04:24 pm
ملک میں 2008 سے2020 تک خواتین کی بینکنگ سروسز تک رسائی بڑھ کر29 فیصد ہو گئی: مطالعہ

ملک میں 2008 سے2020 تک خواتین کی بینکنگ سروسز تک رسائی بڑھ کر29 فیصد ہو گئی: مطالعہ

04:24 pm

اسلام آباد(پریس ریلیز)'فائنانشل انکلوژن جینڈر ڈیٹاان پاکستان- آج اور کل' کے عنوان سے گزشتہ روز ایک آن لائن ورکشاپ کا انعقاد ہوا۔یہ ورکشاپ ویمن فائنانشل انکلوژن ڈیٹا(WFID) کی پارٹنر شپ کے تحت کیا گیا جو ایک ایسا پلیٹ فارم ہے
جوصنف سے متعلق فائنانشل سروسز ڈیٹا کی اہمیت کے حوالے سے آگاہی بڑھانے اور خواتین کی مالی شمولیت میں اضافے کیلئے عملی اقدامات کرتا ہے۔ WFIDمیں الائنس فار فائنانشل انکلوژن(اے ایف آئی)، ڈیٹا2X، دی فائنانشل الائنس فار ویمن، دی انٹر امریکن ڈویلپمنٹ بینک، آئی ڈی بی انویسٹ، دی انٹر نیشنل فائنانس کارپوریشن،دی انٹر نیشنل مانیٹری فنڈ(آئی ایم ایف)، دی ورلڈ بینک گروپ، دی آرگنائزیشن فار اکنامک کوآپوریشن اینڈ ڈویلپمنٹ(او ای سی ڈی)اور دی یونائیٹڈ نیشنز کیپٹل ڈویلپمنٹ فنڈ(یو این سی ڈی ایف) شامل ہیں۔ پاکستان میں کارانداز نے اس گروپ کے ساتھ مل کر جینڈر ڈیٹا فار فائنانشل انکلوژن کے ایجنڈا کو آگے بڑھانے کیلئے اس ورکشاپ کا اہتمام کیا۔ ورکشاپ کے دوران اے ایف آئی کی جنیوا کی کنسلٹنگ فرم کنزیومر سنٹرکس کی جانب سے حال ہی میں کیے جانے والے مطالعے کی تفصیلات پیش کی گئیں۔ کارانداز نے اس مشاہدے کیلئے ڈیٹا اکٹھا کرنے اور مختلف اسٹیک ہولڈرز کے انٹرویو کرنے کیلئے سہولت کاری کے فرائض انجام دیے۔واضح رہے کہ مساوی پالیسی کی بینکنگ کے حوالے سے اے ایف آئی کا سٹیٹ بینک آف پاکستان کے ساتھ باہمی اشتراک قائم ہے۔ ورکشاپ میں ڈپٹی گورنر(فائنانشل انکلوژن، ڈیجیٹل فائنانشل سروسز اینڈ آئی ٹی) سٹیٹ بینک آف پاکستان سیما کامل،کار انداز پاکستان کی چیئر پرسن ڈاکٹر شمشاد اختر اور فائنانشل الائنس فار ویمن کی سی ای او مس اینیز مرے نے شرکت کی۔ ان کے علاوہ کنزیومر سنٹرکس کی ایک پارٹنر مس اینا گنچرمین،فائنانشل الائنس فار ویمن کیلئے پیئر لرننگ، نالج پروڈکشن اینڈ ڈیٹا انیلٹکس پروگرامز کی نگران مس ریبیکا رف اور کارانداز پاکستان کی ڈائریکٹر نالج مینجمنٹ اینڈ کمیونیکیشنز مہر شاہ بھی ورکشاپ میں شریک تھیں۔ ورکشاپ میں خواتین کی رسائی کے حوالے سے سپلائی سائیڈ ڈیٹا کی اہمیت اور فائنانشل سروسز کے استعمال پر زور دیا گیا۔ ورکشاپ سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر شمشاد اختر کا کہنا تھا کہ خواتین کی رسمی فائنانشل سسٹم میں باقاعدہ شمولیت کا کیس صرف سماجی اور اخلاقی دلائل پر مبنی نہیں ہے۔ اس حقیقت کو بھی مد نظر رکھنا ہو گا کہ خواتین عام طور پر سروس فراہم کرنے والوں کو بہتر اور قابل عمل کاروباری تجاویز دیتی ہیں۔ بوسٹن کنسلٹنگ گروپ سٹڈی کے مطابق خواتین دنیا بھر کی صارفینی اخراجات کی مد میں مجموعی طور پر 20 ٹریلین ڈالر سے زائد کا حجم کنٹرول کرتی ہیں۔ اس سے وہ چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروباروں کو چلانے والی ایک نمایاں طاقت کے طور پر ابھر کر سامنے آ رہی ہیں۔ خواتین کے ملکیتی کاروبار وں میں قریباً1.7ٹریلین ڈالر کی گلوبل کریڈٹ ڈیمانڈ موجود ہے جس پر کام کیا جا سکتا ہے۔ خواتین ویسے بھی مردوں کے مقابلے میں زیادہ محتاط قرض خواہ ہوتی ہیں۔ فائنانشل الائنس فار ویمن کے اندازے کے مطابق 2019 میں اس کے ممبران کے پورٹفولیو میں مردوں کا نان پرفارمنگ لونز کا حجم خواتین کے مقابلے میں 50 فیصد زیادہ تھا۔ سیما کامل کا اپنے ریمارکس میں کہنا تھا کہ دسمبر2020 تک ملک میں منفرد بینک اکاؤنٹس کی مجموعی تعداد 82 ملین تھی جس میں 21 ملین خواتین کے تھے۔ اس سے ثابت ہوتا ہے کہ 33 فیصد بالغ خواتین اپنے اکاؤنٹس رکھتی ہیں۔ خواتین کی مالی شمولیت نیشنل فائنانشل انکلوژن سٹریٹجی کا کلیدی جزو رہا ہے جسے حال ہی میں مرتب کیے گئے بینکنگ آن ایکویلٹی پالیسی کے مطابق دوبارہ نافذ کیا گیا ہے۔ اس اسٹریٹجی میں صنفی فرق کو کم کرنے کیلئے فائنانشل اداروں کی پالیسیوں اور طریقہ کارمیں مزید بہتری متعارف کروائی گئی ہے۔ ان میں مالی اداروں میں صنفی تنوع اور با آسانی رسائی کو فروغ دینا، خواتین سے متعلقہ مصنوعات اور مخصوص آؤٹ ریچ کو متعارف کرنا، ہر جگہ پر کامیاب خواتین کا قیام اور صنف اور فائنانس سے متعلق پالیسی فورم کا قیام شامل ہیں۔ اس پالیسی کے دو اور اہم پہلو صنف کے حوالے سے الگ الگ ڈیٹا کا حصول اور مالی اداروں کیلئے اہداف کا تعین ہیں۔ مجھے خوشی ہے کہ آج پیش کیا جانے والا مطالعہ سٹیٹ بینک آف پاکستان کی بینکنگ آن ایکویلٹی پالیسی کے عین مطابق متفرق صنفی ڈیٹاکے حصول کو تقویت دے گا اور اسے مزید بہتر کرنے میں مددگار ثابت ہو گا۔ ورکشاپ سے خطاب کرتے ہوئے مس اینیز مرے کا کہنا تھا کہ پاکستان میں خواتین کی اکاؤنٹ کیلئے بینک تک رسائی 2008میں 4 فیصد تھی جو 2020میں بڑھ کر 18 فیصد ہو گئی ہے۔ یہ ایک خوش آئند امر ہے تاہم اس سے یہ امر بھی نمایاں ہوتا ہے کہ پاکستان میں ابھی بھی82فیصد خواتین کو روائتی بینک اکاؤنٹ تک رسائی میسر نہیں ہے۔ اس عرصہ کے دوران مالی سروسز تک رسائی میں صنفی فرق وسیع ہو گیا ہے۔ خواتین کی مالی شمولیت دنیا بھر میں گھرانوں کو غربت سے نکالنے کیلئے ایک قابل عمل اور کامیاب طریقہ کار تصور کیا جاتا ہے۔ بہتر پالیسی بنانے اور اس میں کمرشل شمولیت کی حوصلہ افزائی کیلئے ڈیٹا کا حصول اور اس کا تفصیلی مشاہدہ نہایت اہمیت کا حامل ہے۔ ہم امید کرتے ہیں کہ یہ مطالعہ اب تک کی کی جانے والی کاروائیوں پر روشنی ڈالے گا اور ایک ایسے مالی سروس سیکٹر کی قیام میں مدد گار ثابت ہو گا جہاں صنف سے قطع نظر ہر کوئی شامل ہو گا۔ واضح رہے کہ اس مطالعہ کے مطابق خواتین سے متعلقہ مارکیٹ جس پر مزید کام کرنے کی گنجائش ہے اس کا حجم اندازً 114 ارب روپے ہے۔ ورکشاپ کے شرکاء نے اکٹھا کیے گئے صنفی ڈیٹا میں موجود فرق، خواتین کی مالی شمولیت کے حوالے سے اس ڈیٹا کے استعمال اور ڈیٹا اکٹھا کرنے سے متعلق درپیش چیلنجز پر گفت و شنید کی اور تجاویز پیش کیں۔صنف کے حوالے سے الگ الگ ڈیٹا کے حصول کی خاطر مالی نظام میں شامل عناصر کے موثر طریقے سے مل کر کام کرنے اور پاکستان میں اس کے استعمال پر بھی غور و خوض کیا گیا۔

تازہ ترین خبریں

`` ون ڈے اور ٹی ٹونٹی رینکنگ میں بابراعظم کونسی پوزیشن پر آگئے ؟آئی سی سی نے تازہ ترین رینکنگ جاری کر دی

`` ون ڈے اور ٹی ٹونٹی رینکنگ میں بابراعظم کونسی پوزیشن پر آگئے ؟آئی سی سی نے تازہ ترین رینکنگ جاری کر دی

واٹس ایپ نے صارفین کی سہولت کیلئے ایک اور شاندار فیچر متعارف کروا دیا

واٹس ایپ نے صارفین کی سہولت کیلئے ایک اور شاندار فیچر متعارف کروا دیا

آئندہ چوبیس گھنٹوں کا موسم کیسا رہے گا؟ محکمہ موسمیات نے ٹھنڈی ٹھنڈی پیشنگوئی کر دی

آئندہ چوبیس گھنٹوں کا موسم کیسا رہے گا؟ محکمہ موسمیات نے ٹھنڈی ٹھنڈی پیشنگوئی کر دی

یوکرین پر حملہ کیا تو ایک بھی روسی فوجی واپس اپنے ملک نہیں جائیگا، بڑے ملک نے روس کو وارننگ دیدی

یوکرین پر حملہ کیا تو ایک بھی روسی فوجی واپس اپنے ملک نہیں جائیگا، بڑے ملک نے روس کو وارننگ دیدی

شہزا د اکبر کی جگہ کس کو تعینات کیا جائیگا؟ پانچ اہم نام سامنے آگئے

شہزا د اکبر کی جگہ کس کو تعینات کیا جائیگا؟ پانچ اہم نام سامنے آگئے

گھر میں بچے اکیلے ہیں،شاہد آفریدی نے بائیو سیکیور ببل سے باہر نکلنے کی درخواست کردی

گھر میں بچے اکیلے ہیں،شاہد آفریدی نے بائیو سیکیور ببل سے باہر نکلنے کی درخواست کردی

مزیدکتنا عرصہ قیمتیں نیچے نہ آنے کاامکان ہے ؟  وزیر خزانہ شوکت ترین نے پریشان کن خبر سنا دی

مزیدکتنا عرصہ قیمتیں نیچے نہ آنے کاامکان ہے ؟ وزیر خزانہ شوکت ترین نے پریشان کن خبر سنا دی

جب ہم ملتان یا لاہور تک پہنچیں گے تو عمران خان اپنے وزن سے گر جائے گا، پی ڈی ایم رہنما کا دعویٰ

جب ہم ملتان یا لاہور تک پہنچیں گے تو عمران خان اپنے وزن سے گر جائے گا، پی ڈی ایم رہنما کا دعویٰ

ٹویٹر پر شہری کا طنز، جمائمہ خان نے کھری کھری سناتے ہوئےپاکستان زندہ باد کا نعرہ لگا دیا

ٹویٹر پر شہری کا طنز، جمائمہ خان نے کھری کھری سناتے ہوئےپاکستان زندہ باد کا نعرہ لگا دیا

غریب کیلئے دو وقت کی روٹی کا حصول بھی مشکل ہو گیا، آٹے کی فی کلو قیمت میں ہوشربا اضافہ

غریب کیلئے دو وقت کی روٹی کا حصول بھی مشکل ہو گیا، آٹے کی فی کلو قیمت میں ہوشربا اضافہ

میٹرک اور انٹرمیڈیٹ کے امتحانات سے متعلق نئی پالیسی کا اعلان کر دیا گیا

میٹرک اور انٹرمیڈیٹ کے امتحانات سے متعلق نئی پالیسی کا اعلان کر دیا گیا

کرپشن میں اضافہ ، ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل کی رپورٹ آنے کے بعد وزیراعظم عمران خان  سےاستعفے کا مطالبہ

کرپشن میں اضافہ ، ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل کی رپورٹ آنے کے بعد وزیراعظم عمران خان سےاستعفے کا مطالبہ

کتنے حکومتی اراکین ن لیگ میں شامل ہونے کو تیار ہیں؟ دعوے نے ہلچل مچادی

کتنے حکومتی اراکین ن لیگ میں شامل ہونے کو تیار ہیں؟ دعوے نے ہلچل مچادی

موبائل سگنل اور سڑکیں بند۔۔وفاقی وزیر داخلہ نے بڑا اعلان کر دیا

موبائل سگنل اور سڑکیں بند۔۔وفاقی وزیر داخلہ نے بڑا اعلان کر دیا