04:23 pm
پاکستانی سیاست میں تبدیلی لانے کافیصلہ ہوگیا زرداری نے کراچی پہنچتے ہی پہلافون کسے گھمادیا،جانیں

پاکستانی سیاست میں تبدیلی لانے کافیصلہ ہوگیا زرداری نے کراچی پہنچتے ہی پہلافون کسے گھمادیا،جانیں

04:23 pm

لاہور (نیوز ڈیسک ) سربراہ جے یوآئی ف مولانا فضل الرحمان اور سابق صدرآصف زرداری کے درمیان ٹیلیفونک رابطہ ہوا ہے، جس میں ملک کی موجودہ سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق سربراہ مولانا فضل الرحمان اور شریک چیئرمین پیپلزپارٹی آصف زرداری کے فون پر رابطہ ہوا،
مولانا فضل الرحمان نے سابق صدر آصف زرداری کی طبیعت بارے دریافت کیا۔دونوں رہنماؤں نے ملک کی سیاسی صورتحال پر بھی بات چیت کی۔ بتایا گیا ہے کہ مولانا فضل الرحمان اورآصف زرداری کے درمیان جلد ملاقات کا امکان ہے۔واضح رہے اپوزیشن جماعتوں نے حکومت کے خلاف آئندہ کی حکمت عملی بنانے اور پلان سی کی کامیابی کیلئے غور شروع کردیا ہے۔تاہم اپوزیشن کے حتمی فیصلوں کا اعلان رہبرکمیٹی کے پلیٹ فورم سے کیا جائے گا۔اس سے قبل مسلم لیگ ن کے سینئر رہنماؤں نے لندن میں ملاقات کی،جس میں وزیراعظم کے خلاف تحریک عدم لانے اور آئندہ عام انتخابات کے حوالے سے لائحہ عمل بنایا گیا۔ سیکرٹری جنرل ن لیگ احسن اقبال کا اپنے ایک بیان میں کہنا ہے کہ نئے انتخابات کے مطالبے کی دوصورتیں ہیں کہ عمران خان نئے انتخابات کیلئے اسمبلی تحلیل کریں،اور انتخابات کی راہ ہموار کریں ۔لیکن اگر عمران خان اس کے راستے میں رکاوٹ ہوں گے تو 2، 3ماہ کیلئے نیا وزیراعظم لایا جائے جو اقتصادی اور انتخابی اصلاحات کرسکے۔اس کے بعد ہم نئے انتخابات کی طرف چلے جائیں۔احسن اقبال نے کہا کہ جو بھی وزیراعظم آئے گا وہ دوتین مہینے کیلئے عبوری وزیراعظم ہوگا،اس میں کوئی بھی سیاسی جماعت اپنا مستقل وزیراعظم دینے کی حامی نہیں ہوگی۔اس لیے دوتین ماہ کیلئے مفاہمت کے ساتھ قومی حکومت بنے اور اتفاق رائے سے قانون سازی کی جائے۔احسن اقبال نے کہا کہ حکومت کے اتحادیوں کا جائزہ لیں تو وہ بہت پریشان ہیں کہ ان سے جو وعدے کیے گئے،وہ پورے نہیں کیے گئے، اسی طرح ملک کی سیاسی اور اقتصادی صورتحال میں بڑی بے چینی ہے۔