11:19 am
لوگ یادرکھیں گے کہ باپ نے سپریم کورٹ پراور بیٹی نے نیب پرحملہ کیا تھا، اینکرعمران خان نے کیا بیان دیدیا ؟ جانیں

لوگ یادرکھیں گے کہ باپ نے سپریم کورٹ پراور بیٹی نے نیب پرحملہ کیا تھا، اینکرعمران خان نے کیا بیان دیدیا ؟ جانیں

11:19 am


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک ) نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں اینکر کاشف عباسی نے سوال پوچھا کہ مریم نواز کی نیب پیشی پر سامنے آنے والا ہنگامہ اور وزیراعلیٰ عثمان بزدار کی نیب میں طلبی کے بعد ان دونوں سیاسی شخصیات کا مستقبل کیا ہونے والا ہے۔ اس سوال کے جواب میں اینکر عمران خان نے کہا کہ وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کو اگر مقتدر لوگ اور طاقتور حلقوں نے اگر بچا لیا 
تو وہ بچ جائیں گے، ورنہ ان کا بچنا مشکل ہے کیونکہ ان کے مزید کیسز بھی نکل کر سامنے آ رہے ہیں جن کے بعد ان کا بچنا بہت مشکل ہو گیا ہے۔ انہوں نے کہا مریم نواز ایسی کوئی بھی سیاسی سرگرمی اپنی مرضی سے نہیں کرتیں کیونکہ ان کو ایکٹو کیا جاتا ہے وہ خود بخود نہیں ہوتیں۔ ان کا کہنا تھا کہ نیب پیشی کے موقع پر جو بھی ہوا اس کو لوگ بھول جائیں گے اور یہ یاد رکھیں گے کہ ان کے والد نے سپریم کورٹ پر جب کہ بیٹی نے قومی احتساب بیورو پر حملہ کیا۔ جواب میں دوسرے مہمان صحافی سلیم بخاری نے کہا کہ اگر عثمان بزدار کو بچانے کے حوالے سے عمرا خان سوچ رہے ہیں کہ بااثر اور مقتدر لوگ ان کو بچائیں گے انہی لوگوں نے ان کو پھنسایا ہے اس لیے ان کا بچنا بہت مشکل ہے۔ سینئر صحافی و تجزیہ کار سلیم بخاری نے کہا کہ یہ سوچنا کہ حکومت وزیراعلیٰ کے خلاف کوئی ایکشن لے گی یہ کسی کی خام خیالی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مقتدر حلقے اور بااثر لوگ تو بہت پہلے سے عمران خان کو مشورہ دیتے آئے ہیں کہ عثمان بزدار کو ہٹا کر کوئی اچھا وزیراعلیٰ لگایا جائے۔ دوسری جانب مریم نواز سے متعلق بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مریم نے اپنی سیاسی ساکھ بنانے کے لیے یہ سب کچھ کیا اگر کوئی یہ کہتا ہے کہ انہوں نے کسی ادارے پر حملہ کر دیا ہے تو پھر یاد رکھنا چاہیے کہ تحریک انصاف نے پاکستان ٹیلی ویژن، پارلیمنٹ ہاؤس اور وزیراعظم ہاؤس پر حملہ کیا تھا۔