04:42 pm
اسلام آباد کی مشہور ترین عمارت سعودی پاک ٹاور کو کرونا وائرس پھیلائو کے باعث سیل کر دیا گیا

اسلام آباد کی مشہور ترین عمارت سعودی پاک ٹاور کو کرونا وائرس پھیلائو کے باعث سیل کر دیا گیا

04:42 pm


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک ) اسلام آباد کی مشہور ترین عمارت سعودی پاک ٹاور کو کرونا وائرس پھیلاو کے باعث سیل کر دیا گیا، پاکستان اسپورٹس بورڈ، چٹھا بختاور، نیشنل پولیس فاؤنڈیشن، ای الیون 4 گلی نمبر 16، سیکٹر آئی 10 اور آئی 10 فور گلی نمبر 26 اور سب اسٹریٹ، سیکٹر جی نائن 4 کی گلی نمبر 111، سیکٹر جی سیون 2 کی گلی نمبر 54، پی ڈبلیو ڈی کالونی بلاک نمبر 6 اور سیکٹر جی 4 گلی نمبر 62 کے علاقوں کو سیل کر کے فوج،
رینجرز اور پولیس تعینات کر دی گئی۔ تفصیلات کے مطابق بتایا گیا ہے کہ وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کے 9 خطرناک ترین علاقوں کی نشاندہی کر کے انہیں سیل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ جن 9 خطرناک علاقوں کی نشاندہی ہوئی ہے، ان تمام علاقوں کو فوری سیل کرنے کا حکم دیا گیا ہے۔ ان علاقوں میں سعودی پاک ٹاور کی مشہور ترین عمارت بھی شامل ہے۔ جبکہ دیگر علاقوں میں پاکستان اسپورٹس بورڈ، چٹھا بختاور، نیشنل پولیس فاؤنڈیشن، ای الیون 4 گلی نمبر 16، سیکٹر آئی 10 اور آئی 10 فور گلی نمبر 26 اور سب اسٹریٹ، سیکٹر جی نائن 4 کی گلی نمبر 111، سیکٹر جی سیون 2 کی گلی نمبر 54، پی ڈبلیو ڈی کالونی بلاک نمبر 6 اور سیکٹر جی 4 گلی نمبر 62 شامل ہیں۔ خطرناک قرار دیے گئے علاقوں میں فوج، رینجرز اور پولیس تعینات کرنے کا حکم بھی دیا گیا ہے۔ اس حوالے سےضلعی انتظامیہ نے باقاعدہ نوٹیفیکیشن بھی جاری کیا، اور موقف اختیار کیا ہے کہ جب تک ان علاقوں میں کرونا وائرس کیسز ختم نہیں ہوتے، یہ علاقے مکمل طور پر سیل رہیں گے۔ ان تمام حالات میں اسلام آباد کچہری کی تمام عدالتیں 30 جون تک بدستور بند رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ جبکہ خصوصی عدالتیں بھی 30 جون تک مکمل بند رہیں گی۔ واضح رہے کہ اسلام آباد میں اب تک کرونا وائرس کے کیسز کی تعداد 3 ہزار 188 ہو چکی ہے جبکہ 34 افراد جاں بحق ہوئے ہیں۔ ملک بھر میں کرونا وائرس کیسز کی تعداد 80,463 اور اموات کی تعداد 1688 ہے۔