"

پاکستان میں ٹک ٹالک بناتے ہوئے ایک اور موت ، سیکیورٹی گارڈ جاں بحق

ٹک ٹاک کے شوق نے سیکیورٹی گارڈ کی جان لےلی تنقید اور تنازعات میں گھری چینی ایپلیکیشن ٹک ٹاک کے شوق کی وجہ سے پاکستان میں اب تک متعدد نوجوان اپنی جان کھو بھیٹے ہیں اور اب ایک اور حادثہ ، تمام تفصیل بتایں گے آ پ کو آج کی اس ویڈیو میں مگر۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ تفصیلات کے مطابق ٹک ٹاک ویڈیو بنانے کے جنون نے سیکیورٹی گارڈ کی زندگی کا خاتمہ کردیا ہے۔ پاکستان میں ٹک ٹاک کے شوقین افراد کی تعداد لاکھوں میں ہے جو اپنی ویڈیو بنا کر ٹک ٹاک پر اپ لوڈ کرتے ہیں، اس دوران ہزاروں نوجوان خطرناک انداز میں ویڈیو بنا کر ایپ پر ڈاؤن لوڈ کرتے ہیں جس کے باعث گزشتہ ایک سال کے دوران درجنوں نوجوان اپنی زندگی کی بازی ہار چکے ہیں۔ آج ایک اور واقعہ گلستان جوہر میں پیش آیا، جہاں سیکیورٹی گارڈ سر پر پستول رکھ کر ٹک ٹاک ویڈیوبنارہاتھا کہ اچانک گولی چل گئی، جس کے نتیجے میں وہ موقع پر ہی جاں بحق ہوگیا۔ سیکیورٹی گارڈ کی ٹک ٹاک بناتےہوئے ویڈیو سوشل میڈیا پر خوب وائرل ہو رہی ہیے ، ویڈیو میں سیکیورٹی گارڈ کو سر پر پستول رکھ کر ٹک ٹاک بناتےدیکھا جاسکتا ہے۔ ناظرین ناصرف سیکورٹی گارڈ بلکہ اس ملک کے فقیر وں پر بھی ٹک ٹاک ایپلیکشن جادوں سر چڑھ کر بول رہا ہے سیالکوٹ میں ٹک ٹاکر بھیک مانگتے ہوئے پکڑا گیا،جس سے غیرملکی کرنسی بھی برآمدہوئی پولیس کے مطابق سیالکوٹ کی تحصیل ڈسکہ کے علاقے جامکے چیمہ سے یاسر نامی نوجوان کو گرفتار کیا گیا جہاں وہ بھیس بدل کر لوگوں سے بھیک مانگ رہا تھا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ شک پڑنے پر بھکاری کا منہ دھلوایا گیا تو خوبصورت نوجوان سامنے آگیا۔ پولیس کے مطابق ملزم سے ابتدائی تفتیش کے بعد معلوم ہوا کہ ملزم ٹک ٹاکر بھی ہے جبکہ ملزم کے قبضے سے غیر ملکی کرنسی بھی برآمد کی گئی ہے۔ خیال رہے کہ لپ سنکنگ ایپ ٹک ٹاک پر نوجوان اپنے فالوورز بڑھانے کیلئے کچھ بھی کر گزرتے ہیں جبکہ گزشتہ دنوں پاکستان میں ہی ٹک ٹاک پر مشہور خاتون نے شوہر کے انتقال کی جھوٹی خبر شیئر کی تھی۔اس طرح کی متعدد شکایتوں کے پیش نظر پچھلے دنوں پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن پی ٹی اے نے ٹک ٹاک کو عارضی طور پر بند کر دیا تھا ،مگر عوامی رد عمل کے پیش اس کو دوبارہ بحال کر دیا گیا ہے