11:22 am
 سانحہ اے پی ایس پشاور اور سقوط ڈھاکا ہمارےلیے سبق ہیں،چیف جسٹس پاکستان

سانحہ اے پی ایس پشاور اور سقوط ڈھاکا ہمارےلیے سبق ہیں،چیف جسٹس پاکستان

11:22 am

اسلام آباد(نیوز ڈیسک )چیف جسٹس آف پاکستان نے کہا ہے کہ سانحہ اے پی ایس پشاور اور سقوط ڈھاکا ہمارےلیے سبق ہیں،قیام امن اور شہریوں کے تحفظ میں پولیس کا کردار کلیدی ہے،شہریوں کے بنیادی حقوق کا تحفظ ریاست کی ذمہ داری ہے۔نیشنل پولیس اکیڈمی اسلام آبادمیں چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ کے اعزازمیں ظہرانہ دیا گیا ،
نامزد چیف جسٹس گلزاراحمد نے بھی تقریب میں شرکت کی۔نامزد چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس گلزاراحمد نے اپنے مختصر خطاب میں چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ کے اقدامات کو جاری رکھنے کے عزم کا اظہار کیا۔چیف جسٹس آصف سعیدکھوسہ نے پولیس اکیڈمی اسلام آبادمیں تقریب سےخطاب کرتے ہوئے کہا کہ سقوط ڈھاکہ اوراے پی ایس واقعے پر تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ آج کا دن 2 حادثات کو یاددلاتاہے ،دونوں واقعات سبق آموز ہیں ،اگر اس سوشل کانٹریکٹ کو زندہ رکھا گیا ہوتا تو بنگلہ دیش جیسا سانحہ رونما نہ ہوتا،یہ وہ سبق ہے جو ہمیں نہیں بھولنا چاہیئے،ریاست شہریوں کے حقوق کو نظر انداز کرے تو لوگ سوشل کنٹریکٹ چھوڑدیتے ہیں، بنگال کے لوگ ہم سے زیادہ محب وطن تھے ،بدقسمتی سے ریاست نے اپنے شہریوں کا خیال نہیں رکھا۔چیف جسٹس نے آرمی پبلک اسکول سانحے پر کہاکہ واقعہ نے پوری قوم کو ہلا کر رکھ دیا ، اس واقعہ نے ہمیں اپنی سوچ پر نظرثانی پر راغب کیا،پوری قوم نیشنل ایکشن پلان پرمتفق ہوئی جس میں ایک اہم جزو کریمینل جسٹس سسٹم بھی ہے تاہم بدقسمتی سے محکمہ پولیس کی بہتری کے لیے حکومتی سطح پرکوئی کام نہیں کیا گیا۔