11:22 am
ہائے اللہ! یہ ماہرین تعلیم؟

ہائے اللہ! یہ ماہرین تعلیم؟

11:22 am

 علماء کرام نے ہی نہیں، بلکہ محب وطن صحافیوں اور ملک کے سنجیدہ فکر حلقوں نے بھی سوال اٹھایا ہے کہ ’’مسٹر پرویز ہود بھائی (بھائی میرا نہیں 
صرف علماء کرام نے ہی نہیں، بلکہ محب وطن صحافیوں اور ملک کے سنجیدہ فکر حلقوں نے بھی سوال اٹھایا ہے کہ ’’مسٹر پرویز ہود بھائی (بھائی میرا نہیں بلکہ اس کے نام کا حصہ ہے) ڈاکٹر عائشہ رزاق، اے ایچ نیئر جیسے لوگ اسلامی جمہوریہ پاکستان میں کہاں سے در آئے ہیں؟ اگر یہ حقیقی ماہرین تعلیم ہیں … تو پھر یہ آسمانی تعلیمات پر تبراء کیوں کرتے ہیں؟ کیا مسلمان بچوں کو ناظرہ قرآن پڑھانے کے ساتھ ساتھ … آیات مبارکہ کا ترجمہ اور رسول اللہﷺ کی حدیثیں پڑھانے ، قائداعظم یونیورسٹی میں برقعہ پہن کر تعلیم حاصل کرنے کے لئے آنے والی غیرت مند طالبات کو ابنارمل کہنے، ناظرہ قرآن اور سیرت نبویﷺ کو  نصاب تعلیم کا حصہ بنانے کے خلاف احتجاج کرنے والے ’’ماہرین تعلیم‘‘ کہلوائے جانے کے مستحق  ہیں؟
جو قرآن پاک جیسی پاکیزہ، عظیم آسمانی کتاب کی اہمیت سے سرے سے ہی ناواقف ہوں، جنہیں یہ تمیز نہ ہو کہ سیرت نبویﷺ بچوں کو پڑھانے اور اس پر عمل پیرا ہونے سے انسانی زندگیوں میں انقلاب پیدا ہوتا ہے، انہیں ماہرین تعلیم کی بجائے جاہل، گنوار، اجڈ بلکہ ابوجہل یعنی جاہلوں کے بھی باپ قرار دینا زیادہ مناسب ہوگا، معروف صحافی اور بہترین کالم نگار انصار عباسی کے مطابق، ایک ٹی وی شو میں پرویز ہود بھائی کہتے ہیں کہ ’’ان (بچوں) کو اسلامیات میں پہلے صرف ناظرہ قرآن پڑھایا جاتا تھا … اب ناظرہ کے ساتھ معنی بھی یاد رکھنا ہوں گے، حدیثیں بھی سیکھنی ہوں گی، دعائیں بھی سیکھنی ہوں گی، کیا کچھ سیکھنا ہوگا؟ دماغ کے اندر اتنی گنجائش ہوتی ہی نہیں اور اب ان کو عربی بھی سیکھنی پڑے گی ، اینکر کے سوال کرنے کہ اس میں  مسئلہ کیا ہے؟ ہود بھائی چیخ کر بولے بہت پرابلم ہے، بہت پرابلم ہے  کیونکہ آپ نے اس بچے  کا جو چھوٹا سا دماغ ہے اس کو صرف ایک سمت لگایا ہوا ہے، اس کے دماغ کو آپ حرکت نہیں د ے رہے، اس میں کوئی جنبش پیدا نہیں کررہے ، آ پ اس کو کہہ رہے ہیں کہ جو اچھی طرح سے رٹ  سکتے ہو رٹ لو، جو رٹو طوطا ہے اسے بڑے نمبر ملیں گے، باقی جو بے چارہ، اپنے دماغ سے سوچنا چاہتا ہے، وہ تو کہیں کا نہیں رہتا۔
اسی ٹی وی شو میں پرویز ہود بھائی اپنے منہ سے مزید ’’علم‘‘ کے موتی جھاڑتے ہیں کہ ’’میں نے 1973 سے (قائداعظم یونیورسٹی) میں پڑھانا شروع کیا، یعنی47 سال پہلے وہاں ایک لڑکی بھی بمشکل برقع میں نظر آتی تھی، اب تو حجاب برقع عام ہوگیا، ’’نارمل لڑکی‘‘ اب تو شازو نادر ہی آپ کو وہاں نظر آئے گی اور جب وہ کلاس میں بیٹھتی ہیں برقع میں، حجاب میں لپٹی ہوئی تو ان کی جو شمولیت ہے کلاس میں وہ بہت گھٹ جاتی ہے۔‘‘
میرا قارئین سے سوال ہے کہ مندرجہ بالا خیالات کسی اسلامی ملک کے ’’ماہر تعلیم‘‘ حتیٰ کہ کسی ’’نارمل‘‘ انسان کے بھی ہوسکتے ہیں؟ پرویز ہود نے جس قائداعظم یونیورسٹی میں پڑھانے کا ذکر کیا ہے کیا یہ وہی یونیورسٹی نہیں کہ لسانیت زدہ قوم پرست تنظیموں کے کارندوں نے جسے لسانی جنگ و جدل کا مرکز بنائے رکھا؟ جہاں ہر قسم کا نشہ اور اسلحہ کھلے عام استعمال ہوتا رہا، جو پرویز ہو د بھائی اپنی یونیورسٹی کی لسانی جماعتوں کے  طلباء کو نشہ کی لعنت  سے نہ روک سکے، لسانی جنگ و جدل میں شامل ہونے سے نہ روک سکے، انہیں یہ حق کس نے د یا ہے کہ وہ ٹی وی چینل پر اس قسم کی متنازعہ گفتگو کرکے کروڑوں مسلمانوں کے جذبات مجروح کریں؟ ڈ اکٹر عائشہ رزاق کہ جس نے ٹی وی شو میں ہرزہ سرائی کرتے ہوئے کہا کہ ’’ناظرہ قرآن اور سیرت نبویؐ کو کیوں نصاب تعلیم میں شامل کیا جارہا ہے، نیز اردو یا انگریزی کے نصاب میں اسلام سے متعلق مضامین کیوں شامل کئے جارہے ہیں، پھر انہوں نے مسلم لیگ ق کو رگڑا دیتے ہوئے کہا کہ وہ بھی COMPLICIT ہیں، یعنی ’’شریک جرم‘‘ ہیں، کیونکہ اس عورت کے نزدیک ناظرہ قرآن و سیرت نبویؐ کو نصاب تعلیم کا حصہ بنانا ، اردو اور انگریزی کے نصاب میں اسلام  سے متعلق مضامین شامل کرنا ’’جرم‘‘ ہے، (نعوذ باللہ) کمال تو اس کے بعد شفقت محمود کی وزارت تعلیم نے کیا کہ جس نے قرآن کریم کی تعلیم اور نصاب میں شامل دینی مواد کے خلاف ہرزہ سرائی کرنے والی عورت عائشہ رزاق کو وزارت تعلیم میں ٹیکنیکل ایڈوائزر کے طور پر تعینات کرکے یہ ثابت کرنے کی کوشش کی کہ صرف عائشہ رزاق اکیلی نہیں، بلکہ وزارت تعلیم کی پوری دال ہی اندر سے کالی ہے ، ’’دل‘‘ کے مرض  پر قابو پاکر تازہ تازہ دینی سرگرمیوں میں دوبارہ سے مصروف ہونے والے ممتاز شیخ الحدیث مولانا قاری حنیف جالندھری نے اپنے بیان میں یہ کہہ کر کہ مملکت خداداد میں سرعام ٹی وی چینلز پر ناظرہ قرآن کریم اور دیگر اسلامی تعلیمات کو ہدف تنقید بنانے والی خاتون عائشہ رزاق کی وزارت تعلیم میں مداخلت نسل نو کے ایمان اور مستقبل سے کھلواڑ کے مترادف ہے ، پاکستان ابھی تک اتنا بانجھ نہیں ہوا کہ تعلیم جیسے اہم معاملات ایسے فکری یتیموں کے رحم و کرم پر چھوڑ دیئے جائیں‘‘ سمندر کو  کوزے میں  بند کر دیا، میرا معاشرے کے پڑھے لکھے اور باشعور لوگوں سے سوال یہ ہے کہ جنہیں قرآن و حدیث کے علوم کاحیاء نہ ہو ، ایسے بے حیائوں کو مسلمان معاشرے میں ’’معلم‘‘ یا ماہر تعلیم تسلیم کیا جاسکتا ہے؟ ’’تعلیم‘‘ تو انسان کو انسانوں کی غلامی سے نجات پاکر رب رحمان کے دربار میں سر جھکانے کی آگاہی فراہم کرتی ہے، ’’تعلیم‘‘ ہی تو ہے کہ جو حیوان اور انسان میں فرق کو واضح کرتی ہے’’تعلیم‘‘ ہی تو انسان کو اشرف المخلوقات کی حدود میں لانے کا باعث بنتی ہے، عائشہ رزاق اور پرویز ہود جیسے خود ساختہ ’’ماہرین تعلیم‘‘ کا کیا کیا جائے کہ جو قرآن و حدیث کی عظیم تعلیم سے نہ صرف یہ کہ خود کوسوں میل دور ، بلکہ مسلمان طلباء و طالبات  کو قرآن و حدیث کی تعلیم حاصل کرنے سے روکتے بھی ہیں اور بڑی ڈھٹائی کے ساتھ قرآن و حدیث کی تعلیمات کا مذاق بھی اڑاتے ہیں، جن دینی مدارس اور علماء کرام پر شدت پسندی کے الزامات لگائے جاتے ہیں … وہ تو اپنے طلباء و طالبات اور عوام کو یہ کہتے ہیں کہ قرآن و حدیث کے ساتھ ساتھ انگلش ، ریاضی، فزکس، کیمسٹری شوق سے پڑھو بھی اور پڑھائی بھی ، علماء کرام تو قوم کو یہ ترغیب دیتے ہیں کہ عالم، مفتی، حافظ، قاری بننے کے ساتھ ساتھ ڈاکٹر بھی بنو، انجینئر بھی بنو، سائنس دان بھی بنو، لیکن پرویز ہود، عائشہ رزاق ،اے ایچ نیئر اور اس گروہ کے دیگر وابستگان کیسے ’’ماہرین تعلیم‘‘ ہیں کہ جو پاکستانی مسلمان بچوں کو ناظرہ قرآن کریم پڑھانے، انہیں سیرت نبویؐ کی تعلیم دینے کے شدت پسندانہ انداز میں نہ صرف یہ کہ مخالف ہیں بلکہ قرآن پاک پڑھنے والے بچوں کو ’’رٹو طوطا‘‘ اور نجانے کیا کیا قرار دے کر ان کا مذاق بھی اڑاتے ہیں، کیا ایسے ’’ابنارمل‘‘ افراد کو ٹی وی چینلز پر ماہرین تعلیم کے طور پر پیش کرنا ’’تعلیم دشمنی‘‘ نہیں ہے؟
میں یہاں پر بالکل جذباتی نہیں ہوں اور میرا ارباب علم و دانش سے یہ سوال ہے کہ ناظرہ قرآن پڑھنے، احادیث مبارکہ سیکھنے، دعائیں یاد کرنے کی کیا بچوں کے دماغ میں گنجائش نہیں ہوتی؟ کیا بچوں کو ناظرہ قرآن پڑھانے، انہیں حدیثیں پڑھانے او ر دعائیں سکھانے سے ان کے دماغ بے حرکت ہو جاتے ہیں؟ ان کے دماغوں کی جنبش ختم ہو جاتی ہے؟ ان کے سوچنے اور سمجھنے کی صلاحیتیں مفقود ہو جاتی ہیں؟ ہمیں تو یہ تعلیم دی گئی ہے کہ اگر طالبعلم ، ’’رب زدنی علما‘‘خلوص نیت کے ساتھ پڑھ کر کتاب کھولے تو اس کی پڑھائی کی صلاحیت میں رب کی مدد بھی شامل ہو جاتی ہے، اگر طالبعلم خلوص دل کے ساتھ  ’’رب شرح لی صدری و یسرلی‘‘ والی دعا  پڑھ کر اپنے کام میں مگن ہو جائے تو رب اس کا سینہ اور زبان کی گرہیں کھو ل دیتے ہیں،  اور یہ کس طرح کے ’’ماہرین تعلیم‘‘ ہیں کہ ناظرہ قرآن پڑھنے، اس کے معانی سیکھنے اور دعائیں پڑھنے سے جن کے دماغ سکڑ جاتے ہیں، پیٹ میں مروڑ اٹھنا شروع ہو جاتے ہیں، کیا ایسے الحاد پرست ، لبرل بونوں اور سکڑے ہوئے دماغ والے بے شعوروں کو ماہرین تعلیم ماننا، کہنا یا سمجھنا تعلیم دشمنی اور فساد فی الارض پھیلانے کے مترادف نہیں ہے؟
 

تازہ ترین خبریں

ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی قبر پر اتنا رش کیوں رہتا ہے؟  جانیں محسن پاکستان کی قبر پر بسیرا کرنے والا یہ شخص کون ہے؟

ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی قبر پر اتنا رش کیوں رہتا ہے؟ جانیں محسن پاکستان کی قبر پر بسیرا کرنے والا یہ شخص کون ہے؟

وزیراعظم عمران خان 24 اکتوبر کو 3 روزہ دورے پر سعودی عرب جائیں گے

وزیراعظم عمران خان 24 اکتوبر کو 3 روزہ دورے پر سعودی عرب جائیں گے

فیصل آباد میں پی ڈی ایم جلسے میںنظر آنیوالی یہ بزرگ ہستی کون ہے؟  مریم نواز بھی جذباتی ہو گئیں، تصویر سوشل میڈیا پر وائرل

فیصل آباد میں پی ڈی ایم جلسے میںنظر آنیوالی یہ بزرگ ہستی کون ہے؟ مریم نواز بھی جذباتی ہو گئیں، تصویر سوشل میڈیا پر وائرل

مرنے کے بعد محسنِِ پاکستان کا مقام یاد آگیا، وفاقی حکومت ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی قبر پر کیا کرنے جارہی ہے؟ بڑا اعلان کر دیا گیا

مرنے کے بعد محسنِِ پاکستان کا مقام یاد آگیا، وفاقی حکومت ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی قبر پر کیا کرنے جارہی ہے؟ بڑا اعلان کر دیا گیا

پی ڈی ایم کا فیصل آباد میں جلسہ ، عظمیٰ بخاری نے اپنے ہی کارکن کو تھپڑ کیوں جھڑ دیا؟ وجہ سامنے آگئی

پی ڈی ایم کا فیصل آباد میں جلسہ ، عظمیٰ بخاری نے اپنے ہی کارکن کو تھپڑ کیوں جھڑ دیا؟ وجہ سامنے آگئی

ملک بھر کے بینک بند رہیں گے اسٹیٹ بینک آف پاکستان کا نوٹیفیکیشن جاری

ملک بھر کے بینک بند رہیں گے اسٹیٹ بینک آف پاکستان کا نوٹیفیکیشن جاری

پانچ سالوں میں دل نہیں بھرا؟ اگلی حکومت پھر تحریک انصاف کی ہو گی،غریب عوام کو ڈرائونا خواب دکھا دیا گیا

پانچ سالوں میں دل نہیں بھرا؟ اگلی حکومت پھر تحریک انصاف کی ہو گی،غریب عوام کو ڈرائونا خواب دکھا دیا گیا

حکومت کا تختہ الٹنے کی تیاریاں مکمل ، 12ربیع الاول کے بعد کیا ہونیوالاہے؟ناراض حکومتی اراکین بھی اپوزیشن کیساتھ جا مِلے

حکومت کا تختہ الٹنے کی تیاریاں مکمل ، 12ربیع الاول کے بعد کیا ہونیوالاہے؟ناراض حکومتی اراکین بھی اپوزیشن کیساتھ جا مِلے

ڈرون حملے میں بے گناہوں کی اموات، امریکی حکومت نے مرنے والوں کے اہلخانہ کیلئے کروڑوں روپے معاوضے کا اعلان کر دیا

ڈرون حملے میں بے گناہوں کی اموات، امریکی حکومت نے مرنے والوں کے اہلخانہ کیلئے کروڑوں روپے معاوضے کا اعلان کر دیا

مہنگائی کنٹرول سے باہر ہونے پر وزیراعظم عمران خان کا استعفیٰ؟ خبر نے ملک بھر میں تھر تھلی مچا دی

مہنگائی کنٹرول سے باہر ہونے پر وزیراعظم عمران خان کا استعفیٰ؟ خبر نے ملک بھر میں تھر تھلی مچا دی

گریڈ 1سے 15تک نوکریاں ہی نوکریاں! حکومت نے بیروزگاری جوانوں کو بڑی خوشخبری سنا دی

گریڈ 1سے 15تک نوکریاں ہی نوکریاں! حکومت نے بیروزگاری جوانوں کو بڑی خوشخبری سنا دی

کمر توڑ مہنگائی ، گھی اور تیل کے بعد آٹے کا تھیلا بھی 1500میں دستیاب،غریب دو وقت کی روٹی کھانے سے بھی مجبور

کمر توڑ مہنگائی ، گھی اور تیل کے بعد آٹے کا تھیلا بھی 1500میں دستیاب،غریب دو وقت کی روٹی کھانے سے بھی مجبور

تنخواہوں میں بھی مزید اضافہ کرنا ہو گا،  حکومت نے تنخواہ دار طبقے کیلئے بڑا اعلان کر دیا

تنخواہوں میں بھی مزید اضافہ کرنا ہو گا، حکومت نے تنخواہ دار طبقے کیلئے بڑا اعلان کر دیا

اگلے 48گھنٹوں میں کہاں کہاں بارش کا امکان ہے؟ محکمہ موسمیات نے شہریوں کو ٹھنڈی ٹھنڈی نوید سنا دی

اگلے 48گھنٹوں میں کہاں کہاں بارش کا امکان ہے؟ محکمہ موسمیات نے شہریوں کو ٹھنڈی ٹھنڈی نوید سنا دی