09:01 am
حکومت کی جانب سے کورونا وائرس کے خلاف احتیاطی تدابیراوراقدامات قابل ستائش ہیں،انجینئر مقصود انور پر و یز

حکومت کی جانب سے کورونا وائرس کے خلاف احتیاطی تدابیراوراقدامات قابل ستائش ہیں،انجینئر مقصود انور پر و یز

09:01 am


پشاور(: سر حد چیمبر ا ف کا مرس اینڈ انڈ سٹر ی کے صدر انجینئر مقصود انور پر و یز نے وفا قی و صو با ئی حکو مت کے جا نب اسپیشل ما لیا تی اور ٹیکس ریلیف پیکج کے تحت حا لیہ کور و نا و با ئ اور ملک بھر میں جا ری لا ک ڈو ان کے با عث چھو ٹے و در میا نے در جہ کا کار وبار، سما ل انڈ سٹریز اور چھو ٹے تا جر و ں ادر دکا ندار شدید متا ثر ہور ہے ہیں کو آئندہ ایک سا ل کیلئے تما م وفا قی و صو با ئی ٹیکسو ں سے چھو ٹ دینے، بلا سو د قر ضو ں کی فر اہمی کے علا وہ صنعتکاروں اورتاجروں کے پھنسے ہوئے ری فنڈز کی داائیگیوں میں تیزی لانے، بجلی اور گیس کے بلوں کی آخری تا ریخ میں کم از کم 2 ماہ تک توسیع اورکمر شل اداروں کے قرضے ری شیڈول کا مطا لبہ کیا ہے۔
 
سر حد چیمبر کے صدر انجینئر مقصود انور پر و یز گذشتہ روز ایک بیا ن میں کہا کہ حکومت کی جانب سے کورونا وائرس کے خلاف احتیاطی تدابیراوراقدامات قابل ستائش ہیں تا ہم صوبے میں چند مخصوص و محدود انڈسٹریز کو کھلے رکھنے کی اجازت دی ہوئی ہیں جبکہ الائیڈ انڈسٹریز کی بندش کی وجہ سے ان انڈسٹریز میں بھی پروڈکشن/ سپلائی و ترسیل کا عمل شدید متاثر ہو رہا ہے ا سکے علاوہ انڈسٹریز کو خام مال کی عد م تر سیل کے باعث انڈسٹریز کو کافی مشکلات کا سامناکر نا پڑ رہا ہے انھو ں نے حکو مت پر زور دیا ہے وہ ایک مر بو ط لا ئحہ عمل کے تحت ٹا سک فور س کے زریعے انڈسٹر یز میں مذکور ہ حکو متی SOP اوراحتیا طی تد ابیر کو نافذ کر و اتے ہو ئے صوبہ بھر میں تمام کار خا نو ں اور فیکٹر یوں کو مکمل کھلنے کے احکامات جاری کئے جائیں اور خام مال و دیگر انڈسٹریل سامان کی ترسیل / سپلائی چین سے بھی پابندی ختم کی جائیں تاکہ انڈسٹریز کو متاثر ہونے سے بچایا جاسکے تا کہ صو بے میں بے روزگای نہ پید ا ہو اور صنعتی تر قی کا عمل میں بھی تیز ی لا ئی جا سکے۔ سر حد چیمبر کے صدر انجینئر مقصود انور پر و یز گذشتہ روز ایک بیا ن میں کہا ہے کورونا وبا ء کے با عث گذ شتہ 15 دنو ں میں چھو ٹے دو کا ندا راور تا جر د کا نیں بند کر کے بیٹھے ہیں اور ان کے گھر وں کے چو لہے بجھ گئے ہیں ان حا لات میں حکو مت اور ضلعی ا نتظا میہ، ایجنسی قا نو ن اورآئین کے مطا بق د کا نیں کھو لنے کی ا جا زات دے تا کہ و ہ اپنے بچو ں کیلئے حلا ل رزق کما سکیں۔ انھو ں نے مطا لبہ کیا ہے کہ حا لیہ کور و نا کے و با ء کے پیش نظر باز اروں اور ما رکیٹو ں کی بند ش کے با عث متا ثر تا جر و ں اور چھو ٹے دوکا نداروں کیلئے فور ی ریلیف پیکج، وفا قی و صو با ئی ٹیکسوں میں فی ا لفور چھو ٹ، بلا سو د قر ضو ں کی فر اہمی اور ڈسٹر کٹ گور نمنٹ اور ا وقا ف کی جا ئید ادوں سمیت بڑے تجا ر تی مر اکز کے کر ایو ں میں کم از کم ایک سا ل تک معا ف کر نے کا مطا لبہ کیا ہے اور کہا ہے کہ چھو ٹے دو کا ندا روں کو صج 8بجے سے شام5 بجے تک دو کا نیں کھو لنے کی اجا زات دی جا ئے انہوں نے کہا کہ دکا ندار اور تا جر طبقہ پہلے ہی بہت ہی مشکلات کا شکار ہے اس پر کر رونا کی وبا ء نے ان کے رہے سہے کار وبار بھی بر ی طر ح سے متا ثرکر دئیے ہیں لہذا حکو مت انھیں بجلی و گیس کے بلو ں میں بھی خصو صی ر عا یت دے اوربلو ں کی ا قسا ط میں و صو ل کے سا تھ سا تھ بلو ں کی ا خر ی تا ریخ میں بھی کم از کم 2 ما ہ کی تو سیع کی جا ئے۔