11:15 am
پاکستان کو مکمل طور پر لاک ڈائون کرنے کا فیصلہ کرلیا گیا

پاکستان کو مکمل طور پر لاک ڈائون کرنے کا فیصلہ کرلیا گیا

11:15 am

اسلام آباد(ویب ڈیسک)معاون خصوصی برائے اطلاعات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کا مسئلہ ایک قومی چیلنج ہے، وزیراعلیٰ سندھ کے فیصلے پر وزیراعظم کو تحفظات ہیں،2 ہفتوں کیلئےاوورآل لاک ڈاؤ ن کی طرف جا رہے ہیں،مشترکہ لائحہ عمل بنانےکی ضرورت ہےجس کااطلاق تمام صوبوں پرہونا چاہیے۔
نجی ٹی ویکے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ صوبوں کیساتھ اجلاس میں فیصلہ ہواہے،ہم اوورآل لاک ڈاؤ ن کی طرف جارہےہیں،مشترکہ لائحہ عمل بنانےکی ضرورت ہےجسکااطلاق تمام صوبوں پرہونا چاہیے،آج این سی سی کی میٹنگ میں تمام وزرائےاعلیٰ وڈیولنک سے شریک ہوئے،حکومتی پریس بریفنگ کے دوران ہی سندھ حکومت نےلاک ڈاؤ ن کافیصلہ کرلیا،صورتحال کی نزاکت اس بات کا تقاضہ کرتی ہےاپنی اپنی سیاسی دکانوں کوبند کرلیں،مسئلےکوتمام سٹیک ہولڈرزاورحکومت کیساتھ ملکرہی حل کیاجاسکتاہے۔انہوں نے کہا کہ عوام کویہ سمجھانا پڑےگا کہ سماجی طوررابطےنہ کرنا اُن کے مفادمیں ہے،حکومت اورلیڈرشپ اپنی اپنی ذات سےعمل درآمد کاآغاز کریں گے،مشترکہ لائحہ عمل بنانےکی ضرورت ہےجس کااطلاق تمام صوبوں پرہونا چاہیے۔انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس کا مسئلہ ایک قومی چیلنج ہے، بیرون ملک سےپروازوں کی آمد کافیصلہ جلد کرلیاجائے گا۔ دوسری جانب پاکستان میں کورونا وائرس سے متاثرہ 55 نئے کیسز سامنے آئے ہیں، جس کیے بعد ملک بھر میں متاثرہ افراد کی تعداد 504 ہو گئی ہے۔ جبکہ تین افراد اب تک ہلاک اور 3 صحتیاب ہوکر اسپتال سے گھر جاچکے ہیں۔چاروں صوبوں سمیت آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان سے موصول مصدقہ اعداد و شمار کے مطابق ہزاروں افراد کے ٹیسٹ کیے گئے جن میں 504 افراد کے نتائج مثبت آگئے۔ جنہیں مختلف اسپتالوں میں آئیسولیشن وارڈز میں رکھا گیا ہے۔اس کے علاوہ سندھ میں 252، پنجاب میں 96، خیبرپختونخوا میں 23، بلوچستان میں 92، گلگت بلتستان میں 30، اسلام آباد میں 10، آزاد کشمیر میں ایک کیس رپورٹ ہوا ہے۔جمعہ کو گلگت بلتستان میں کورونا وائرس کے مزید 9 کیسز سامنے آگئے ہیں جس کے بعد قراقرم ریجن میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تصدیق شدہ تعداد بڑھ کر 30 ہوگئی۔