12:34 pm
ماسک ذخیر ہ اور مہنگا فروخت کرنیوالے ہوجائیں خبردار! حکومت نے سخت کاروائی کا اعلان کردیا

ماسک ذخیر ہ اور مہنگا فروخت کرنیوالے ہوجائیں خبردار! حکومت نے سخت کاروائی کا اعلان کردیا

12:34 pm

کراچی(نیوز ڈیسک) پاکستان میں کورونا وائرس کے پہلے 2 کیسز کی تصدیق کے بعد سندھ حکومت نے کورونا وائرس کو کنٹرول کرنے کے لیے ٹاسک فورس قائم کردی۔یہ فیصلہ وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی سربراہی میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے ہونے والے ہنگامی اجلاس میں کیا گیا۔ٹاسک فورس کی سربراہی وزیر اعلیٰ خود کریں گے جس میں چیف سیکریٹری، سیکریٹری صحت، کراچی کمشنر اور دیگر صحت حکام شامل ہوں گے
۔پاکستان میں سامنے آنے والے 2 کیسز میں ایک 22 سالہ شخص شامل ہے جو حال ہی میں ایران سے کراچی واپس آیا تھا جبکہ وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا کا کہنا تھا کہ دوسرا کیس وفاقی دارالحکومت میں ایک شخص میں سامنے آیا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ 'سندھ حکومت وائرس سے متعلق تمام آلات و ماسک منگوائے گی، ہم دکانداروں کو مناسب قیمت پر یہ دیں گے تاکہ مارکیٹ میں جعلی بحران پیدا نہ کیا جاسکے اور عوام اس صورتحال کا ناجائز فائدہ نہ اٹھاسکے'۔انہوں نے کہا کہ 'سندھ حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ ماسک ذخیرہ کرنے والوں کے خلاف کارروائی کریں گے اور ان کی دکانیں اور گودام سیل کریں گے'۔مراد علی شاہ نے کہا کہ 'جن لوگوں نے متاثرہ ممالک کا دورہ کیا انہیں ٹیسٹ کرنے کی ضرورت ہے اور اگر نتیجہ منفی آتا ہے تو ان کی نگرانی کی جانی چاہیے'۔وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ کراچی میں وائرس سے متاثر شہری کے ساتھ آنے والے تمام افراد کی شناخت کرلی گئی ہے۔وزیراعلیٰ ہاؤس میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے مراد علی شاہ نے بتایا کہ کورونا وائرس سے متاثرہ شہری 20 فروری کو ایران سے واپس آیا، یہ 28 لوگوں کا قافلہ تھا جن کی شناخت کرکے ان کے نمونے لے لیے گئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ تصدیق کے بعد مریض اور اہلخانہ کو قرنطینہ میں رکھ دیا گیا ہے، فیملی میں وائرس کی کوئی علامات نہیں لیکن پھر بھی انہیں قرنطینہ میں رکھا گیا ہے، ان کے بچے جن اسکولوں میں گئے ان سے بھی رابطہ کریں گے۔وزیراعلیٰ کا کہنا تھا تھا کہ فروری میں سندھ میں 1500 لوگ ایران سے آئے جن کی شناخت ہوگئی ہے، ان تمام لوگوں کا ڈیٹا لے لیا ہے، ان کے شناختی کارڈ نمبرز اور فون نمبرز بھی لے لیے ہیں۔مراد علی شاہ نے مزید کہا کہ نجی اسپتالوں نے ہماری مدد کی جس پر ان کے شکر گزار ہیں، ہم نے دو دن کے لیے اسکول بند کیے جس کا مقصد خوف پھیلانا نہیں، اس سلسلے میں میڈیا کی مدد کی بہت ضرورت ہے تاکہ خوف نہ پھیلے اور حکومتی اقدامات سے عوام کو آگاہ کیا جائے۔وزیراعلیٰ کا کہنا تھا کہ کمشنر آفس میں کنٹرول روم بنادیا ہے جب کہ وزیراعلیٰ ہاؤس میں روزانہ شام 7 بجے اس حوالے سے ایک میٹنگ ہوگی اور کور گروپ رپورٹ دے گا۔