09:05 am
ایران کے نائب وزیر صحت میں بھی وائرس کا شکار ہوگئے

ایران کے نائب وزیر صحت میں بھی وائرس کا شکار ہوگئے

09:05 am

تہران (مانیٹرنگ ڈیسک) ایران کے نائب وزیر صحت ایرج حریرچی بھی کرونا وائرس کا شکار ہو گئے۔تفصیلات کے مطابق ایرانی میڈیا کا کہنا ہے کہ ایران کے وزیر صحت ایرج حریرچی میں بھی کرونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے۔ایرج حریرچی حکومت کی طرف سے کرونا وائرس پر جواب دینے کے لیے پیش پیش ہوتے تاہم اب وہ خود کرونا وائرس کا شکار ہو چکے ہیں۔ایرانی نائب وزیر صحت کا ایک ویڈیو پیغام میں کہنا ہے کہ ہم کرونا وائرس کو شکست دیں گے۔
یاد رہے کہ ایران میں مہلک کورونا وائرس سے اب تک 12 افراد موت کا شکار ہوچکے ہیں جبکہ درجنوں اس سے متاثر ہیں، جس کے باعث پاکستان کے ساتھ ساتھ ترکی اور ارمینیا نے بھی ایران سے سرحد بند کردی تھی جبکہ افغانستان نے فضائی و زمینی طور سفری پابندی لگادی تھی۔اس وائرس کے خطرے کے پیش نظر ایران کے 14 صوبوں میں اسکولز، جامعات اور ثقافتی مراکز بھی بند کردیے گئے ہیں۔جبکہ دوسری جانب بلوچستان کے وزیر داخلہ ضیا اللہ لانگو نے ڈان نیوز سے بات کرتے ہوئے ایران کے ساتھ منسلک سرحد کو بند کرنے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا تھا کہ سرحد کو ایران میں کورونا وائرس سے ہونے والی ہلاکتوں کے پیش نظر عارضی طور پر بند کیا گیا۔اس کے علاوہ بلوچستان کی حکومت نے پاکستان سے ایران جانے والے زائرین کے سفر پر بھی پابندی عائد کرنے کا اعلان کیا تھا اور صوبائی محکمہ داخلہ کو دیگر صوبوں سے اس حوالے سے رابطہ کرنے کی ہدایت کی گئی تھی۔اس کے ساتھ ساتھ صوبے کے وزیراعلیٰ جام کمال نے صوبائی محکمہ آفات کو ہنگامی صورتحال کے پیش نظر پاک ایران سرحد کو پار کرنے کے مقام تفتان پر 100 بستروں پر مشتمل ٹینٹ ہسپتال قائم کرنے کا حکم دیا تھا۔