"

کرونا وائرس کے مریض کا انتقال ہوا تو دیکھیں جنازے میں کیا ہوا

کوروناوائرس سے جاں بحق ہونیوالے پاکستانی کی نماز جنازہ ادا، مرحوم کے گھر تعزیت کیلئے جانے پر پابندی عائد، جنازے میں صرف کتنے افراد شریک ہوگئے،دل دہلادینے والی خبر آگئی اٹلی کے شہر مچراتہ میں پاکستانی شہری کورونا وائرس سے جاں بحق ، نماز جنازہ میں صرف چھ افراد نے شرکت کی۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان کے شہر گجرات سے تعلق رکھنے والا شہری اٹلی میں کورونا وائر س کا شکار ہو کر جاں بحق ہو گیا ہے۔ اٹلی میں کورونا وائرس سے ہلاک افراد کی نماز جنازہ میں لوگوں کو شرکت کی اجازت نہیں ہے۔بتا یا گیا ہے کہ ولایت خان کی عمر65 سال تھی۔ ولایت خان کے عزیز نے ویڈیو بیان میں کہا کہ ہم ان کی نماز جنازہ بھی ٹھیک سے ادا نہ کر پائے۔ میں اپنے کزن کے گھر افسوس کے لئے بھی نہیں جا سکتا، یہاں کا قانون مجھے اجازت نہیں دیتا ۔ انتظامیہ کا کہنا ہے کہ اگر کوئی بڑی شخصیت بھی اس خطرناک وائرس سے ہلاک ہوتی ہے تو بھی اس سے یہی سلوک ہو گا ۔ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ صرف چھ افراد ولایت خان کی نماز جنازہ میں شریک ہیں اور امام نما ز جنازہ کے بعد دعا بھی کرا رہے ہیں ۔جبکہ دیگر چھ افراد فاصلے پر کھڑے میت کیلئے دعا کرتے نظر آتے ہیں۔اٹلی میں کرونا وائرس سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد ہزاروں میں ہوگئی ہے۔ بتایا گیا ہے کہ تازہ ترین رپورٹس کے مطابق اٹلی اب کرونا وائرس سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والا ملک بن گیا ہے۔ اٹلی میں کرونا وائرس کے شکار مریضوں کی ہلاکت کی تعداد 3 ہزار 405 ہوگئی ہے۔جبکہ چین میں اب تک کل 3 ہزار 245 کرونا وائرس سے متاثرہ مریض ہلاک ہوئے ہیں۔ چین میں کرونا وائرس کے نئے کیسز کی تعداد میں بدتریج کمی آ رہی ہے، تاہم اٹلی میں صورتحال مزید خراب ہوتی چلی جا رہی ہے۔ اٹلی میں ایک ہی روز میں کرونا وائرس سے 475 افراد ہلاک ہوئے جو ایک ہی دن میں کسی بھی ملک میں سب سے زیادہ ہلاکتوں کا ریکارڈ ہے۔ اٹلی میں اب تک 41 ہزار سے زائد افراد کرونا وائرس سے متاثر ہو چکے ہیں۔ جبکہ چین اور اٹلی سمیت دنیا بھر میں کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد 2 لاکھ 6 ہزار 900 ہوگئی ہے۔