12:46 pm
نظریاتی لیگی سیاست 

نظریاتی لیگی سیاست 

12:46 pm

قارئین میں محترم سلینا کریم کی کتاب، سیکولر جناح کا زیادہ حصہ پڑھ چکا ہوں مگر کچھ ابواب کو ’’نظریاتی مگر پروگیسیو‘‘ مسلم لیگی کردار کے ’’فہم‘‘ کے لئے بار بار پڑھ  رہا ہوں کیا آپ آج   پھر ہم سفر بننا پسند کریں گے؟ صفحہ 104سے اگلے چند صفحات پر ’’دی تھرڈ آئیڈیالوجی‘‘ کے ذیل میں سلینا کریم نے قرارداد مقاصد کے حوالے سے وزیراعظم  نوابزادہ لیاقت علی خان اور ایک لیگی نذیر احمد خان کی تقریروں سے اقتباسات دئیے ہیں ملاحظہ کریں 1949ء میں ہونے والی اسمبلی میں تقاریر کا ریکارڈ بتاتا ہے کہ پاکستان کے حوالے سے مسلمان وژن یہ تھا کہ بقول قائداعظمؒ پاکستان تھیوکریسی (قدامت پسند سخت گیر علماء کی جابرانہ حکومت) نہ ہوگی بلکہ یہ نیا ملک ’’اسلامی جمہوریت‘‘ پر مبنی ہوگا۔ لیگی سمجھتے تھے کہ دنیا کی اکثر ریاستیں جو سیکولر (الحاد پر مبنی غیر دینی حکومت) جمہوریتیں ہیں وہ ’’مادیت‘‘ پر مبنی  (غیراسلامی) اقدار کی حامل ہیں جبکہ پاکستان کی تعمیر مادیت کی بجائے اخلاقی اقدار اور زندگی کے لئے اعلیٰ ترین اصولوں کو اپنایا جائے گا جو ’’مادیت‘‘ فراہم کرنے سے قاصر رہتی ہے۔ ہمارے کچھ لیگی دوستوں کا خیال ہے کہ پاکستان اپنے لئے نہ تو سرمایہ داری (کیپٹل ازم جیسے امریکہ و مغربی ممالک میں) اور نہ ہی کمیونزم (جیسے سوویت یونین آف رشیا اور مائو کا چین تھے) بلکہ ایک تیسرا عقیدہ نظریہ آئیڈیالوجی کو اپنائے گا جو پہلے سے موجود دونوں نظام ہائے ریاستوں کا متبادل ثابت ہوگا یعنی ’’اسلامک ڈیموکریسی‘‘ (جسے علامہ اقبالؒ اپنے خطبات میں ’’سیکولر اسلام‘‘ یعنی فرقہ وارانہ تقسیم و تفریق اور تعصبات سے بہت دور اور ’’روحانی جمہوریت‘‘ کہتے تھے، پر مبنی ہوگی۔ بقول اقبالؒ پاکستان اپنی اصلی روح (اسلام) پر  مبنی ایسی اسلامی ریاست ہوگا جو جدید اور معاصر دنیا کی ریاستوں کی پہچان ہے۔ اسمبلی میں ہونے والی تقاریر سے جو بات سامنے آتی ہے وہ یہ کہ تین گروپ تھے، ایک پاکستان (اسلامی) کے حامی دوسرے مخالف اور ایک تیسرا مسلمان گروہ تھا جو زندگی کے ’’لبرل‘‘ انداز فکر کے حامل تھے جیسے کہ سرسید احمد خان، علامہ اقبالؒ اور خود جناحؒ جبکہ عام طور پر مسلمانوں کی عمومی سوچ بنیاد پرست اور قدامت پسندانہ افکار پر کار بند ہے۔
پروفیسر جی ڈبلیو چوہدری اور پروفیسر لینونارڈ بینڈر نے اپنی کتابوں میں ثابت کیا ہے کہ پاکستان کے ابتدائی ایام میں ملحد سیکولر مسلمانوں کی تعداد تو بہت معمولی تھی مگر وہ تھے انتہائی بااثر اورطاقتور جبکہ ان  کا مطمع نظر مغربی طرز کی (الحاد پر مبنی) سیکولر جمہوریت پر مبنی پاکستان تھا۔ ان کا موقف تھا کہ قرار داد مقاصد کے سبب پاکستان ایسے اسلامی دستور کو اپنا رہا ہے جس میں ’’مولوی‘‘ حضرات ریاست پر کنٹرول حاصل کرلیں گے۔ ان مصنفین نے سیکولر جمہوریت پسندوں کے افکار تو لکھ دئیے مگر ان کے نام شائد اس لئے نہیں دئیے کہ وہ تعداد میں بہت معمولی تھے اور وہ اکثریت کا عتاب بھی دیکھنا نہیں چاہتے مگر یہ بدقسمتی ملاحظہ کریں کہ کچھ عرصہ بعد جس سیکولر شخص نے 1954ء میں قانون ساز اسمبلی توڑ ڈالی وہ یقینا سیکولر تھا اور وہ تھا گورنر جنرل غلام محمد ملک۔
میری دانست میں آخری عمر میں غلام محمد ملک ’’نجی‘‘ زندگی میں ’’پیر پرست‘‘ مسلمان تھے۔ موت سے ذرا پہلے بیماری کی حالت میں وہ ہندوستان میں جا کر اپنے ’’پیرخانے‘‘ میں حاضری دینے کے متمنی تھے  میری دانست میں موت قریب پا کر وہ مذہبی تو ہوگئے تھے مگر ان کا مذہبی ہونا پیر خانے جانے کی خواہش تک محدود تھا۔
چونکہ گورنر جنرل غلام محمد کا قیام پاکستان سے پہلے کا معاشی ماہر کے طور پر کردار بہت نمایاں تھا اور ایسا ہی معاشی اور سول سروس امور کے ماہر چوہدری محمد علی کا تھا جو بعدازاں  وزیراعظم بنے اور انہوں نے اپنی دینی مزاج کی مسلم لیگ کی رہنمائی کی تھی مگر وہ پہلے گورنر جنرل غلام محمد اور پھر صدر اسکندر مرزا کی ریشہ دوانیوں اور سازشوں کے سبب اقتدار سے محروم ہوئے اور ان کی جگہ محمد علی بوگرہ (بنگالی) کو وزیراعظم بنایا گیا تھا۔ اسی چوہدری محمد علی کے بیٹے  خالد انور بیرسٹر تھے جو نواز شریف حکومت میں وزیر قانون رہے۔
آئیے ذرا غلام محمد ملک کے بارے میں کچھ معاملات سلینا کریم کی کتاب کے صفحہ 108 سے ملاحظہ کریں۔ ملک غلام محمد (1956ء ۔1895ء ) نظریاتی طور پر متنازعہ شخصیت ہے۔ یہ پاکستان کے 1947ء سے 1951ء تک پہلے وزیر خزانہ تھے۔ اکثر اہل علم کا خیال ہے کہ بلاشبہ ملک غلام محمد بہت لائق وزیر خزانہ تھا۔ اس نے ہی پاکستان کے ابتدائی سالوں میں جب معاشی حالت بہت زیادہ کمزور تھی، وفاقی بجٹ بنایا تھا یہی وہ شہ دماغ تھا جس نے پہلی بین الاقوامی اسلامی معاشی کانفرنس کا انعقاد 1949ء میں کیا تھا، اصلاً تو اس کانفرنس کا تصور وزیراعظم لیاقت علی خان نے مسلمان ممالک کے دورے کرتے ہوئے اپنی تقاریر میں خود دیا تھا اور بطور وزیر خزانہ ملک غلام محمد  نے اس ’’تصور‘‘ کو انعقاد کانفرنس کے ذریعے ’’حقیقت‘‘ بنا دیا تھا۔ جبکہ بقول پروفیسر لینونارڈ بینڈر لیاقت  علی  خان اور غلام محمد قائداعظمؒ کے اس معاشی تصور پر عمل پیرا تھے جسے جناح بطور ’’امیدافزاء اسلامی معاشی نظام‘‘ کہتے تھے، اسی کانفرنس میں وزیر خزانہ ملک غلام محمد نے نیا اسلامی بلاک بنانے کی دعوت دی تھی جسے انہوں نے اسلامک پولیٹیکو اکنامیکل آئیڈیالوجی"Islamic-Economical Ideology"کا نام دیا تھا۔ غلام محمد کی اس کانفرنس میں تقریر ’’اسلام بطور نظریہ، عقیدہ‘‘ موضوع پر بہترین ترجمان تقریر تھی اور اس تقریر میں ملحد سیکولر ازم کا شائیہ تک موجود نہیں مگر افسوس کہ بطور گورنر جنرل ان کے اکثر اعمال و افعال ثابت کرتے ہیں کہ وہ مکمل طور پر ایک سیکولر شخص تھا۔ حیرت ہے کہ اس کے افکار جسٹس محمد منیر سے جاملتے ہیں۔
کتاب کے صفحہ 109 پر بحث ہے کہ قرارداد مقاصد کی روشنی میں1949ء میں ایک ’’بورڈ‘‘ اسلامی تعلیمات کے حوالے سے تشکیل دیا گیا تھا تاکہ ’’عالمانہ انداز‘‘ میں طے کیا جائے کہ ملک کا قانون اسلامی ہوگا اس بورڈ میں کی گئی سفارشات اس وقت بالکل غیر موثر ہوگئیں جب لیاقت علی خان کی شہادت کے بعد خواجہ ناظم الدین وزیراعظم بن گئے تھے۔
خواجہ ناظم الدین شروع میں مشرقی بنگال کے چیف منسٹر  تھے۔ قائداعظمؒ کی وفات کے بعد وہ  گورنر جنرل تھے،1951ء میں انہوں نے استعفیٰ دے کر وزیراعظم کا عہدہ قبول کرلیا جبکہ ان کی جگہ وزیر خزانہ ملک غلام محمد گورنر جنرل بن گئے خواجہ ناظم  الدین قدامت پسند علمائے کے زیادہ قریب تھے 1952ء میں انہوں نئے قانون کا مسودہ پیش کیا جس میں’’علماء‘‘ کو اختیار دیا گیا کہ وہ وزیراعظم کو کسی قانون کے کتاب و سنت  مخالف ہونے کی سفارش کریں گے مگر اسمبلی نے یہ مسودہ آئین مسترد کر دیا۔
کالم کے آخر میں میں بتانا چاہتا ہوں کہ علامہ محمد اسد علامہ اقبالؒ کے دوست، قرآن پاک اور کچھ کتب احادیث کے انگریزی میں مترجم ،قیام پاکستان کے بعد قائداعظمؒ اور وزیراعظم لیاقت علی  خان کے بہت قریب تھے۔ قائداعظمؒ نے بطور گورنر جنرل انہیں وزارت خارجہ میں ڈپٹی سیکرٹری مقرر کرکے آئین کو اسلامی تعلیمات کی روشنی میں رہنمائی فراہم کرنے کے لئے مقرر کیا تھا۔ قائداعظمؒ کی وفات کے بعد وزیراعظم لیاقت علی خان نے انہیں مشرق وسطیٰ کے مسلمان ممالک سے تعلقات قائم کرنے کا ہدف دے دیا۔ علامہ محمد اسد پہلے غیر ملکی ہیں جنہیں پہلا پاکستانی پاسپورٹ ملا اور  وہ سعودی عرب میں جا کر شہزادہ فیصل سے ملے جو ان کے عہد جوانی کے قریبی دوست تھے۔ جونہی لیاقت علی خان شہید ہوئے سازشی سیکولروں نے انہیں ملک چھوڑ جانے پر مجبور کر دیا۔

تازہ ترین خبریں

سونے کی قیمتوں میں اڑھائی ہزار روپے سے زائد کا اضافہ ، ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا

سونے کی قیمتوں میں اڑھائی ہزار روپے سے زائد کا اضافہ ، ملکی تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا

عمران خان 2021بھی مکمل نہیں کرے گا، مریم نواز کو امریکی وفد نے کیا یقین دہانی کرا دی؟

عمران خان 2021بھی مکمل نہیں کرے گا، مریم نواز کو امریکی وفد نے کیا یقین دہانی کرا دی؟

مشکل حالات میں پاکستانیوں کیلئے بڑی خوشخبری ، ایسی خبر آگئی کہ پوری قوم اللہ کا شکر بجا لائیگی

مشکل حالات میں پاکستانیوں کیلئے بڑی خوشخبری ، ایسی خبر آگئی کہ پوری قوم اللہ کا شکر بجا لائیگی

آئی ایم ایف سے قرضہ حاصل کرنے کیلئے پاکستان ترلے منتیں کرنے لگا مگر۔۔۔۔آئی ایم ایف نے بھی اپنا فیصلہ سنا دیا

آئی ایم ایف سے قرضہ حاصل کرنے کیلئے پاکستان ترلے منتیں کرنے لگا مگر۔۔۔۔آئی ایم ایف نے بھی اپنا فیصلہ سنا دیا

پاکستانیوں کیلئے خوشخبری ، سرکاری چھٹی کااعلان کر دیا گیا

پاکستانیوں کیلئے خوشخبری ، سرکاری چھٹی کااعلان کر دیا گیا

راولپنڈی میں ایک لڑکی لاپتہ ہوئی ، بعد میں وہ کس حالت میں کہاں سے برآمد ہوئی ؟ پاکستانی سناٹے میں آگئے

راولپنڈی میں ایک لڑکی لاپتہ ہوئی ، بعد میں وہ کس حالت میں کہاں سے برآمد ہوئی ؟ پاکستانی سناٹے میں آگئے

تمام پاکستانیوں کا انتظار ختم ، 12ربیع الاول کو کون سااہم ترین نوٹیفیکیشن جا ری ہونے جا رہا ہے ؟ بڑی بریکنگ نیوز

تمام پاکستانیوں کا انتظار ختم ، 12ربیع الاول کو کون سااہم ترین نوٹیفیکیشن جا ری ہونے جا رہا ہے ؟ بڑی بریکنگ نیوز

بجلی کے بل چاہیں تو قسطوں میں ادا کردیں ، حکومت نے غریب عوام کی سن لی ، بڑا ریلیف دیدیا

بجلی کے بل چاہیں تو قسطوں میں ادا کردیں ، حکومت نے غریب عوام کی سن لی ، بڑا ریلیف دیدیا

راولپنڈی میں سیکیورٹی گارڈ نے ایک خاتون کے کپڑے پھاڑے اور شرمناک کام کرتا رہا ، لڑکی پوری رات سڑک کے بیچ بیٹھی روتی رہی؟ ویڈیو لنک میں 

راولپنڈی میں سیکیورٹی گارڈ نے ایک خاتون کے کپڑے پھاڑے اور شرمناک کام کرتا رہا ، لڑکی پوری رات سڑک کے بیچ بیٹھی روتی رہی؟ ویڈیو لنک میں 

زرتاج گل کے شوہر کو دل کا دورہ ، انتہائی نازک حالت میں ہسپتال لایا گیا مگر ۔۔۔۔ افسوسناک خبر آگئی

زرتاج گل کے شوہر کو دل کا دورہ ، انتہائی نازک حالت میں ہسپتال لایا گیا مگر ۔۔۔۔ افسوسناک خبر آگئی

عمران خان کو نقصان پہنچانے کیلئے مجھے کس نے مہرے کی طرح استعمال کیا۔۔ جمائما خان نے بڑا انکشاف کر دیا، پوری پاکستانی قوم ہکا بکا

عمران خان کو نقصان پہنچانے کیلئے مجھے کس نے مہرے کی طرح استعمال کیا۔۔ جمائما خان نے بڑا انکشاف کر دیا، پوری پاکستانی قوم ہکا بکا

دو شہروں کا فاصلہ گھنٹوں کی جگہ منٹوں میں ،پاکستان میں4لین پر مشتمل نئی عالی شان اموٹر وے بنانے کی تیاریاں ، منظوری دیدی گئی

دو شہروں کا فاصلہ گھنٹوں کی جگہ منٹوں میں ،پاکستان میں4لین پر مشتمل نئی عالی شان اموٹر وے بنانے کی تیاریاں ، منظوری دیدی گئی

دنیا کلے آلودہ ترین شہروں میں پاکستان کا ایک شہر پہلے اور ایک چوتھے نمبر پر ، جانتے ہیں یہ دونوں شہرکون سے ہیں

دنیا کلے آلودہ ترین شہروں میں پاکستان کا ایک شہر پہلے اور ایک چوتھے نمبر پر ، جانتے ہیں یہ دونوں شہرکون سے ہیں

گھروں میں سوئی گیس استعمال کرنے پر پابندی ، پاکستانیوں کو آج کے بعد کیا چیز استعمال کرنی پڑے گی ؟حکومت کا ایک اور بڑا اقدام

گھروں میں سوئی گیس استعمال کرنے پر پابندی ، پاکستانیوں کو آج کے بعد کیا چیز استعمال کرنی پڑے گی ؟حکومت کا ایک اور بڑا اقدام