01:50 pm
فلسطین دوست پاک سعودی اتحاد زندہ

فلسطین دوست پاک سعودی اتحاد زندہ

01:50 pm

چند روز سے میں کالم نہیں لکھ رہا تھا۔ عبادت، اذکار مسنون، تہجد، تلاوت قرآن پاک اور مفتی محمد شفیع، مفتی اعظم پاکستان کی تفسیر معارف القرآن کی چٹھی جلد، سورہ مریم، سورہ طہ، سورہ انبیاء، سورہ مومنون وغیرہ کے مطالعہ میں مصروف رہا اور غوروفکر کرتا رہا ۔ایک طرف یہ ہوتا رہا کہ اپنے پیارے افغان طالبان، وہ افغان جن سے میرے مرشد علامہ اقبالؒ نے بہت محبت کی تھی اور میں بھی ان سے شدید محبت کرتا ہوں، ان کے حوالے سے سوچتا رہا کہ وہ خواتین کی تعلیم، افغان قوم کے مسائل و مشکلات کے حل کے لئے جامد تقلیدی حنفی فکر سے اصول فقہہ حنفی کے طے کردہ اصول ’’مصلحت عامہ‘‘ کی روشنی میں ارتقائی منازل کیوں طے نہیں کرتے؟ چونکہ طالبان حکمران فقہاء اور محدثین کے علوم سے کافی وابستہ بتائے جاتے ہیں تو بہتر انداز میں لایخل سیاسی، معاشی، اجتماعی، تہذیب و تمدن سے وابستہ قبائلی روایات و اقدار و امور کو ’’اتقاء‘‘ کی منزل تک لے جائیں اور فقہہ حنفی کے طے کردہ اور تسلیم کردہ اصول ’’مصلحت عامہ‘‘ کو اپنالیں۔
علمی و فکری مصروفیت کے ساتھ ساتھ میں سعودی عرب کی نوجوان نسل کے شہزادوں کی فیصلہ سازی اور اقوام عالم کے لئے اپنی نئی تہذیبی اٹھان اور ثقافتی سیاحتی ترغیبات کو غور سے دیکھتا رہا۔ سیاحت جسے ٹورازم بھی کہا جاتا ہے اگرچہ مکہ و مدینہ میں حج و عمرہ کی ادائیگی بھی ٹورازم یعنی سیاحت کا ایک پہلو بتایا جاتا ہے مگر اللہ کا تعلق ’’دین‘‘ سے ہے یعنی ’’دینی‘‘ فریضہ حج و عمرہ سے ہے مگر سعودی عرب میں اقوام ماضیہ کی تاریخ بکھری پڑی ہے۔ نئی طرز کی بادشاہت کے بانی شہزادہ محمد بن سلمان نے سیاحت، تہذیبی و ثقافتی معاملات میں چند روز پہلے جو اقدامات کئے ہیں وہ باعث اطمینان ہیں جن سے سعودی عرب کی نوجوان نسل مصروف رہے گی اور سیاحت سے سعودی رزق میں آمدن کی امید کی جاسکے گی۔ یہ حوصلہ افزاء پہلو ہیں، یہی سوچ پاکستان میں سیاحت کے اعتبار سے اقتدار سے محروم کر دئیے گئے عمران خان کی تھی کہ سیاحت اور ٹورازم کو ذریعہ آمدن بنایا جائے۔ مجھے حیرت ہے کہ اقتدار کے دنوں میں عمران خان اپنے مخصوص احباب کے سبب سعودی مخالف عناصرکی محبت میں غوطے کھاتے رہے حالانکہ مالی مدد کے لئے وہ کئی بار صرف سعودی بادشاہت اور امارات و قطر و خلیجی شیوخ سے توقعات اور امیدیں وابستہ کرتے رہے تھے۔ میری توجہ بار بار وزیراعظم محمد بن سلمان کے اس مستقبل کی طرف مبذول رہتی ہے جب سی آئی اے ان کے خلاف بہت بڑی سازش کو کامیاب بنانے کی کوششیں تیز کرے گی۔ ممکن ہے یہ ذرا کچھ مدت بعد کوششیں ہوں۔ اسی لئے میں نے محمد بن سلمان کی تہذیبی و تمدنی و ثقافتی امور کی بدعات پر مخالفانہ کالم نگاری ترک کرکے شہزادہ محمد بن سلمان کے ساتھ وابستہ ہوتی خیر و برکت کی امیدوں کی طرف توجہ مبذول کرلی ہے۔ گزشتہ ایک تحریر میں (11جنوری ’’نئے پاک سعودی عسکری تعاون پر الحمدللہ) میں نے یمن کے حوالے سے سعودی مخالف پارلیمانی قرارداد کا واقعہ لکھا تھا۔ میں تحقیق میں آخر تک مصروف رہا کہ کیا اس پارلیمانی قرارداد کو پاس کروانے میں کہیں ہمارے ریاستی ادارے یا فوج یا آرمی چیف کے اردگرد کا موسم تو فعال نہیں تھا؟ مگر میں نے اطمینان کرلیا ہے کہ یہ قرارداد صرف نواز حکومت کے بعض وزراء اوراتحادیوں کی کاوش تھی۔ جان بوجھ کر اپوزیشن کی تحریک انصاف کو مشتعل کیا جاتا رہا، اور (عمران خان تو خود اسمبلی میں جاتے ہی نہیں تھے) یوں مشتعل ہو کر تحریک انصاف کی پارلیمانی قیادت اس ’’ٹریپ‘‘ میں پھنستی رہی جو نواز شریف حکومت نے سعودی مخالف قرارداد کو پاس کروانے کے لئے تیار کیا تھا۔ چونکہ جنرل راحیل شریف کھل کر سعودی عرب کی حمایت میں بولتے تھے۔ لہٰذا ان کا یا ان کے عہد کے ریاستی اداروں کا اس پارلیمانی قرارداد کو پاس کروانے میں کوئی کردار مجھے نظر نہیں آیا۔سید عاصم منیر نے سعودی عرب جا کر شاہ سلمان، سعودی عسکری قیادت، وزیراعظم ابن سلمان کو جو تعاون اور قریبی تعلقات کا موقف پیش کیا وہ ایک تسلسل کا اظہار ہے جو ہمیشہ سے موجود رہا ہے۔ میں ابراہیم معاہدے کے حوالے سے ہمیشہ شک میں مبتلا رہا ہو۔ میری نظر میں یکطرفہ طور پر فلسطینی ریاست کا مسئلہ حل کئے بغیر اسرائیل کو تسلیم کرتا، اس سے سیاسی، عسکری، سفارتی، معاشی تعلقات قائم کرنا عربوں کی اپنی تباہی ہے کیونکہ انتہا پسند صیہونی اسرائیلی قومی ترانے پر مکمل ایمان رکھتے ہیں اور اسرائیل کا قومی ترانہ عرب دنیا کو بزور طاقت اسرائیلی ریاست بنانے کا عہد نامہ پیش کرتا ہے۔ اس کے باوجود کچھ خلیجی اور افریقی عربوں نے معاہدہ ابراہیم قبول کیا ہوا ہے۔ پاک فوج اور سعودی عرب کے مابین جو نیا عہد محبت شروع ہوا ہے۔ ریاستی اداروں، وزارت خارجہ کے معاملات کے ماہرین کی کوششوں سے سعودی سفارتی ماہرین الحمدللہ یہ بات مکمل طور پر سمجھ چکے ہیں کہ شہزادہ محمد بن سلمان تاریخ ساز کردار یوں ادا کر سکتے ہیں کہ وہ اسرائیل کو تسلیم کرنے کی توقع اور امید پیش کرتے ہوئے فلسطین کے حوالے سے دو ریاستی فارمولہ پر عملدرآمد پہلے کروالیں۔ماضی میں مراکش، الجزائر اور تیونس کی آزادی میں پاکستانی سفارت کاروں کا بنیادی کردار اور پاکستانی خدمات تاریخ کا انمٹ واقعہ ہیں۔ اسی طرح وزیراعظم محمد بن سلمان کی قیادت و رفاقت میں ریاست پاکستان، افواج پاکستان، آرمی چیف کے منصب کے تعمیری و مثبت کردار بھی تاریخ میں قابل ذکر رہے گا۔ کتنی بدقسمتی ہے کہ میں موجودہ حکومت، پارلیمنٹ کو اس حوالے سے قابل ذکر ہی نہیں سمجھتا۔ اس کالم کی تحریر کا باعث 22جنوری کی شام سعودی عرب کی طرف سے مدبرانہ فیصلہ سازی پر مبنی دو ٹوک ’’بیان‘‘ کا سامنے آنا ہے کہ جب تک اسرائیل فلسطین کے حوالے سے دو ریاستی فارمولہ کو تسلیم کرکے اس پر عمل درآمد نہیں کرتا تب تک اسرائیل کو دیگر خلیجی ریاستوں کی طرح ہرگز تسلیم نہیں کیا جاسکتا۔ مجھے الحمدللہ کہنا ہے اس سعودی فیصلہ سازی اور جرات مندانہ اعلان پر کہ اس میں پاکستان کی ریاست، ریاستی اداروں، وزارت خارجہ کے ماہرین اور آرمی چیف سید عاصم منیر اور ان کے مدبر رفقاء کا بھی تعمیری، مثبت کردار اب تاریخ کا حصہ بن چکا ہے۔ الحمدللہ، اشکر للہ رب العالمین


تازہ ترین خبریں

الیکشن کمیشن کو دھمکانے کا کیس، فواد چوہدری کی ضمانت منظور

الیکشن کمیشن کو دھمکانے کا کیس، فواد چوہدری کی ضمانت منظور

خود کش حملہ آور پولیس لائنز میں کیسے داخل ہوا؟حیران کن انکشافات سامنے آگئے

خود کش حملہ آور پولیس لائنز میں کیسے داخل ہوا؟حیران کن انکشافات سامنے آگئے

متحدہ عرب امارات  کو پاکستان کے 5 سرکاری اداروں کے شیئرز خریدنےکی پیشکش

متحدہ عرب امارات کو پاکستان کے 5 سرکاری اداروں کے شیئرز خریدنےکی پیشکش

سپریم کورٹ کا بڑا ایکشن، نیب ترامیم کے ذریعے ختم کئے جانیوالے کیسز کا ریکارڈ طلب

سپریم کورٹ کا بڑا ایکشن، نیب ترامیم کے ذریعے ختم کئے جانیوالے کیسز کا ریکارڈ طلب

ترجمان کی شاہدخاقان عباسی کے استعفے کی خبروں کی تردید

ترجمان کی شاہدخاقان عباسی کے استعفے کی خبروں کی تردید

گھر پر پولیس کا چھاپہ،سابق وزیراعلیٰ پنجاب پرویز الہٰی کاسخت  ردعمل سامنے آگیا

گھر پر پولیس کا چھاپہ،سابق وزیراعلیٰ پنجاب پرویز الہٰی کاسخت ردعمل سامنے آگیا

عمران درست کہتا ہے کہ زرداری اسے قتل کروانا چاہتا ہے،میں اپنے بیان پر قائم ہوں، شیخ رشید

عمران درست کہتا ہے کہ زرداری اسے قتل کروانا چاہتا ہے،میں اپنے بیان پر قائم ہوں، شیخ رشید

پولیس ہمارے گھر کیا بھارتی جاسوس ڈھونڈ رہی تھی، مونس الٰہی کا چھاپے پر ردعمل

پولیس ہمارے گھر کیا بھارتی جاسوس ڈھونڈ رہی تھی، مونس الٰہی کا چھاپے پر ردعمل

مریم نواز سے اختلافات شدید ۔۔۔مرکزی رہنما مسلم لیگ ن شاہد خاقان عباسی پارٹی عہدے سے مستعفی ہو گئے

مریم نواز سے اختلافات شدید ۔۔۔مرکزی رہنما مسلم لیگ ن شاہد خاقان عباسی پارٹی عہدے سے مستعفی ہو گئے

آئی ایم ایف کا پاکستان پر بجلی مہنگی کرنے کیلیے دباؤ،روڈ میپ طلب کرلیا

آئی ایم ایف کا پاکستان پر بجلی مہنگی کرنے کیلیے دباؤ،روڈ میپ طلب کرلیا

بجلی بریک ڈاؤن،نیپرا نے سارا ملبہ این ٹی ڈی سی پرڈال دیا

بجلی بریک ڈاؤن،نیپرا نے سارا ملبہ این ٹی ڈی سی پرڈال دیا

غیرملکی کمپنی انڈس موٹرز کا پلانٹس بند کرنے کا اعلان

غیرملکی کمپنی انڈس موٹرز کا پلانٹس بند کرنے کا اعلان

پاکستانی اداروں کی نجکاری ، پی ڈی ایم حکومت نےآئی ایم ایف کے سامنے گھٹنے ٹیک دیئے

پاکستانی اداروں کی نجکاری ، پی ڈی ایم حکومت نےآئی ایم ایف کے سامنے گھٹنے ٹیک دیئے

مسلم لیگ ق کی صدارت کا معاملہ، الیکشن کمیشن کا بڑا فیصلہ، چوہدری شجاعت حسین صدر برقرار

مسلم لیگ ق کی صدارت کا معاملہ، الیکشن کمیشن کا بڑا فیصلہ، چوہدری شجاعت حسین صدر برقرار