03:13 pm
وفاقی دارالحکومت میں پولن الرجی میں   اضافہ ،ہسپتالوں میں مریضوں کارش

وفاقی دارالحکومت میں پولن الرجی میں اضافہ ،ہسپتالوں میں مریضوں کارش

03:13 pm


     اسلام آباد(نمائندہ خصوصی) وفاقی دارالحکومت اسلام آباد اورلاہورمیں پولن الرجی شروع ہوگئی،ہسپتالوں میں مریضوں کارش بڑھ گیاہے۔کروناوائرس سے ملتی جلتی علامات سے عوام پریشان ہیں۔ اس بارے وزارت صحت حکومت پاکستان کے گولڈمیڈلسٹ طبیب حکیم احمدحسین اتحادی نے عوام کو مشورہ دیاہے کہ گھروں اوردفاترکے دروازے اورکھڑکیاں بند رکھیںگھر سے باہر نکلتے وقت ناک اور منہ کو کپڑے یا ماسک سے ڈھانپ کر رکھیںنماز فجر سے صبح10بجے تک اور شام 4بجے سے 7بجے تک الرجی کے مریض باہرنکلنے سے اجتناب کریں اوران اوقات میںباہر سیریاورزش نہ کی جائے دوران سفرگاڑی کے شیشے
بند رکھیں اورباہر کی ہوااندر نہ آنے دیںائیرکنڈیشنرکاventبندرکھاجائے اورباہرکی ہواکواندر نہ آنے دیاجائے مریض صفائی یا گردوغبار والے کامثلاباغبانی،گھاس کاٹنااورجھاڑپونچھ سے مکمل پرہیزکرے،اپنے گھروں کو برومBroomسے ہرگز صاف مت کریںکمروں کے اندرصفائی گیلے کپڑے سے کی جائے تاکہ دھول نہ اڑے اورمریض صفائی ہونے کے آدھے گھنٹے بعدتک اس کمرے میں نہ آئے حکیم احمدحسین نے کہاکہ ابلتے پانی کی بھاپ لینا،نیم گرم نمکین پانی کے غرغرے کرنا اور ناک کو صاف پانی سے دھونے سے فائدہ ہوتاہے اورالرجی کا باعث بننے والے ذرات دھل جاتے ہیں ،ناک میں روغن زیتون،ویزلین یاسرسوں کا تیل لگایاجائے تاکہ سانس لیتے وقت پولن گرینز ناک کے نتھنوں کے ساتھ چپک جائیں اور سانس کی نالی میں مزیدآگے نہ جائیںروزانہ 14سے 20گلاس ہلکاگر م پانی پیجئے مریض اپنی نیندپوری کرے،ذہنی تفکرات،زچگی،دماغی وجسمانی تھکاوٹ اورکمزوری میں احتیاط کریں چاول،دال،دہی، کیلا ،گٹکا،پان مصالحہ،الکوہل اورتمباکونوشی ، مرچوں ،مصالحہ دارغذائوں،اچار،چائے اورکافی پینے سے اجتناب کیا جائے اور اپنے کمروںکے میٹرس روزانہ صاف کریںکمروں میں Air Purifierکااستعمال کیاجائے نیز پالتوپرندوں کوگھروں کے باہررکھیں کیونکہ ان کے پروں کے ساتھ پولن گرینزاندرکمروں میں داخل ہوسکتے ہیںہوامیں نمی کا تناسب 30سے 40فیصدتک رکھنے کے لئے Cool-mist Humidifier استعمال کرنا چاہئے ورنہ مریض کو تکلیف بڑھ سکتی ہے حکیم احمدحسین نے بتایاکہ تیزخوشبویابدبو،پنکھے کی تیزہوا،ایئرکنڈیشنرکی ٹھنڈی ہوا،دھواں خاص طورپرڈیزل یاسگریٹ کادھواں،یکدم گرم جگہ سے سردجگہ پرآجانااورٹھنڈے پانی سے منہ دھونے سے بچناچاہئے اورغسل ہمیشہ بلحاظ موسم تازہ یاہلکے نیم گرم پانی سے کریں پانی ٹھنڈانہ ہوجلدکی خشکی الرجی کوبڑھاتی ہے لہذاصابن کا انتخاب احتیاط سے کریں اورنہانے کے بعدجسم پرتولیہ زیادہ نہ رگڑیں نیزجلدپرلوشن یاآئل وغیرہ ضرور لگاتے رہیں باہرسے گھرواپسی پراندرداخل ہونے سے قبل واش روم میں اچھی طرح غسل کرلیں بالخصوص سرکے بال خوب دھولیں کیونکہ کھلی فضا سے پولن گرینزبالوں میں اٹک جاتے ہیںباہرسے آکرکپڑے تبدیل کرلیں اوراتارے گئے کپڑے الگ محفوظ کردیں اورانہیں دھودیاجائے اپنے کپڑوں کو کھلی فضاکی بجائے کمرے میں سکھائیں،سینے کے امراض میں مبتلا افراد کوپولن والے مقامات سے دور رکھاجائے وہ سبزہ زارپرنہ چلیں اگرشدیدعلامات رونماہوں توفوری ریلیف کے لئے انہیلر اورالرجی کے لئے اینٹی ہسٹامین ادویہ استعمال کی جائیں ایلوپیتھک میں Certrizine اورLoratadineکوبہترین ادویہ ہیںانہوں نے کہاکہ الرجی ٹیسٹ یا ویکسین دوران تکلیف یاالرجی کے موسم میں کرانابے فائدہ اورجان لیوابھی ثابت ہوسکتا ہے اس کوبحالت صحت موسم مرض کے آغازسے قبل مستندمعالج سے مکمل کرناچاہئے ،ہمیشہ ویکسین الرجک پارٹیکل کے لحاظ سے تیارکرواکراستعمال کی جائے پہلے سے سٹورویکسین ہرگزاستعمال نہ کریںحکیم احمدحسین آف خانیوال نے طب یونانی کی ادویہ میں خمیرہ تریاق نزلہ یاخمیرہ خشخاش/2 1سے1چمچ مشورہ دیانیزمریض لعوق سپستان 2چمچ ابلتے ہوئے پانی میں شامل کرکے چائے کی طرح چسکیاں لے لے کر پیئے انہوں نے کہاکہ ادرک اورلیموں کا رس سانس کی الرجی کے لئے بہترین قدرتی دواہے اورکریلا کی جڑکاپائوڈر10گرام،تلسی 10گرام اور شہد25 ملی لیٹر میں ملاکرصبح شام 1چائے کا چمچ استعمال کریںاس کے علاوہ ادرک کارس،میتھی اورشہد بہترین ادویہ ہیںعناب3دانے،تخم کتاں (السی)چھ گرام اورمیتھی دانہ چھ گرام ایک گلاس پانی میں جوش دے کر صبح شام پینامفیدہے انہوں نے کہاکہ سویابین ،سیب ،کالے چنے کی دال ،لیموں،سویٹ اورنج ،انجیر ،پائن ایپل ،اسٹابری، امرود کااستعمال زیادہ کیا جائے نیز اپنے قریبی معالج سے مشورہ ازحدضروری ہے۔اس موقع پر انہوں نے بتایاکہ کروناوئرس میں تیزبخارہوتاہے لہذاعام نزلہ زکام سے عوام نہ گھبرائیں بلکہ اپنی غذائوں میں کاجو،پستہ،بادام،منقیٰ اورکشمش ڈرائی فروٹس کااستعمال بڑھادیں تاکہ آپ کا جسم ہرمرض کامقابلہ کرنے کے لئے تیارہوجائے۔