اورساتھی وکلاء کو اشتعال دلانے کی ویڈیو سامنے آنے پر پولیس نے وزیر اعظم کے بھانجے حسان نیازی کی گرفتاری کے لئے ان کی رہائشگاہ پر چھاپہ مارا تھا۔گذشتہ روز ڈی آئی جی انویسٹی گیشن کا کہنا تھا کہ حسان نیازی کو جلد گرفتار کر لیا جائے گا، گرفتاریوں کے حوالے سے ہم پر کوئی دبا ئونہیں، جس نے بھی قانون شکنی کی اسے گرفتار کیا جائے گا۔جب کہ دوسری جانب پیپلز پارٹی نے وزیراعظم کے عمران خان کے بھانجے حسان نیازی کی گرفتاری کا مطالبہ کرتے ہوئے کہاکہ پی آئی سی حملے کے مرکزی ملزم حسان نیازی کو فوری گرفتار کیا جائے ،پی آئی سی پر حملے کا بڑا کردار وزیراعظم عمران خان کا بھانجا ہے۔

تازہ ترین خبریں